فوج کے بجٹ میں کمی مگر انٹیلیجنس کے ”سیکرٹ سروسز فنڈ“میں کتنا اضافہ کر دیا گیا ؟ تازہ ترین خبر

لاہور(ویب ڈیسک) محکمہ داخلہ پنجاب نے خفیہ معلومات کی رسائی تک پہنچنے کے لئے خرچ کی جانے والے رقم میں اڑھائی کروڑ روپے کا اضافہ کر دیا ہے۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق اس مد میں کئے جانے والے اضافے کی رقم کو آئندہ مالی سال کے بجٹ میں شامل کیا گیا ہے۔

رواں مالی سال 2018-19 کے بجٹ میں اس مد میں ایک کروڑ 80 لاکھ روپے رکھے گئے تھے۔محکمہ خزانہ پنجاب نے بجٹ میں مختص کی جانے والی اس رقم کو سیکرٹ سروسز فنڈ کا نام دیا ہے جسے پنجاب کے قانون نافذ کرنے والے ادارے دہشتگردوں اور اشتہاری ملزمان کی گرفتاری میں معاونت کرنے والے شہریوں کو بطور ایوارڈ دیں گے۔ دوسری جانب خبر کے مطابق وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے کہا ہے کہ ماضی میں اقتصادی ڈاکہ زنی نہ ہوتی تو قوم کو مشکل حالات سے نہ گزرنا پڑتا۔وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے ایک بیان میں کہا کہ دشواریوں کے باوجود تاجر برادری کے تحفظات دور کرنے کی کوشش کریں گے اور ہر ممکن حد تک کاروباری برادری کے مفادات کا تحفظ کیا جائے گا۔ بظاہر مشکل اقتصادی فیصلوں کا مقصد ملک کو معاشی مشکلات سے نکال کر مالی خودمختاری کی راہ پر گامزن کرنا ہے۔عالمی مالیاتی اداروں کی طرف سے بیل آؤٹ پیکیج اقتصادی پالیسیوں پر اظہار اعتماد کے مترادف ہے۔ انہو ں نے کہا کہ پاکستان امن اور ترقی کی سمت بڑھ رہا ہے، معیشت کو سیاست سے پاک رکھا جائے۔ شور مچا کر مالی کرپشن سے توجہ ہٹانے والے اپنے مقصد میں کامیاب نہیں ہوں گے۔ غربت اور محرومیاں مٹانا چاہتے ہیں، چاہے کچھ بھی کرنا پڑے۔دریں اثناء وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے بارشوں کے حالیہ سلسلے کی وجہ سے انتظامیہ اور متعلقہ اداروں کو مستعد رہنے کی ہدایت کی ہے۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ چھوٹے بڑے شہروں میں نکاسی آب کیلئے سسٹم کو فعال رکھا جائے اور نشیبی علاقوں سے بارش کے پانی کے اخراج کیلئے مشینری اور دیگر وسائل کو بروئے کار لایا جائے۔