بریکنگ نیوز: قانون کے رکھوالے خود غیر محفوظ ۔۔۔۔ لاہور سے پنجاب پولیس کے دبنگ ایس ایس پی کو پراسرار طریقے سے اغوا کر لیا گیا

لاہور (ویب ڈیسک) ایس ایس پی لاہور مفخرعدیل لا پتہ، آئی جی پنجاب کا نوٹس سینئرسپرنٹنڈنٹ آف پولیس لاہورکا موبائل فون بند ، تاحال سراغ نہ لگایا جاسکا۔ تفصیلات کے مطابق ذرائع کا کہنا ہے کہ سینئرسپرنٹنڈنٹ آف پولیس لاہور مفخر عدیل صبح سے لاپتہ ہیں۔ بتایا گیا ہے کہ انکا موبائل فون بند آ رہا

ہے جس پر آئی جی پنجاب خرم دستگیر نے نوٹس لے لیا ہے اور فوری انکوائری کا حکم دیا ہے۔ بتایا گیا ہے کہ سینئرسپرنٹنڈنٹ آف پولیس آج صبح پبلک سروس کمیشن جانے کے لیے روانہ ہوئےلیکن نہ پہنچے، انکے دوست شہباز بھی تاحال لاپتہ ہیں۔ ذرائع نے بتایا کہ شہباز کو ایس ایس پی مفخر عدیل نے گھر سے پک کیا اور گھر ہی ڈراپ کیا لیکن وہ بھی گھر نہ پہنچے۔ آج صبح مفخر عدیل بھی گھر سےروانہ ہوئے لیکن واپس نہ آئے جبکہ انکا فون بھی بندآرہا ہے۔انکی زوجہ کی مدعیت میں تھانہ جوہر ٹاؤن میں ایف آئی آر درج کرائی جا رہی ہے۔ سینئرسپرنٹنڈنٹ آف پولیس لاہور مفخر عدیل بٹالین 2007-2008ء بطور اے ایس پی بھرتی ہوئے۔ وہ ایک خفیہ انویسٹی گیشن میں 8 فروری سے مصروف عمل تھے۔ دوسری جانب ایس پی صدر غضنفر علی شاہ نے بتایا کہ گھنٹے سے موبائل فون بندہے اور فیملی کے ساتھ بھی کوئی رابطہ نہیں، ایس ایس پی مفخر عدیل پنجاب کانسٹیبلری لاہور میں تعینات ہیں۔انکے خاندان نے تھانے میں درخواست نہیں دی،درخواست ملنے پر قانون کے مطابق کارروائی کی جائیگی۔