Categories
اسپیشل سٹوریز

’زندگی میں پہلی مرتبہ شیر دیکھا‘ خلیل الرحمٰن کا عمران خان سے ملاقات پر تبصرہ

کراچی(ویب ڈیسک) معروف ڈرامہ نگار خلیل الرحمٰن کی پاکستان کے سابق وزیرِاعظم عمران خان سے ملاقات پر تبصرہ کرنے کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہوگئی۔ سوشل میڈیا پر پاکستان کے معروف ڈرامہ نگار خلیل الرحمٰن قمر کے ٹی وی انٹریو کا ایک کلپ سوشل میڈیا پر وائرل ہو رہا ہے جس میں خلیل الرحمٰن عمران خان

کی تعریفوں کے پل باندھتے ہوئے نظر آرہے ہیں۔ ویڈیومیں دیکھا جا سکتا ہے کہ میزبان نے ان سے پی ٹی آئی کے چئیر مین اور سابق وزیراعظم عمران خان سے ہونے والی ملاقات کے حوالے سے پوچھا۔ خلیل الرحمٰن قمر نے مسکراتے ہوئے کہاکہ ’میں اس ملاقات کی تفصیلات شیئر نہیں کر سکتا۔ میں صرف اتنا کہوں گا کہ میں نے اپنی زندگی میں کبھی شیر نہیں دیکھا لیکن جب میں عمران خان سے ملا تو پہلی بار شیر دیکھا‘۔ان کا مزید کہنا تھا کہ ’جو لوگ سمجھ رہے ہیں کہ عمران خان چلا گیا ہے یہ ان کی غلط فہمی ہے وہ ان کا واپس آنے کا دوسرا طریقہ ہے ، مجھے امید ہے کہ عمران خان اس بار اور بھی مضبوط ہوکر واپس آئیں گے‘۔خلیل الرحمن نے شہباز شریف پر طنز کرتے ہوئے کہا کہ ’یہ بھکاری وں کا دیس نہیں ہے اسے بھکاری بنایا گیا ہے، ڈرامہ نگار کا مزید کہنا تھا کہ 35 سال انہوں نے اپنا مال بنانے اور ہمیں بھکاری بنانے میں صرف کیا ہے‘۔واضح رہے کہ ’میرے پاس تم ہو‘ جیسےکامیاب ترین ڈرامے کے معروف ڈرامہ نگار خلیل الرحمٰن قمر نے چند دن قبل سابق وزیراعظم پاکستان عمران خان سے ان کی رہائش گاہ پر فلم اسٹار شان کے ہمراہ ملاقات کی تھی۔دوسری جانب پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین و سابق وزیراعظم عمران نے مسلم لیگ (ن) کی مرکزی نائب صدر مریم نواز کی جانب سے تقریر پر نامناسب تبصرہ کیا ہے۔ ملتان میں جلسہ عام سے خطاب میں عمران خان کا کہنا تھاکہ ’مجھے کسی نے سوشل میڈیا پر تقریر بھیجی، مریم تقریر کر رہی تھی کل، اس میں اتنی دفعہ اور اس جذبے سے اور اس جنون سے میرا نام لیا کہ میں اس کو کہنا چاہتا ہوں کہ مریم دیکھو تھوڑا دھیان کرو تمہارا خاوند ہی ناراض نہ ہوجائے جس طرح تم بار بار میرا نام لیتی ہو‘۔ان کا مزید کہنا تھاکہ ویسے میں ہمیشہ سوچتا ہوں کہ ان کو اتنا زیادہ مجھ پر غصہ ہے کیوں؟ میں نے ان کا کیا بگاڑا ہے؟ ان کے کیسز تو پرانے بنے ہوئے ہیں، مقصود چپڑاسی کے علاوہ سارے کیسز پرانے ہیں۔ دوسری جانب عمران خان کے مریم نواز سے متعلق بیان پر سوشل میڈیا پر تنقید شروع ہوگئی ہے۔

Categories
اسپیشل سٹوریز

عمران خان نے لانگ مارچ کی تاریخ کا اعلان کیوں نہیں کیا؟ سینئر صحافی مجیب الرحمان شامی کا بڑا دعویٰ

لاہور(ویب ڈیسک) سینئر صحافی مجیب الرحمان شامی کا کہنا ہے کہ عمران خان نے ملتان جلسے میں لانگ مارچ کا اعلان اس لیے نہیں کیا کیونکہ اس کے بعد ایک ایسی گلی آجائے گی جس کا راستہ کسی کو بھی نہیں پتا۔ نجی ٹی وی دنیا نیوز کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے مجیب الرحمان شامی نے کہا کہ عمران خان نے

ملتان جلسے میں لانگ مارچ کا اعلان نہیں کیا کیونکہ انہیں پتا ہے کہ اس کے بعد ایک ایسی گلی شروع ہوجائے گی جس کا راستہ کسی کو نہیں پتا، یہ گلی بند ہوگی یا کھلی ہوگی اس کا کوئی نہیں بتاسکتا۔ انہوں نے کہا کہ عمران خان جب لانگ مارچ کا اعلان کریں گے تو ان کیلئے مشکلات کا آغاز ہوجائے گا لیکن وہ اپنا دباؤ بھی بڑھائیں گے، عمران خان نے اپنا دباؤ بڑھایا ہے اور منتخب ایوان میں اپنی طاقت کا احساس دلا رہے ہیں ، انہوں نے جتنا بھی طاقت کا مظاہرہ کیا ہے وہ آئندہ کے لائحہ عمل کے بارے میں یکسو نہیں ہو رہے اور انہیں اندازہ نہیں ہو رہا کہ آگے کیا ہوگا۔ مجیب الرحمان شامی کا مزید کہنا تھا کہ مسلم لیگ ن میں دو آرا پائی جا رہی ہیں اور مشکل فیصلے کرنے سے گریز کیا جا رہا ہے، جو لوگ ضمانتوں اور تحفظ کا کہہ رہے ہیں، یہ بات کچھ سمجھ نہیں آرہی، اگر آپ فیصلے نہیں کرسکتے تو تحریک عدم اعتماد میں فریق بننا ہی نہیں چاہیے تھا، اب آپ نے بوجھ اٹھا لیا ہے تو معاملے کو منطقی انجام تک پہنچائیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ موجودہ حکومت کو یکسوئی کے ساتھ فیصلہ کرنا ہوگا، یہ نہیں ہوسکتا کہ ایک قدم آگے اور دو قدم پیچھے چلیں، یہ درست ہے کہ پی ٹی آئی کو نفسیاتی طور پر برتری کا احساس ہے لیکن کوئی جوہری تبدیلی نہیں ہوئی، شہباز شریف کی حکومت موجود ہے اور منحرف رکن راجہ ریاض اپوزیشن لیڈر منتخب ہوگئے ہیں۔

Categories
پاکستان

عمران خان کی کابینہ کے کونسے کونسے 9 سابق وزراء سرکاری رہائش گاہوں پر قابض ہیں

اسلام آباد(ویب ڈیسک) سابق وزیراعظم عمران خان کی کابینہ کے 9 سابق وزراء منسٹر کالونی میں سرکاری رہائش گاہوں پر تاحال قابض ہیں۔حکومتی ذرائع کے مطابق منسٹر کالونی کی سرکاری رہائش گاہوں پر فواد چودھری، حماد اظہر، نور الحق قادری، پرویزخٹک، زبیدہ جلال، فہمیدہ مرزا اور عثمان ڈار ابھی تک قابض ہیں۔ اس حوالے سے حکومتی ذرائع کا کہنا ہے

سابق وزراء نے ازخود سرکاری رہائش گاہیں خالی نہ کیں تو آپریشن کیا جائے گا، سابق سپیکر اسد قیصر نے سپیکر ہاؤس خالی کردیا، سپیکر راجہ پرویز اشرف بیرون ملک دورے سے واپسی پر سپیکر ہاؤس میں منتقل ہوجائینگے۔اسد قیصر نے قومی اسمبلی سیکرٹریٹ کی دو سرکاری گاڑیاں اور 8 ملازمین ابھی تک واپس نہیں کیے، قومی اسمبلی سیکرٹریٹ نے سرکاری گاڑیاں اور ملازمین کی واپسی کے لیے حتمی نوٹس جاری کر دیا ہے۔

Categories
پاکستان

عمران خان کی جان کو لاحق خطرات، سابق ایس ایس جی کمانڈو کو اہم ذمہ داری سونپ دی گئی

اسلام آباد(ویب ڈیسک) تحریک انصاف نے لیفٹیننٹ کرنل (ر) عاصم کو عمران خان کا سکیورٹی انچارج تعیانت کردیا۔ پاکستان تحریک انصاف کے ٹوئٹر اکاؤنٹ کے ذریعے پارٹی چیئرمین کے سکیورٹی انچارج کی تعیناتی کی اطلاع دی گئی ہے۔ پی ٹی آئی کے مطابق عمران خان کے سکیورٹی انچارج لیفٹیننٹ کرنل (ر) عاصم سابق ایس ایس جی کمانڈو ہیں۔

واضح رہےکہ عمران خان کی جانب سے جان کو خطرے کےبیان کےبعد حکومت نے اس حوالےسے جوڈیشل کمیشن بنانے کی بھی پیشکش کی ہے جب کہ وزیراعظم نے گزشتہ روز ہی عمران خان کو چیف سکیورٹی آفیسر فراہم کرنے کی ہدایت کی تھی۔دوسری جانب چیئرمین پاکستان تحریک انصاف عمران خان کی جانب سے اپنی جان کو خطرے سے متعلق بیان پر وفاقی وزیر داخلہ رانا ثناء اللہ نے معاملے کی تحقیقات کے لیے جوڈیشل کمیشن بنانے کی پیشکش کر دی۔ ایک بیان میں رانا ثناء اللہ نے کہا کہ سابق وزیراعظم عمران خان نیازی امریکی سازش کی طرح اب مسلسل اپنی جان کو خطرے کا بیانیہ بنا رہے ہیں، جان کو ممکنہ خطرے سے متعلق اگر ٹھوس ثبوت عمران نیازی کے پاس ہیں تو اسے وزارت داخلہ سے شیئر کریں۔ ان کا کہنا تھا کہ حکومت عمران نیازی کو ممکنہ خطرے سے متعلق معاملے کی تحقیقات کروانے کے لیے تیار ہے، عمران نیازی چاہیں تو جان کو خطرے سے متعلق معاملے پر جوڈیشل کمیشن بھی قائم کر سکتے ہیں، جوڈیشل کمیشن عمران نیازی کے فراہم کردہ شواہد اور معلومات کا جائزہ لیکر آزادانہ فیصلہ دے سکتا ہے۔ رانا ثناء اللہ نے کہا کہ عمران نیازی معلومات فراہم نہیں کرتے تو امریکی سازش کی طرح ممکنہ خطرے کو بھی سیاسی اسٹنٹ تصور کیا جائے گا۔ وزیر داخلہ نے کہا کہ سابق وزیراعظم کا اپنی جان کے خطرے کو پولیٹیکل اسٹنٹ کے طور پر پیش کرنا افسوسناک ہے، مشورہ ہے کہ عمران نیازی اپنی سکیورٹی کو سیاسی پروپیگنڈے کے طور پر پیش نہ کریں۔اس سے قبل وزیراعظم شہباز شریف نے عمران خان کو فوری طور پر چیف سکیورٹی آفیسر فراہم کرنے کی ہدایت کی تھی ۔ وزارت داخلہ کی جانب سے وزیر اعظم کو چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان کی سکیورٹی پرتفصیلی بریفنگ دی گئی جس میں وزیراعظم شہبا زشریف نے سابق وزیراعظم کو فول پروف سکیورٹی فراہم کرنے کی ہدایت کی۔

وزیراعظم نے وزارت داخلہ کو ہدایت کی کہ عمران خان کو بہترین سکیورٹی اور فوری طور پر چیف سکیورٹی آفیسر فراہم کیا جائے۔ شہبا زشریف نے کہا کہ صوبائی حکومتیں عمران خان کو جلسوں کے دوران سکیورٹی فراہم کریں۔

Categories
Uncategorized

ٹوئٹر، فیس بُک کے بعد عمران خان انسٹا پر بھی چھا گئے

لاہور(ویب ڈیسک) سوشل میڈیا سائٹس ٹوئٹر اور فیس بُک کے بعد، سابق وزیراعظم اور چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان نے انسٹاگرام پر بھی حکمرانی کرلی۔ وزیراعظم کے عہدے سے ہٹنے کے بعد بھی چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان کی مقبولیت سوشل میڈیا پر برقرار ہے بلکہ ہر گزرتے دن کے ساتھ اُن کے سوشل میڈیا فالوورز میں اضافہ ہورہا ہے۔

اب عمران خان کے تصدیق شدہ انسٹاگرام اکاؤنٹ پر فالوورز کی تعداد 7 ملین یعنی 70 لاکھ ہوگئی ہے۔ فالوورز میں اضافے کے بعد عمران خان پاکستان کے پہلے سیاستدان بن گئے ہیں جن کے انسٹاگرام پر 7 ملین فالوورز ہیں۔ وزیراعظم صاحب کے انسٹاگرام اکاؤنٹ پر ایک نظر ڈالی جائے تو انہوں نے اب تک 12 ہزار سے زائد انسٹا پوسٹس شیئر کی ہیں۔ عمران خان انسٹاگرام اکاؤنٹ پر عوام کو اپنی پارٹی کی تازہ ترین تفصیلات سے آگاہ کرتے نظر آتے ہیں۔ اقتدار سے ہٹنے کے بعد عمران خان انسٹاگرام پر کافی فعال رہتے ہیں وہ اپنے جلسوں کی تصاویر اور ویڈیوز شیئر کرتے ہیں جن پر لاکھوں لائکس آتے ہیں۔ادھر مائیکرو بلاگنگ سائٹ ٹوئٹر پر حکمرانی کرنے کے بعد، پی ٹی آئی کے چیئرمین عمران خان نے اب فیس بک پر بھی اپنی مقبولیت کے جھنڈے گاڑ دیے ہیں۔ سماجی رابطے کی ویب سائٹ فیس بُک پر سابق وزیراعظم عمران خان کو 12 ملین صارفین نے فالو کرلیا ہے۔ فالوورز میں اضافے کے بعد عمران خان پاکستان کے پہلے سیاستدان بن گئے ہیں جن کے فیس بُک پر 12 ملین فالوورز ہیں۔ عمران خان کے فیس بُک اکاؤنٹ کا جائزہ لیا جائے تو وہ اپنے اکاؤنٹ پر اپنی پارٹی کی تازہ ترین تفصیلات سے عوام کو آگاہ کرتے نظر آتے ہیں۔ اس کے علاوہ عمران خان نے اپنے فیس بُک اکاؤنٹ سے صرف چار اکاؤنٹس کو فالو کیا ہوا ہے۔ اس سے قبل عمران خان کے ٹوئٹر فالوورز کی تعداد 16 ملین ہوئی ہے جس سے واضح ہورہا ہے کہ عہدے سے برطرفی کے بعد بھی عمران خان کی مقبولیت برقرار ہے۔ سال 2020 جولائی میں ہونے والے ایک مطالعے سے انکشاف ہوا تھا کہ عمران خان مائیکرو بلاگنگ سائٹ ٹوئٹر پر دنیا کے مقبول رہنماؤں کی درجہ بندی میں نویں نمبر پر ہیں۔

Categories
پاکستان

عمران خان ہیرو اور یہ سارے زیرو ہو گئے،شیخ رشید نے بڑا دعویٰ کر دیا

اسلام آباد(ویب ڈیسک) عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید کا کہنا ہے کہ ہمارا سارا ملبہ حکومت پر پڑ گیا ہے اور یہ اس ملبے تلے دب کر مر جائیں گے۔ فیصل آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے سابق وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید کا کہنا تھا کہ حالات ابتر و خراب، تشویشناک اور گھمبیر ہوتے جارہے ہیں،

ان سے حکومت سنبھل نہیں رہی، آصف زرداری نے ان کو گھیر کے گھنٹہ گھر چوک میں مارا ہے، ہمارا سارا ملبہ ان پر پڑ گیا ہے اور یہ اس ملبے تلے دب کر مر جائیں گے، عمران خان ہیرو اور یہ سارے زیرو ہو گئے ہیں، 16 سیاسی پارٹیوں کے سیاسی جنازے باہر آگئے ہیں، جب سے یہ حکومت آئی ہے 30 فیصد مہنگائی بڑھی ہے، یو اے ای، چین اورسعودیہ سے یہ لوگ خالی ہاتھ لوٹے ہیں، موجودہ صورتحال میں ڈالر اسی ماہ کے آخر تک 200 تک پہنچ جائےگا، ہر چیز ڈبل ہے مگر کارکردگی صفر ہے، یہ فیل ہوگئے ہیں، اگر ملک دیوالیہ ہوگیا تو کیا کریں گے، ان کے پاس کوئی حکمت نہیں، جو تھی وہ کرچکے۔ شیخ رشید کا کہنا تھا کہ میں دو سال سے کہتا تھا ن سے شین نکلے گی سب نے دیکھ لیا، میں کہتا تھا یہ لوگ فضل الرحمان سے ہاتھ کریں گے، مولانا کے بیٹے نے کبھی باتھ روم نہیں بنایا وہ موٹر وے بنائیں گے، اس حکومت نے سیکیورٹی پر جس بندے کو لگایا وہ بقول شیرعلی خود 22 بندوں کا اجرتی قاتل ہے، رانا ثنااللہ کو حکومت نے غنڈہ گردی کے لئے رکھا ہے، وہ مجھے دھمکا رہا ہے اور کہتا ہے مجھے گھر سے نہیں نکلنے دے گا، اسے پتہ ہی نہیں حالات اس سے آگے نکل چکے ہیں، مجھ پر خود کش حملے ہو چکے ہیں میں ان سے نہیں ڈرا تو اس شیطان سے کیا ڈروں گا، میں رانا ثناء اللہ کو طلب کئے جانے کے قابل بھی نہیں سمجھتا۔ سابق وفاقی وزیر نے کہا کہ عمران خان کی قیادت میں ملک انقلاب کی جانب جارہا ہے، نواز شریف کو بلائیں اس جہاز سے بھی سواریاں اتر جائیں گی کہ چوروں کے ساتھ سفر نہیں کرنا، ہم گھروں میں بھی رہیں تو یہ حکومت جارہی ہے،

اگر عمران خان کو گرفتار کیا گیا تو ملک سری لنکا بن جائے گا، ہم نے عمران خان کی سیکیورٹی کے حوالے سے خط لکھ دیا ہے، پی ٹی آئی نے اپنی حکمت عملی مکمل کر رکھی ہے، موجودہ حکومت نے نگران حکومت کیلئے نیشنل سکیورٹی کونسل کا اجلاس بلایا ہے، اجلاس میں نگران وزیراعظم کا اعلان اور 31 مئی سے پہلے کیئر ٹیکر گورنمنٹ بنالی جائے اور انتخابات کی تاریخ دی جائے۔ اس سے قبل سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر اپنی ٹوئٹ میں شیخ رشید کا کہنا تھا کہ مختصر ترین وقت میں متبادل جگہ پر عمران خان کا کامیاب ترین جلسہ سیاست کی تاریخ ہے، حکومت کے ہاتھ میں فیصلہ ہے کہ آئی ایم ایف کے پاس جانا ہے، الیکشن کرانا ہیں یابرے حادثے کا شکا ر ہونا ہے۔

Categories
پاکستان

عمران خان کی جان کو خطرہ،وزیر اعظم شہباز شریف نے بڑا قدم اٹھا لیا،رانا ثناء اللہ کو اہم ہدایت جاری کر دی

اسلام آباد(ویب ڈیسک) وزیراعظم شہباز شریف نے عمران خان کو فوری طور پر چیف سکیورٹی آفیسر فراہم کرنے کی ہدایت کردی۔ وزارت داخلہ کی جانب سے وزیر اعظم کو چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان کی سکیورٹی پرتفصیلی بریفنگ دی گئی جس میں وزیراعظم شہبا زشریف نے سابق وزیراعظم کو فول پروف سکیورٹی فراہم کرنے کی ہدایت کی۔ وزیراعظم نے

وزارت داخلہ کو ہدایت کی کہ عمران خان کو بہترین سکیورٹی اور فوری طور پر چیف سکیورٹی آفیسر فراہم کیا جائے۔ شہبا زشریف نے کہا کہ صوبائی حکومتیں عمران خان کو جلسوں کے دوران سکیورٹی فراہم کریں۔ادھر موجودہ حکومت نے سابق وزیراعظم عمران خان کی سکیورٹی کے لیے فول پروف انتظامات کرنے کے احکامات جاری کر رکھے ہیں۔ ذرائع کے مطابق حکومت نے عمران خان کے سکیورٹی پروٹوکول سے متعلق واضح ہدایات جاری کر رکھی ہیں کہ سابق وزیراعظم کی سکیورٹی کے لیے فورسز کی تعیناتی یقینی بنائی جائے۔ ذرائع کا بتانا ہے کہ بنی گالہ ہاؤس کی سکیورٹی کے لیے پولیس اور ایف سی کے 94 اہلکار تعینات کیے گئے ہیں جس میں اسلام آباد پولیس کے 22 اور ایف سی کے 72 اہلکار شامل ہیں۔ اس کے علاوہ کے پی حکومت نے 36 اور گلگت بلتستان کی حکومت نے 6 پولیس اہلکار عمران خان کو سکیورٹی کے لیے فراہم کر رکھے ہیں جبکہ ایس ایم ایس سکیورٹی کے 26 اور عسکری سکیورٹی کے 9 اہلکار بھی بنی گالہ ہاؤس پر تعینات ہیں۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ دوران سفر عمران خان کے ساتھ اسلام آباد پولیس کی 4 گاڑیاں اور 23 اہلکار اور رینجرر کی ایک گاڑی اور 5 اہلکار بھی ہوتے ہیں۔ ذرائع کا بتانا ہے کہ عمران خان کی سکیورٹی کے لیے دو اجلاس ہوئے جس کے بعد ان کی سکیورٹی بڑھائی گئی، مختلف تھریٹس کی روشنی میں عمران خان کی سکیورٹی کے لیے تھریٹ اسسمنٹ نے اجلاس کیے۔ ذرائع کے مطابق وفاقی حکام کا کہنا ہے کہ عمران خان کی سکیورٹی سے متعلق پی ٹی آئی کا فوکل پرسن مقرر کیا جانا ضروری ہے تاکہ عمران خان کو اگر کوئی مخصوص تھریٹ ہے تو وہ بھی شیئر کیا جائے جس کی روشنی میں مزید حفاظتی انتظامات کیے جا سکیں۔

Categories
پاکستان

جان کو خطرہ ،عمران خان نے عوام سے بڑی اپیل کر دی

فیصل آباد(ویب ڈیسک) چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے سیالکوٹ کے بعد فیصل آباد میں بھی اپنے قتل کی سازش تیار کیےجانےکا دعویٰ کرتے ہوئےکہا ہےکہ اگر مجھے کچھ ہوا تو پاکستان کے عوام مجھے انصاف دلائیں گے۔ فیصل آباد میں جلسے سے خطاب کرتے ہوئے عمران خان کا کہنا تھا کہ پاکستان کی تاریخ میں کبھی بڑے مجرم کونہیں پکڑا گیا،

نہ لیاقت علی خان کےاصل قاتل پکڑے گئے، نہ بھٹو کے جوڈیشل مرڈر کے ذمہ داروں کوسزا ملی ، اسی لیے انہوں نے ایک ویڈیو ریکارڈ کی ہے جس میں سازش میں ملوث کرداروں کے نام بتا دیے ہیں۔ عمران خان کا کہنا تھا کہ مجھےکچھ ہوا تو عوام انصاف دلائیں گے، مجھےکچھ ہوا تو ویڈیو جاری ہوگی جس میں جن جن لوگوں کے میں نے نام لیے ہیں آپ نے ان میں سے ایک ایک کو انصاف کے کٹہرے میں کھڑے کرنا ہے، یوں پاکستان کی تاریخ میں پہلی مرتبہ طاقت ور قانون کے نیچے آئےگا۔ چیئرمین تحریک انصاف کا کہنا تھا کہ ہمارے دور میں معیشت چل پڑی تھی، انڈسٹری کھڑی تھی،دنیا ہماری تعریف کررہی تھی، لیکن پھرسازش کرکےہماری حکومت گرا دی گئی، جب بھی گورنمنٹ جاتی ہے لوگ مٹھائیاں بانٹتے ہیں لیکن ہماری حکومت جانے پر لوگ سڑکوں پر آگئے۔ ان کا کہنا تھا کہ ہمارے دور میں کسانوں کو اتنا پیسا ملا جتنا کبھی پاکستان کی تاریخ میں نہیں ملا، پوچھنا چاہتا ہوں کہ کیا اب ان سے حکومت سنبھل رہی ہے، میڈیا سے کہتا ہوں لوگوں سے ٹماٹر اور مرغی کے ریٹ پوچھیں،میڈیا سےکہتاہوں کہ لوگوں سے ٹماٹر اور مرغی کے ریٹ پوچھیں۔ انہوں نےکہا کہ بلاول امریکا سےکہےگا ہمیں پیسا دے دو ورنہ عمران خان دوبارہ آجائے گا، بلنکن کو پتہ ہے بلاول اور اس کے باپ کا پیسا کہاں کہاں ہے، امریکی کبھی مدد نہیں کریں گے جب تک ان کےگلے زنجیریں ٹائٹ نہ کردیں ، وہ کہیں گے فلسطین کی بات مت کرو ، بھارت آزاد ہے اس لیے امریکا اسے کچھ نہیں کہتا،امریکا نے ہمیں فتح کیے بغیر غلام بنایا ہوا ہے۔

Categories
پاکستان

عمران خان نے پٹرول اور ڈیزل پر کیسےسبسڈی دی؟ اسد عمر نے حیران کن دعویٰ کر ڈالا

اسلام آباد(ویب ڈیسک) پاکستان تحریک انصاف کے رہنما اسد عمر نے دعویٰ کیا ہے کہ عمران خان نے اپنے دور حکومت میں اخراجات بچاکر پیٹرول اور ڈیزل مہنگا ہونے سے بچایا۔ ریس کانفرنس کرتے ہوئے اسد عمر نے کہا کہ پچھلے سال کے مقابلے اس سال بجلی کی پیداوار دس فیصد زیادہ ہوئی لیکن موجودہ حکومت کے آتے ہی لوڈشیڈنگ شروع ہوگئی۔

انہوں نے کہا کہ دوماہ میں زرمبادلہ کے ذخائر میں 37 فیصد کمی ہوئی ، وزیراعظم فیصلہ کرنے کی ہمت نہیں رکھتے۔ اس عمر نے مزید کہا کہ فی الحال حکومت کو کہیں سے پیسے نہیں مل رہے، اب اس کے پاس بیرون قرضہ لینے کے علاوہ کوئی چارہ نہیں ہے جبکہ سعودی عرب ،یو اے ای ،چین ،آئی ایم ایف کسی نے ان کو کچھ نہیں دیا،یہ سب ایک دوسرے کی طرف دیکھ رہے ہیں ۔ ان کا کہنا تھا کہ فیصلہ سازی منجمد ہے، شوکت ترین نے دعویٰ کیا کہ ہم سبسڈی کے لیے 466 ارب روپے کی فنڈنگ کا بندوبست کر لیا تھا۔ادھر وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل اسد عمر کے بیان پر ردعمل دیتے ہوئے کہا ہے کہ پچھلے 71 سالوں میں لیے گئے تمام قرضوں کا 80 فیصد قرض آپ لے لیا۔ سابق وفاقی وزیر اسد عمر کے بیان پر ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے وفاقی وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل کا کہنا تھا کہ 2018 میں ہم نے حکومت چھوڑی تو ہم گندم اور چینی برآمد کر رہے تھے، جب کہ آپ کی حکومت ختم ہوئی تو آپ چینی اور گندم درآمد کر رہے تھے، آپ کی درآمدات سب سے زیادہ ہیں، اللہ کی شان آپ معیشت کی بات کر رہے ہیں۔ سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر اپنی ٹویٹ میں مفتاح اسماعیل نے مزید کہا کہ آپ نے 1983 اور 84 کے بعد سب سے کم کپاس پیدا کی، جب کہ گزشتہ 71 سالوں میں لیے گئے تمام قرضوں کا 80 فیصد قرض آپ لے لیا۔ واضح رہے کہ سابق وفاقی وزیر منصوبہ بندی اسد عمر نے اپنے ایک بیان میں کہا تھا کہ عمران خان کی حکومت نے کسان دوست پالیسیاں اپنائیں،اور کسان کو اس کا جائز حق دلوایا، گنے کی فصل پچھلے سال سے9 اعشاریہ 6 فیصد زیادہ ہے، مکئی کی فصل میں بھی پاکستان کی تاریخ میں ریکارڈ اضافہ ہوا۔عمران خان نے لوگوں کو مہنگائی سے بچانے کی پوری کوشش کی،

عدم اعتماد کی تحریک کے بعد زرمبادلہ کے ذخائر میں 6 ارب ڈالر سے زائد کمی ہوئی، اور دو ماہ میں 2 ماہ میں قرضوں میں ساڑھے 12 سے بڑھ کر 15 فیصد اضافہ ہوا ہے۔

Categories
پاکستان

سابق وزیر اعظم عمران خان کی جان کو خطرہ،سکیورٹی مزید سخت

اسلام آباد(ویب ڈیسک) عمران خان کی سکیورٹی پرپولیس، ایف سی اور رینجرز تعینات موجودہ حکومت نے سابق وزیراعظم عمران خان کی سکیورٹی کے لیے فول پروف انتظامات کرنے کے احکامات جاری کر رکھے ہیں۔ ذرائع کے مطابق حکومت نے عمران خان کے سکیورٹی پروٹوکول سے متعلق واضح ہدایات جاری کر رکھی ہیں کہ سابق وزیراعظم کی سکیورٹی کے لیے فورسز

کی تعیناتی یقینی بنائی جائے۔ ذرائع کا بتانا ہے کہ بنی گالہ ہاؤس کی سکیورٹی کے لیے پولیس اور ایف سی کے 94 اہلکار تعینات کیے گئے ہیں جس میں اسلام آباد پولیس کے 22 اور ایف سی کے 72 اہلکار شامل ہیں۔ اس کے علاوہ کے پی حکومت نے 36 اور گلگت بلتستان کی حکومت نے 6 پولیس اہلکار عمران خان کو سکیورٹی کے لیے فراہم کر رکھے ہیں جبکہ ایس ایم ایس سکیورٹی کے 26 اور عسکری سکیورٹی کے 9 اہلکار بھی بنی گالہ ہاؤس پر تعینات ہیں۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ دوران سفر عمران خان کے ساتھ اسلام آباد پولیس کی 4 گاڑیاں اور 23 اہلکار اور رینجرر کی ایک گاڑی اور 5 اہلکار بھی ہوتے ہیں۔ ذرائع کا بتانا ہے کہ عمران خان کی سکیورٹی کے لیے دو اجلاس ہوئے جس کے بعد ان کی سکیورٹی بڑھائی گئی، مختلف تھریٹس کی روشنی میں عمران خان کی سکیورٹی کے لیے تھریٹ اسسمنٹ نے اجلاس کیے۔ ذرائع کے مطابق وفاقی حکام کا کہنا ہے کہ عمران خان کی سکیورٹی سے متعلق پی ٹی آئی کا فوکل پرسن مقرر کیا جانا ضروری ہے تاکہ عمران خان کو اگر کوئی مخصوص تھریٹ ہے تو وہ بھی شیئر کیا جائے جس کی روشنی میں مزید حفاظتی انتظامات کیے جا سکیں۔ادھر سابق وفاقی وزیر اسد عمر کا کہنا ہے کہ پاکستان تحریک انصاف کے رہنما فواد چوہدری کاکہنا ہےکہ رات 12 بجے ایک پارٹی کیلئے عدالتیں کھلنے سے ان کا کردار مجروح ہوتا ہے۔ لاہور کے علاقے اڈہ پلاٹ میں وکلا سے خطاب کرتے ہوئے فواد چوہدری نے کہا کہ عمران خان حقوق اور آزادی کے لیے جدوجہد کر رہے ہیں جب کہ پاکستان میں بہت جلد عام انتخابات ہونے جا رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ انتخابات جیتنے کے بعد تحریک انصاف کا پہلا کام جوڈیشل ریفارمز ہوگا،

وکلا موجودہ بار کے عہدے داروں سے مایوس ہیں کہ انہوں نے کیا کردار ادا کیا، عدالتیں اگر ایک پارٹی کے لیے رات 12 بجے کھل جائیں تو اس سے عدالتوں کا کردار مجروح ہوتا ہے۔ سابق وزیر نے ایف آئی اے ڈائریکٹر سے متعلق بات کرتے ہوئے کہا کہ ڈاکٹر رضوان کو دل کا دورہ دباؤ کی وجہ سے پڑا،جو بھی ان لوگوں کے کیسز کی انویسٹی گیشن کر رہا ہے اس کے ساتھ ایسا ہی ہو رہا ہے لیکن ہماری عدالتیں خاموش تماشائی کا کردار ادا کر رہی ہے۔

Categories
پاکستان

پی ٹی آئی رہنماؤں کی گرفتاریاں،عمران خان نے پورے ملک میں احتجاج کی کال دیدی

اسلام آباد(ویب ڈیسک) پاکستان تحریک انصاف کی جانب سے مسیحی برادری کے احتجاج اور عثمان ڈار کی گرفتاری کے بعد جلسے کا مقام سی ٹی آئی سے تبدیل کرتے ہوئے وی آئی پی گراونڈ کر دیا گیاہے، بلااجازت جلسہ کرنے پر پولیس کی جانب سے آپریشن کیا گیا جس میں عثمان ڈار سمیت متعدد پی ٹی آئی کارکنان کو حراست میں لیا گیا،

صورتحال کو دیکھتے ہوئے اب عمران خان خود بھی میدان میں آ گئے ہیں اور انہوں نے ہر صورت سیالکوٹ جانے کا اعلان کر دیاہے، تفصیلات کے مطابق عمران خان نے ٹویٹر پر پیغام جاری کرتے ہوئے کہا کہ ’’ہماری حکومت نےکبھی انکا کوئی جلسہ،دھرنا یا ریلی وغیرہ نہیں روکی کیونکہ ہم جمہوریت سےمخلص ہیں۔ میں آج سیالکوٹ میں ہوں گا اور اپنےتمام لوگوں کو ہدایات دے رہا ہوں کہ باہرنکلیں اور بعدازنمازِعشاءاپنےشہروں/علاقوں میں اس فسطائی امپورٹڈحکومت کیخلاف احتجاج کریں۔ ‘‘عمران خان کا مزید کا کہناتھا کہ ’’جب بھی اقتدار ملتاہے،SCپر چڑھائی،ماڈل ٹاؤن میں قتلِ عام،ججوں کورشوت دینےاورنواز شریف کیجانب سےخودکوامیر المؤمنین قراردیےجانےجیسی حرکتیں کرتےہیں۔اپوزیشن میں جمہوریت کامنفی استعمال،حکومت میں جمہوری اقدارکا جنازہ نکالتےہیں۔مگرلوگ اب ان کیخلاف کھڑےہوچکے ہیں۔‘‘ سابق وزیراعظم نے ٹویٹر پر جاری پیغام میں کہا کہ ’’کوئی شک میں نہ رہے،میں آج سیالکوٹ جاؤں گا۔امپورٹڈ حکومت نےہماری قیادت اورکارکنان کیخلاف سیالکوٹ میں جو کچھ کیاوہ اشتعال انگیزضرورہےمگرغیرمتوقع ہرگزنہیں۔ ضمانت پررہامجرموں کےاس ٹولے اورلندن میں مقیم ان کےعدالت سےسزا یافتہ قائدنےہمیشہ اپنےمخالفین کیخلاف فسطائی حربےاستعمال کئےہیں۔ادھر سیکرٹری جنرل پیپلز پارٹی سید نیر بخاری نے عمران خان کو فوری طور پر سرکاری تحویل میں لینے کا مطالبہ کردیا۔ تفصیلات کے مطابق سیکرٹری جنرل پیپلز پارٹی سید نیر بخاری نے سیالکوٹ میں صورتحال پر اپنے بیان میں کہا ہے عمران خان کوفوری طور پر سرکاری تحویل میں لیا جائے۔ سید نیر بخاری کا کہنا تھا کہ اپوزیشن کے آئینی ہتھیار سےاس سےنجات حاصل کی گئی اور عمران خان نے ماورائے آئین اقدامات کی کوششیں کیں۔ سیکرٹری جنرل پیپلز پارٹی نے مزید کہا کہ عمرانی حکومت سے نجات کیلئے آئینی تبدیلی پر سمجھ داری کا مظاہرہ کیا۔ خیال رہے وفاقی حکومت نے تحریک انصاف کے 70ْ0 رہنماؤں اور کارکنوں کی فہرست تیار کرلی، جنہیں سابق وزیر اعظم عمران خان کے اعلان کردہ لانگ مارچ سے قبل ملک بھر سے گرفتار کیا جائے گا۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ فہرست میں زیادہ پی ٹی آئی کے کچھ سرکردہ رہنما اور کارکنان بھی شامل ہیں۔

Categories
پاکستان

عمران خان کو فوری سرکاری تحویل میں لیا جائے ،پیپلز پارٹی نے بڑا مطالبہ کر دیا

اسلام آباد(ویب ڈیسک) سیکرٹری جنرل پیپلز پارٹی سید نیر بخاری نے عمران خان کو فوری طور پر سرکاری تحویل میں لینے کا مطالبہ کردیا۔ تفصیلات کے مطابق سیکرٹری جنرل پیپلز پارٹی سید نیر بخاری نے سیالکوٹ میں صورتحال پر اپنے بیان میں کہا ہے عمران خان کوفوری طور پر سرکاری تحویل میں لیا جائے۔ سید نیر بخاری کا کہنا تھا کہ

اپوزیشن کے آئینی ہتھیار سےاس سےنجات حاصل کی گئی اور عمران خان نے ماورائے آئین اقدامات کی کوششیں کیں۔ سیکرٹری جنرل پیپلز پارٹی نے مزید کہا کہ عمرانی حکومت سے نجات کیلئے آئینی تبدیلی پر سمجھ داری کا مظاہرہ کیا۔ خیال رہے وفاقی حکومت نے تحریک انصاف کے 70ْ0 رہنماؤں اور کارکنوں کی فہرست تیار کرلی، جنہیں سابق وزیر اعظم عمران خان کے اعلان کردہ لانگ مارچ سے قبل ملک بھر سے گرفتار کیا جائے گا۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ فہرست میں زیادہ پی ٹی آئی کے کچھ سرکردہ رہنما اور کارکنان بھی شامل ہیں۔ادھر مسلم لیگ ن کی رہنما مریم نواز نے سیالکوٹ میں جلسے کے مقام کو لے کر تحریک انصاف کو تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔ ٹوئٹر پر جاری بیان میں مریم نواز نے کہا کہ حکومت کی اولین ذمے داری پاکستان میں بسنے والی تمام اقلیتوں کے حقوق کی رکھوالی ہے۔ انہوں نے کہا کہ کئی دنوں سے مسیحی برادری اس بات پر سراپا احتجاج ہے کہ چرچ کے گراؤنڈ میں جلسہ ان کی عبادت گاہ کی توہین ہے۔ مریم نواز کا کہنا تھا کہ جلسہ کرنا تمہارا حق ہے، مذہبی جذبات کو ٹھیس پہنچانا نا تمہارا حق ہے اور نا تمہیں اس کی اجازت ہوگی، اپنی بے مقصد کی سیاست اور فتنے بازی کہیں اور جا کر کرو، اس کے لیے پورے سیالکوٹ میں چرچ کے علاوہ اور کہیں جگہ نہیں ملی؟دوسری طرف تحریک انصاف نے مسیحی برادری کے احتجاج کے باعث جلسے کا مقام تبدیل کیا۔ پی ٹی آئی پنجاب کے صدر شفقت محمود نے سینیٹر اعجاز چوہدری کے ہمراہ سیالکوٹ میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے جلسہ گاہ کا مقام تبدیل کرنے کا اعلان کیا۔ شفقت محمود کا کہنا تھا کہ جلسے کرنا ہمارا جمہوری حق ہے لیکن ہمارے پرامن لوگوں پر تشدد کیا گیا، خواجہ آصف کے کہنے پر انتظامیہ نے تشدد کیا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ جلسہ ہو گا اور ہر صورت ہو گا،

آج سیالکوٹ میں وی آئی پی کرکٹ گراؤنڈ میں جلسہ ہو گا۔ پی ٹی آئی پنجاب کے صدر کا کہنا تھا کہ ڈپٹی کمشنر کو کہا ہے عثمان ڈار اور دیگر کو رہا کیا جائے۔ یاد رہے کہ پاکستان تحریک انصاف نے آج سیالکوٹ کے سی ٹی آئی گراؤنڈ میں جلسے کا اعلان کیا تھا تاہم ضلعی انتظامیہ نے مسیحی برادری کے احتجاج کے باعث انہیں جلسے کی اجازت نہیں دی تھی۔

Categories
پاکستان

ڈالر کی بڑھتی قیمت پر تنقید کے بعد ریحام خان کا موقف بھی آگیا،عمران خان سے بڑا سوال پوچھ لیا

اسلام آباد(ویب ڈیسک) ڈالر کی قیمت بڑھنے اور اس پر ہونیوالی تنقید کے بعد سابق وزیراعظم عمران خان کی سابقہ بیوی ریحام خان کا موقف بھی آگیا۔عمران خان نے ٹویٹ میں لکھا تھا کہ ڈالرریٹ اب تک کی کم ترین سطح پر 193 جبکہ 8 مارچ کو ڈالر 178 تھا، 15 فیصد شرح سود1998کے بعدسب سے زیادہ ،

سٹاک مارکیٹ 3,000 پوائنٹس یا 6.4 فیصد نیچے، سٹاک مارکیٹ میں 604 ارب روپے کی سرمایہ کاری کا نقصان،مہنگائی جنوری 2020 کے بعد سے سب سے زیادہ 13.4 فیصدتک ۔حکومت درآمدی پر اب تک کے سب سے کم اعتماد کی عکاسی کرتی ہے۔ سابق وزیراعظم عمران خان پر ریحام خان نے موقف دیتے ہوئے لکھا 9 اپریل رات 12 بجے تک کرسی کے ساتھ چپکے رہنے والا اب کہہ رہا ہے کہ مارچ میں ڈالر 178 کا تھا۔ذرا کوئی پوچھے کہ 7 اپریل کو ڈالر 189 کا تھا تب بھی تو آپ ہی کی حکومت تھی۔ایک ماہ میں 11 روپے بڑھا کیوں نہیں کنٹرول کیا ؟

Categories
پاکستان

میں بات نہیں کروں گا، عمران خان نے اسٹیبلشمنٹ کے نمبر بلاک کر دیے

اسلام آباد(ویب ڈیسک) سابق وزیراعظم و پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے چیئرمین عمران خان کہا ہے کہ اسٹیبلشمنٹ سے پیغامات آرہےہیں لیکن میں کسی سے بات نہیں کررہا، میں نے ان لوگوں کے نمبر بلاک کر دیے ہیں، جب تک الیکشن کااعلان نہیں ہوتا،تب تک کسی سےبات نہیں ہو گی۔ صحافیوں سے گفتگو میں عمران خان کا کہنا تھاکہ شہباز شریف کے علاوہ بھی کردار میر جعفر اور میر صادق ہیں۔

ان سے سوال کیا گیا کہ کیا آپ ان کرداروں کے نام لیں گے؟ ان کا کہنا تھاکہ ابھی کرداروں کے نام لینے کا وقت نہیں آیا، وقت آنے پر ان کرداروں کے نام لوں گا۔ انہوں نے کہا کہ ’نیوٹرلز‘ کوبتایا تھا معیشت مشکل سے مستحکم ہوئی ہے، شوکت ترین نے بھی ان کوسمجھایا سیاسی عدم استحکام معیشت کیلئے نقصان دہ ہے، جو اس سازش کا حصہ بنے، ان سے سوال کرتا ہوں، کیا سازش کا حصہ بننے والوں کو پاکستان کی فکر نہیں تھی؟ پاکستان سازش میں شریک لوگوں کی ترجیحات میں نہیں تھا؟ ان کا کہنا تھا کہ جن لوگوں کو لایا گیا، اس سے بہتر تھا پاکستان پرایٹم بم گرا دیتے، جو کرمنلز لائے گئے، انہوں نے ہر ادارہ اور جوڈیشل سسٹم تباہ کردیا، کون سا حکومتی آفیشل ان مجرموں کےکیسزکی تحقیقات کرے گا؟ عمران خان کا کہنا تھاکہ میں سمجھتا تھا کرپشن بااثر شخصیات کیلئے بھی ایشو ہے، میں سمجھتا تھا کہ کرپشن پر ہمارا نظریہ ایک ہے لیکن کرپشن اہم شخصیات کیلئے مسئلہ ہی نہیں تھا، میں صدمے میں ہوں کہ یہ لوگ چوروں کو اقتدار میں لائے، مجھے بارہا کہا گیا آپ کرپشن کیسز کے پیچھے نہ پڑیں، مجھے کہا جاتا تھا کہ کارکردگی پر توجہ دیں۔ انہوں نے کہا کہ سازش کرنے والوں نے غلط اندازہ لگایا، انھیں نہیں پتہ تھا مجھے ہٹانے پر اتنےعوام سڑکوں پرنکل آئیں گے۔ اسٹیبلشمنٹ سے تعلقات کے حوالے سے سابق وزیراعظم کا کہنا تھاکہ آخری دن تک اسٹیبلشمنٹ سے تعلقات اچھے رہے، دو معاملات پر اس سے عدم اتفاق رہا، مقتدر حلقے چاہتے تھے عثمان بزدار کو وزارت اعلیٰ سے ہٹاؤں، انھیں بتایا سندھ میں گورننس اور کرپشن کے حالات بدتر ہیں، عثمان بزدار کی جگہ کسی اور کو لگاتا تو پارٹی میں دھڑے بندی ہو جاتی۔ ان کا کہنا تھاکہ اسٹیبلشمنٹ سے دوسرا ایشو جنرل فیض کے معاملے پر تھا، میں چاہتا تھا کہ جنرل فیض سردیوں تک ڈی جی آئی ایس آئی رہیں، انہیں برقرار رکھنے کی ایک وجہ افغانستان کی صورتحال تھی۔

انہوں نے کہا کہ جنرل فیض کو داخلی سیاسی صورتحال کیلئے بھی برقرار رکھنا چاہتا تھا، مجھے اپوزیشن کی سازش کا جون سے پتہ تھا، ہمیشہ ایسے فیصلے ہوتے رہے کہ میری حکومت کمزور رہے۔ سابق وزیراعظم کا کہنا تھاکہ میں اللہ کو گواہ بنا کر کہتا ہوں کہ میں سابق ڈی جی آئی ایس آئی کو آرمی چیف بنانے کا سوچا ہی نہیں تھا۔ ان کا کہنا تھاکہ ن لیگ کے 30 ایم پی ایز فارورڈ بلاک بنانا چاہتے تھے، اگر فارورڈ بلاک بن جاتا تو ن لیگ کی سیاست ختم ہو جاتی لیکن ان ایم پی ایز کو طاقتور حلقوں نے پیغام دیا جہاں ہیں، وہیں رہیں، 8، 10لوگوں کو کرپشن میں سزا ہونی چاہئے تھی لیکن ایسا ہونے نہیں دیا گیا۔ اسٹیبلشمنٹ کے حوالے سے عمران خان کا مزید کہنا تھاکہ اسٹیبلشمنٹ سے پیغامات آرہےہیں لیکن میں کسی سےبات نہیں کررہا، میں نے ان لوگوں کے نمبر بلاک کر دیے ہیں، جب تک الیکشن کااعلان نہیں ہوتا،تب تک کسی سےبات نہیں ہو گی۔ انہوں نے مزید کہا کہ اقوام متحدہ میں یوکرین معاملے پر ووٹنگ میں حصہ نہ لینا درست فیصلہ تھا۔ اسلام آباد مارچ سے متعلق ان کا کہنا تھاکہ اسلام آباد مارچ کیلئے تیاری شروع کر دی ہے، جب عوام سڑکوں پر نکلتے ہیں تو بہت سے آپشن کھل جاتے ہیں۔ خیال رہے کہ قبل ازیں اپنے بیان میں عمران خان کا کہنا تھاکہ نیوٹرلز‘ کو خبردار کر دیا تھا کہ اگر سازش کامیاب ہوئی تو معاشی بحالی ڈوب جائے گی۔

Categories
پاکستان

پی ٹی آئی کارکنان کی گرفتاری ،عمران خان نے پارٹی کا ہنگامی اجلاس بلا لیا،اہم فیصلے متوقع

اسلام آباد(ویب ڈیسک) سیالکوٹ میں پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی )کے رہنماعثمان ڈار اور دیگر کارکنوں کی گرفتاری پر عمران خان نے پارٹی کا ہنگامی اجلاس طلب کر لیا ۔ چیئر مین پاکستان تحریک انصاف عمران خان اجلاس کی قیادت کریں گے ،اجلاس میں پارٹی کی مرکزی قیادت شریک ہو گی،ملکی سیاسی اور سیالکوٹ کی صورتحال کا جائزہ لیا جائے گا،

عمران خان موجودہ صورتحال پر مرکزی قیادت سے مشاورت کریں گے ، اجلاس میں آئندہ کے لائحہ عمل پر بھی غور ہو گا۔یاد رہے کہ پی ٹی آئی کی جانب سے اجازت نہ ملنے کے باوجود سیالکوٹ کے سی ٹی آئی گراؤنڈ میں جلسے کی تیاریاں جاری تھیں کہ اسی دوران پولیس نے جلسہ گاہ پر کریک ڈاؤن کرتے ہوئے پی ٹی آئی رہنماؤں سمیت متعدد افراد کو حراست میں لے لیا۔ادھر پاکستان تحریک انصاف کے رہنما شہباز گل کا کہنا ہے کہ امپورٹڈ حکومت کی کانپیں ٹانگ رہی ہیں ،سیالکوٹ میں امپورٹڈ حکومت کی غنڈہ گردی کی مذمت کرتے ہیں۔ سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر پی ٹی آئی رہنماشہباز گل کا کہنا تھا کہ جلسہ کرنا ہمار بنیادی حق ہے اور اس حق سے ہمیں کوئی نہیں روک سکتا،چند دنوں کی مہمان حکومت کی کانپیں ٹانگ رہی ہیں، امپورٹڈ حکومت عوامی دباو¿ کی تاب نہیں لا سکی اور فسطائی ہتھکنڈوں پر اتر آئی ہے۔یاد رہےدوسری طرف پولیس نے سیالکوٹ میں پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی )کے بلا اجازت سی ٹی آئی گراونڈ میں جلسے کے انتظامات کرنے پر کریک ڈاون کرتے ہوئے پی ٹی آئی رہنما عثمان ڈار سمیت متعدد افراد کو گرفتار کر لیا ۔پولیس نے جلسہ گاہ سے رہنما تحریک انصاف علی اسجد ملہی اور سابق ڈی جی اینٹی کرپشن اسلم گھمن کو بھی حراست میں لے لیا۔جلسہ گاہ سے سامان ہٹائے جانے پر پی ٹی آئی کارکنوں کی جانب سے مزاحمت کی گئی جس پر پولیس کی جانب سے کارکنوں کو منتشر کرنے کے لیے آنسوگیس کی شیلنگ کی گئی۔تحریک انصاف کے کارکنوں کے منتشر ہونے کے بعد کرین کی مدد سے جلسہ گاہ سے سامان کو ہٹایا جا رہا ہے۔رپورٹ کے مطابق ڈپٹی کمشنر سیالکوٹ عمران قریشی کا کہنا ہے کہ ضلعی انتظامیہ نے سی ٹی آئی گراونڈ میں جلسے کی پی ٹی آئی کی درخواست مسترد کی تھی لیکن اس کے باوجود تحریک انصاف کی جانب سے سی ٹی آئی گراونڈ میں جلسے کی تیاریاں جاری تھیں۔

ہم انہیں جلسے کے لیے متبادل جگہ دینے کے لیے تیار ہیں۔سی ٹی آئی گراونڈ میں جلسے کی کال پر مسیحی کمیونٹی سراپا احتجاج ہے ،مسیحی کمیونٹی نے ہائیکورٹ میں سی ٹی آئی گراونڈ میں جلسے کیخلاف درخواست دی تھی، ہائیکورٹ کا حکم ہے کہ گراونڈ میں جلسے کو روکیں۔ضلعی انتظامیہ کا اس حوالے سے کہنا ہے کہ مالکان کی رضا مندی کے بغیر کسی کو جلسے کی اجازت نہیں دے سکتے، سی ٹی آئی گراؤنڈ میں جلسے کی کال پر مسیحی کمیونٹی سراپا احتجاج ہے، اجازت کے بغیر جلسہ کرنے سے امن و امان کا خطرہ ہے، سی ٹی آئی گراؤنڈ کے علاوہ کسی اور جگہ جلسہ کرنے کہ درخواست دی جائے

Categories
پاکستان

اللہ کی شان !جس کو سعودی عرب تک نے لفٹ نہ کرائی وہ نمبر بلاک کرنے کی باتیں کر رہا ہے، عمران خان کے نمبر بلاک کرنے سے متعلق بیان پر ریحام خان کا تبصرہ

لندن(ویب ڈیسک) سابق وزیر اعظم عمران خان کی سابقہ اہلیہ ریحام خان نے چیئرمین پی ٹی آئی کی جانب سے نمبر بلاک کرنے کے بیان پر دلچسپ تبصرہ کیا ہے۔ اپنے ٹوئٹر پیغام میں ریحام خان نے کہا کہ اللّٰہ کی شان دیکھیں جس شخص کا فون امریکی صدر نہیں اٹھاتا، بھارتی وزیراعظم نہیں اٹھاتا

اور اطلاعات کے مطابق آخری دنوں میں تو سعودی ولی عہد نے بھی لفٹ نہیں کروائی، وہ شخص کہتا ہے کہ میں نے اسٹیبلشمنٹ کے نمبر بلاک کردیے۔ واضح رہے کہ پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے چیئرمین اور سابق وزیر اعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ اسٹیبلشمنٹ سے پیغامات آ رہے ہیں لیکن میں کسی سے بات نہیں کررہا، میں نے ان لوگوں کے نمبر بلاک کر دیے ہیں۔) سابق وزیراعظم و پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے چیئرمین عمران خان کہا ہے کہ اسٹیبلشمنٹ سے پیغامات آرہےہیں لیکن میں کسی سے بات نہیں کررہا، میں نے ان لوگوں کے نمبر بلاک کر دیے ہیں، جب تک الیکشن کااعلان نہیں ہوتا،تب تک کسی سےبات نہیں ہو گی۔ صحافیوں سے گفتگو میں عمران خان کا کہنا تھاکہ شہباز شریف کے علاوہ بھی کردار میر جعفر اور میر صادق ہیں۔ان سے سوال کیا گیا کہ کیا آپ ان کرداروں کے نام لیں گے؟ ان کا کہنا تھاکہ ابھی کرداروں کے نام لینے کا وقت نہیں آیا، وقت آنے پر ان کرداروں کے نام لوں گا۔ انہوں نے کہا کہ ’نیوٹرلز‘ کوبتایا تھا معیشت مشکل سے مستحکم ہوئی ہے، شوکت ترین نے بھی ان کوسمجھایا سیاسی عدم استحکام معیشت کیلئے نقصان دہ ہے، جو اس سازش کا حصہ بنے، ان سے سوال کرتا ہوں، کیا سازش کا حصہ بننے والوں کو پاکستان کی فکر نہیں تھی؟ پاکستان سازش میں شریک لوگوں کی ترجیحات میں نہیں تھا؟ ان کا کہنا تھا کہ جن لوگوں کو لایا گیا، اس سے بہتر تھا پاکستان پرایٹم بم گرا دیتے، جو کرمنلز لائے گئے، انہوں نے ہر ادارہ اور جوڈیشل سسٹم تباہ کردیا، کون سا حکومتی آفیشل ان مجرموں کےکیسزکی تحقیقات کرے گا؟ عمران خان کا کہنا تھاکہ میں سمجھتا تھا کرپشن بااثر شخصیات کیلئے بھی ایشو ہے، میں سمجھتا تھا کہ کرپشن پر ہمارا نظریہ ایک ہے لیکن کرپشن اہم شخصیات کیلئے مسئلہ ہی نہیں تھا، میں صدمے میں ہوں کہ یہ لوگ چوروں کو اقتدار میں لائے، مجھے بارہا کہا گیا آپ کرپشن کیسز کے پیچھے نہ پڑیں

Categories
Uncategorized

“جس ہاتھ سے کھاتا ہے ، اسی کو کاٹتا ہے”خواجہ آصف نے عمران خان کے خلاف سخت زبان استعمال کر دی

اسلام آباد(ویب ڈیسک) وزیر دفاع خواجہ آصف کا کہنا ہے کہ آخر بلی تھیلے سے باہر آ گئی ، عمران خان وہ شخص ہے جو جس ہاتھ سے کھاتا ہے ، اسی کو کاٹتا ہے۔نجی نیوز چینل کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے خواجہ آصف کا کہنا تھا کہ ان کا کہنا تھا کہ آخر بلی تھیلے سے باہر آگئی،

عمران خان نے نیوٹرل کرتے کرتے فوج پر براہ راست الزام لگادیا۔ انہیں نیوٹرل ہونے پر تکلیف یہ ہے کہ اس وینٹیلیٹر کے بغیر اُن کی سیاست زندہ نہیں رہ سکتی۔ فوج نے اس کے لیے اپنی ساکھ داؤ پر لگائی اور آج سے میر جعفر کا الزام سننا پڑ رہا ہے۔ خواجہ آصف نے کہا کہ پچھلی حکومت سے گورننس اور معاشی حالات ٹھیک نہیں ہو رہے تھے ، تو اس میں فوج کا کیا قصور؟ فوج نے عمران خان سے یہ تو نہیں کہا تھا کہ اپنے کرونیز کو کھلی چھٹی دو ، خود ہیلی کاپٹر کے رکشے پر بیٹھ کر اٹھانوے کروڑ کا خرچہ کرو۔ اس کے علاوہ وفاقی وزیر قانون رانا ثناء نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ہر روز فوجی قیادت کو دعوت دینے والے نے آج پالش اور برش اٹھالیا، ایک دن گالی، اگلے دن قوالی، باس اور چپڑاسی کی سیاسی زندگی کی کل کہانی یہی ہے۔ واضح رہے کہ گزشتہ روز صحافیوں سے گفتگو میں سابق وزیراعظم و پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے چیئرمین عمران خان کہا کہ اسٹیبلشمنٹ سے پیغامات آرہےہیں لیکن میں کسی سے بات نہیں کررہا، میں نے ان لوگوں کے نمبر بلاک کر دیے ہیں، جب تک الیکشن کااعلان نہیں ہوتا،تب تک کسی سےبات نہیں ہو گی۔ صحافیوں سے گفتگو میں عمران خان کا کہنا تھاکہ شہباز شریف کے علاوہ بھی کردار میر جعفر اور میر صادق ہیں۔ ان سے سوال کیا گیا کہ کیا آپ ان کرداروں کے نام لیں گے؟ ان کا کہنا تھاکہ ابھی کرداروں کے نام لینے کا وقت نہیں آیا، وقت آنے پر ان کرداروں کے نام لوں گا۔) وزیر دفاع خواجہ آصف کا کہنا ہے کہ آخر بلی تھیلے سے باہر آ گئی ، عمران خان وہ شخص ہے جو جس ہاتھ سے کھاتا ہے ، اسی کو کاٹتا ہے۔نجی نیوز چینل کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے خواجہ آصف کا کہنا تھا کہ ان کا کہنا تھا کہ آخر بلی تھیلے سے باہر آگئی،

Categories
پاکستان

عمران خان قومی سلامتی کے لیے بڑا خطرہ ہیں،لیگی رہنما جاوید لطیف نے سنگین الزامات لگا دیے

لاہور(ویب ڈسیک) وفاقی وزیر جاوید لطیف نے کہا ہے کہ سابق وزیراعظم عمران خان قومی سلامتی کیلئے بڑا خطرہ ہیں۔ وفاقی وزیر اور پاکستان مسلم لیگ ن کے سینئر رہنما میاں جاوید لطیف نے لاہور پریس کلب میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ عمرانی فتنہ نے پاکستانی معیشت کو ڈبونے کے بعد اس کا جنازہ نکالنے کا سفر جاری رکھنا چاہتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ عمران خان گزشتہ 20 سالوں سے پاکستان میں فساد برپا کرنا چاہتا ہے، اس کا عملی مظاہرہ اس نے 2014 میں شروع کیا اور اداروں میں بیٹھے افراد کو دباؤ میں لانے میں کامیاب بھی رہا۔ انہوں نے بتایا کہ آج اس نے پاکستان میں خانہ جنگی کی کوشش شروع کر رکھی ہے، یہ قوم کو مذہبی دیوالیے کی جانب لے جا رہا ہے۔ وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ عمران خان کی خواہش ہے کہ معیشت، اداروں کو اس قدر کمزور کر دیا جائے کہ ادارے اسے دوبارہ اقتدار میں لے آئیں لیکن آج ملکی ادارے اور اس میں بیٹھے افراد اپنی حدود میں رہنا چاہتے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ ہم الیکشن سے بھاگنے والے نہیں ہیں، 2018 سے اب تک انتخابات رولز میں جو ترامیم کر چکے ہیں اگر انہیں واپس لے لیا جائے تو الیکشن کروانے کو تیار ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ایٹمی پروگرام کے غیر محفوظ ہاتھوں میں جانے کی باتیں کرنا خطرناک ہے جو کہ محفوظ ہاتھوں میں ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ عمران خان کے جلسے میں 70 فیصد وہی لوگ ہوتے ہیں جو ہر جلسے میں ہوتے ہیں، مقامی لوگ صرف 15 فیصد ہوتے ہیں۔ جاوید لطیف نے کہا کہ 4 سال کا پھیلایا ہوا گند پاکستان کے دفاع کے لئے ہم نے اپنے کندھوں پر اٹھایا لیکن ہم زیادہ دیر خاموش نہیں رہیں گے۔ انہوں نے بتایا کہ اس کے دور حکومت کے بےشمار اسکینڈلز ہیں جن پر کام ہو رہا ہے اور ہم اس کا کچا چٹھا قوم کے سامنے رکھنے والے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ یہ ممکن نہیں کہ عمران خان اداروں کو بلیک میل کر کے کہے کہ مجھے دوبارہ اقتدار میں لانے کا کہے۔ وفاقی وزیر نے تنبیہہ کی ہے کہ لانگ مارچ کے دوران قانون ہاتھ میں لو گے تو قانون آپ کے استقبال کے لئے کھڑا ہو گا۔

وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ ڈپٹی سپیکر قومی اسمبلی کی رولنگ سے شروع ہونے والا سفر اب تک جاری ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ سیاستدان پر الزامات کے باوجود اگر عوام کسی کو منتخب کرتے ہیں تو عوام سے بہتر جج کوئی نہیں ہو سکتا، نواز شریف وہی اشتہاری ہے جسے ہائی جیکر بنا کر سزا سنائی گئی لیکن وہ تیسری بار وزیراعظم بنا اور اب وہی اشتہاری واپس آ کر چوتھی بار ملک کا وزیراعظم بنے گا۔ انہوں نے کہا کہ 2018 کے مینڈیٹ کو چرایا گیا تھا لیکن ہم نے غیرآئینی حکومت کو آئینی طریقے سے ہٹایا، تحریک عدم اعتماد لانے کا غیرمقبول فیصلہ ہم نے ملک کو سری لنکا بننے سے بچانے کے لئے کیا۔

Categories
پاکستان

وہ کونسی فنکارہ ہیں جن کی والدہ عمران خان کی حفاظت کیلئے دن میں سو بار دعائیں مانگتی ہیں؟؟

لاہور(ویب ڈیسک) پاکستان شوبزانڈسٹری کی نامور گلوکارہ و ماڈل عینی خالد کا کہنا ہے کہ ان کی والدہ عمران خان کی حفاظت کیلئے دن میں سو بار دعائیں مانگتی ہیں۔ عینی خالد نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر ایک ویڈیو شئیر کی ، جس میں گلوکارہ کے والدین عمران خان کا ایک جلسہ دیکھتے ہوئے نظر آرہے ہیں۔

اس ویڈیو میں با آسانی دیکھا جا سکتا ہے کہ پی ٹی آئی کے چئیرمین اور سابق وزیراعظم عمران خان جلسے گاہ میں اسٹیج پر موجود ہیں اور گلوکارہ کی والدہ اسکرین پر دیکھ کر رو رہی ہیں۔ ویڈیو میں عینی خالد کی آواز بھی سنائی دے رہی ہے جوکہ اپنی والدہ سے پوچھتی ہیں کہ ماما آپ کس کے لیے رو رہی ہیں؟ جس پر گلوکارہ کی والدہ ٹی وی اسکرین کی طرف اشارہ کرتی ہیں۔ عینی خالد نے یہ ویڈیو شیئر کرتے ہوئے کیپشن میں بتایاکہ یہ میری ماما ہیں جوکہ عمران خان کے لیے رو رہی ہیں ، ماما جب بھی عمران خان کو اسٹیج پر اور پھر وہاں سے اُترتے ہوئے دیکھتی ہیں تو روتی ہیں، وہ عمران خان کی حفاظت کے لیے دن میں سو بار دعائیں مانگتی ہیں۔ واضح رہےکہ اس سے قبل عینی خالد نے عمران خان سے اظہار یکجہتی کےلئے پی ٹی آئی کے احتجاجی مظاہرے میں بھی شرکت کی تھی اور اس دوران انہوں نے آنکھوں دیکھا حال بھی سوشل میڈیا پر بیان کیا تھا۔ گلوکارہ عینی خالد نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پرجاری اپنی ٹوئٹ میں لکھا تھا کہ اتوار کی شب عمران خان سے اظہار یکجہتی کےلئے پی ٹی آئی کے احتجاجی مظاہرے کے دوران ، میں نے عام افراد کو لوگوں میں جوس کی بوتلیں اور پانی تقسیم کرتے دیکھا۔ گلوکارہ نے بتایاکہ اس جلسے میں اجنبی افراد خواتین کے گرد دائرہ بناکر ان کی حفاظت کررہے تھے جب کہ کچھ مرد حضرات بچوں کے ہمراہ خواتین کے گرد ہاتھوں کی چین بنائے کھڑے تھے۔ عینی خالد نے مزید کہاکہ یہ منظر دل موہ لینے والا تھا، یہ ہے عمران خان کا پاکستان۔

Categories
Uncategorized

“کسی سے ملوں گا ،بات کرونگا نہ ہی کسی کا فون سنوں گا”عمران خان نے صاف صاف بتا دیا

اٹک(ویب ڈیسک) سابق وزیر داخلہ شیخ رشید احمد نے کہا ہے کہ جس نےعدم اعتماد کا پلان بنایا اس نے عمران خان کی خدمت کی، سازش الٹی پڑگئی اور عمران خان ہیرو بن گیا ہے۔ سابق وزیر داخلہ شیخ رشید نے اٹک میں جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستان کا خزانہ آدھا خالی ہوچکا ہے، پاکستان کی اسٹاک ایکسچینج بیٹھ چکی ہے،

ڈالر17 تاریخ تک200 روپےتک چلا جائے گا، امریکیوں نے سمجھا تھا چیری بلاسم سنبھال لےگا لیکن نہیں سنبھال سکتا لیکن معیشت اور مہنگائی ان سے نہیں سنبھالے جائیں گے، برا وقت آرہا ہے، اللہ نہ کرے ملک ڈیفالٹ ہونے کے قریب ہے، دباؤ آئے گا اور ہمارے ایٹمی اثاثے شدید خطرات میں ہونگے۔ شیخ رشید نے کہا کہ تقریروں اور ریلیوں کا وقت چلا گیا، اب ہمارے لیے ایک ہی راستہ بچا ہے، پاکستان کی زندگی اور موت کا سوال ہے اور عمران خان نے اس وقت ملک کو بچانے کی کال دی ہے، آپ بےشک پی ٹی آئی کیساتھ نہ ہوں مگر پاکستان کا جھنڈا اٹھا کراسلام آباد کا رخ کریں، امید کرتا ہوں عمران خان 20 مئی کو ملتان میں اسلام آباد لانگ مارچ کی تاریخ کا اعلان کردیں گے۔ انہوں نے کہا کہ ڈی جی آئی ایس پی آرکا بیان آیا ہے کہ جنرل فیض حمید کے بارے میں مریم اور زرداری کی زبان قابل قبول نہیں، بلاول کہتا ہے مجھے دھمکی دی گئی کہ مارشل لا لگا دیں گے اس پر آئی ایس پی آر نے واضح طور پر پریس ریلیز جاری کردیا ہے، یہ چاہتے ہیں ہماری عظیم فوج سے غلط فہمی ہو۔ سابق وفاقی وزیر کا مزید کہنا تھا کہ آصف زرداری کہتا ہے بائیڈن تو میرا دوست ہے ہائے اس نے مجھے بتایا ہی نہیں اور مراسلہ بھیج دیا ہے، وہ کہتا ہے اصلاحات لائیں گے، ان کی پہلی اصلاحات ہے کہ شریف فیملی اوراپنا نام منی لانڈرنگ کیس سے نکالیں، دوسری اصلاحات ہے کہ اوورسیز کو ووٹنگ کا حق نہیں دینگے لیکن میں اوورسیز پاکستانیوں کے حق کیلیے سپریم کورٹ جاؤں گا۔ سابق وزیر داخلہ نے کہا کہ جس شخص نے14 مرتبہ فوج کو گالی دی اس نے سب کو لندن بلایا ہے اور پیغام دیا ہے کہ چوروں کی حاکمیت ہے،

حکومت میں 2 وزیراعظم، 2 وزیر خزانہ، 2 وزیر خارجہ اور دو ہی وزیر داخلہ ہیں، بتاؤ 2 دن سے لندن میں بیٹھے کیا کررہے ہو،اب گندم کا بھاؤ، لیموں، ٹماٹر، ہری مرچ چینی اورآٹے کی قیمت یاد نہیں، فضل الرحمان کے بیٹے نے کبھی مسجد کا غسل خانہ نہیں بنایا اسے کمیونی کیشن کا وزیر بنادیا۔ شیخ رشید احمد نے کہا کہ شیرعلی کہتا ہے رانا ثنااللہ نے 22 قتل کیا ہے، وہ بدمعاش رانا جس نے منہاج القرآن کی خواتین پر گولیاں چلوائیں، وہ کہتا ہے کہ عمران خان لوگوں کو اسلام آباد لاکر دکھائے، رانا ثنااللہ سن لو عمران خان لوگوں کیساتھ اسلام آباد آرہا ہے، 22 افراد کے قاتل بدمعاش کو فیصل آباد جلسے میں جواب دونگا۔ انہوں نے مزید کہا کہ عمران خان کہتا ہے کسی سے ملوں گا نہ بات کرونگا نہ کسی کا فون سنوں گا، صرف الیکشن چاہتا ہوں اس کے علاوہ کوئی بات نہیں ہوگی، جو جوش وخروش دیکھ رہاہوں وہ بھٹو کے دور میں بھی نہیں دیکھا۔