مریم نواز کی بھارتی خفیہ ایجنسی کے لوگوں سے خفیہ ملاقات کب، کہاں اور کیسے ہوئی؟شہباز گل نے تہلکہ خیز انکشاف کردیا

اسلام آباد(ویب ڈیسک)پاکستان مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز کی انڈین کے ساتھ مبینہ خفیہ ملاقات کب کہاں اور کیسے ہوئی؟رانا ثناء اللہ خان کی تنقید پر کرارا جواب دیتے ہوئےشہباز گل نے تہلکہ خیز انکشاف کردیا تفصیلات کے مطابق مائیکرو بلاگنگ ویب سائٹ پر وزیر اعظم عمران خان

کے معاون خصوصی ڈاکٹر شہباز گل نے مسلم لیگ ن پنجاب کے صدر رانا ثناء اللہ خان کی تنقید پر کرارا جواب دیتے ہوئے کہا ہے کہ راناصاحب پوچھ رہےہیں تو بتا دیتا ہوں،میری اطلاع کے مطابق ایک انڈین کے ساتھ جو ملاقات ہوئی وہ کھوکھر پیلس میں ہوئی، پریس کانفرنس کے بعد وہ اسی جگہ پر رکی رہیں،سگنل ملنے پر وہاں سے نکل کر سیدھی کھوکھر پیلس پہنچیں،رانا صاحب آپ شہباز شریف کے ساتھ ہیں وہ آپکو یہ نہیں بتائیں گی۔احسن اقبال کی تنقید کا جواب دیتے ہوئے ڈاکٹر شہباز گل کا کہنا تھا کہ ارسطو صاحب ویسے آپ خود دوائی کیوں نہیں لے لیتے؟ کبھی کہتے ہیں عمران خان کے ساتھ لڑائی نہیں خفیہ ترلہ پروگرام میٹنگز میں کہتے ہیں کہ ہماری لڑائی عمران خان کے خلاف ہے بندہ پوچھے ٹھگوں کے ٹولے کی لڑائی آخر ہے کس کے خلاف؟۔اپنےایک اورٹویٹ میں ڈاکٹرشہباز گل نےکہاکہ ن لیگ کے”مرکزی تنظیم ساز”طلال چوہدری،دانیال عزیز،امیرمقام،ماروی میمن،ریاض پیرزادہ، اویس لغاری، زاہد حامد ،طارق عظیم انقلابی نوسرباز کے اردگرد موجود ہیں، ایک تو ابھی نئی نئی تنظیم سازی کے بعد ہاسپٹل سے بھی ڈسچارج نہیں ہوئے یہ کون سی لیگ سے نوسرباز لیگ کے ساتھی بنے تھے ارسطو جی؟۔واضح رہے کہ نون لیگی رہنما رانا ثناءاللہ خاں نے کہا تھا کہ مریم نواز کی جن ملاقاتوں کا جھوٹا ذکر کیا جا رہا ہے کیا وہ شہباز گل کی موجودگی میں ہوئیں تھیں ؟حکومتی کرپشن،ووٹ چوری، مہنگائی، بیروزگاری، معاشی تباہی پر اپوزیشن کے سوالات کا جواب نہیں ملتا تو انڈین ایجنٹ اور غدارکی گردان شروع کردی جاتی ہے،غداری اور انڈین ایجنٹ کے الزامات لگاکر حکومت اپنے بدعنوانی کے بیانیہ کی مکمل ناکامی کا اعتراف کرچکی ہے، اپنے جھوٹ کے دفاع میں حکومت کے پاس کوئی جواب نہیں۔