Categories
شوبز

وہ وقت جب کچھ مردوں کا گروپ میاخلیفہ کو سر عام تنگ کرتا رہا

نیویارک(ویب ڈیسک) فحش فلموں کی سابق اداکارہ میا خلیفہ کو اس شرمناک انڈسٹری سے کنارہ کش ہونے کے باوجود اس کیریئر کی وجہ سے لوگوں کی طرف سے کس طرح کے سلوک کا سامنا کرنا پڑا؟اب لبنانی نژاد امریکی اداکارہ کی ایک دوست نے اس حوالے سے کچھ ایسی باتیں بتا دی ہیں کہ سننے والے دنگ رہ جائیں۔

ڈیلی سٹار کے مطابق 29سالہ میا خلیفہ کی یہ دوست جینا لی ہے جس کی میا خلیفہ سے ملاقات اس وقت ہوئی جب میا نے فحش فلم انڈسٹری سے کنارہ کشی اختیار کی۔جینا لی خود بھی ایک ماڈل اور انفلوئنسر ہے۔ اس نے اپنے ایک حالیہ انٹرویو میں بتایا ہے کہ میا خلیفہ کو فحش فلم انڈسٹری میں کام کرنے کی وجہ سے ایسی خوفناک صورتحال کا سامنا کرنا پڑا تھا کہ جس کا تصور ہی کسی عورت کو خوفزدہ کر دے۔ وہ بازار میں کھانے پینے کی اشیاءخریدنے بھی نہیں جا سکتی تھی۔ وہ جہاں بھی جاتی تھی لوگ اسے برے سلوک کا سامنا کرنا پڑتا۔میگزین بسٹل سے گفتگو کرتے ہوئے جینا لی نے بتایا کہ 2017ءمیں میا خلیفہ اور میں ریپر فیوچر دیکھنے اکٹھی گئیں۔ وہاں مردوں کے ایک گروپ نے میا خلیفہ کو پہچان لیا اور اسے پریشان کرنا شروع کر دیا۔ وہ لوگ میا خلیفہ پر حملہ آور ہو گئے اور اسے گھسیٹ کر مجھ سے دور لیجانے کی کوشش کرنے لگے۔ ان سے جان چھڑانے کے لیے میا خلیفہ نے ایک شخص کو منہ پر گھونسہ دے مارا۔ اس طرح کے واقعات نے میا خلیفہ کو مکمل طور پر بدل کر رکھ دیا۔ وہ ہنسنے کھیلنے اور زندگی سے لطف اندوز ہونے والی نارمل لڑکی تھی جسے گھومنا پھرنا بہت پسند تھا۔ اب اس کی شخصیت اس کے بالکل برعکس ہو گئی ہے۔دوسری طرف25سالہ یاسمینہ خان غالباً واحدبنگالی نژاد برطانوی اداکارہ ہے جو بالغوں کی ویب سائٹ ’اونلی فینز‘ سے وابستہ ہے اور اس پر اپنی فحش ویڈیوز اور تصاویر پوسٹ کرکے ماہانہ لاکھوں کما رہی ہے۔ ڈیلی سٹار سے گفتگو کرتے ہوئے یاسمینہ خان نے بتایا ہے کہ وہ سیلز کی جاب کرتی تھی، جو اسے سخت ناپسند تھی۔

Categories
شوبز

وہ کونسی اداکارہ ہیں جن کو ملتے وقت مداح ان کے ہاتھ چوم کر آنکھوں پر رکھتے ہے؟؟؟

لاہور(ویب ڈیسک) جلد ہی رومانٹک کامیڈی فلم ’چکر‘ میں جلوے بکھیرنے والی اداکارہ نیلم منیر نے کہا ہے کہ ان کے مداح ہی ان کے لیے ایوارڈز کی اہمیت رکھتے ہیں، کیوں کہ وہ جب ان سے ملتے ہیں تو عقیدت میں ان کے ہاتھ چوم کر آنکھوں پر رکھتے ہیں۔

نیلم منیر نے حال میں جرمن نشریاتی ادارے ’ڈوئچے ویلے‘ (ڈی ڈبلیو اردو) کو دیے گئے انٹرویو میں بتایا کہ وہ عید الفطر پر ریلیز ہونے والی فلم ’چکر‘ میں ڈبل کردار ادا کرتی دکھائی دیں گی۔ انہوں نے کہا کہ وہ کافی عرصے بعد بڑے پردے پر دکھائی دیں گی، اس لیے وہ ڈبل کردار ادا کر رہی ہیں۔ ان کے مطابق ’چکر‘ میں شامل آئٹم سانگ فلم کی کہانی کے مطابق ہے، وہ غیر ضروری شامل نہیں کیا گیا اور یہ کہ اس گانے میں ڈانس کرنے والی تمام خواتین ہی ہیں۔ ایک سوال کے جواب میں نیلم منیر نے بتایا کہ وہ گزشتہ دو سال سے رمضان المبارک میں کام سے چھٹیاں لیتی ہیں، تاکہ وہ گھر میں عبادت کرنے سمیت اہل خانہ کے ساتھ وقت بھی گزاریں۔ نیلم منیر نے خاندان کے حوالے سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ان کے خاندان کی لڑکیوں کو سوشل میڈیا پر تصاویر لگانے کی اجازت تک نہیں۔ اداکارہ نے بتایا کہ ان کا تعلق پختون خاندان سے ہے اور ان کی بہنیں بھی سوشل میڈیا پر اپنی تصاویر تک شیئر نہیں کرتیں مگر انہیں کسی طرح اجازت مل گئی تھی اور ایسے ہی وہ شوبز میں آگئیں۔ ایک سوال کےجواب میں انہوں نے بتایا کہ انہیں بچپن سے ہی اداکاری کا شوق تھا اور ہیروئن بننا چاہتی تھیں، اب مداح ہی بتا سکتے ہیں کہ وہ ہیروئن بن گئی ہیں یا نہیں؟ اداکارہ کا کہنا تھا کہ وہ ہمیشہ سے ہی منفرد کردار ادا کرنا چاہتی ہیں اور اگر انہیں کردار کے لیے بوڑھی عورت بننا پڑے یا پھر لڑکا بننا پڑے تو بھی وہ گریز نہیں کریں گی۔ ایوارڈز میں نامزدگیوں کے باوجود شوز میں شرکت نہ کرنے کے سوال پر نیلم منیر نے کہا کہ دراصل ان کے مداح ہی ان کے لیے ایوارڈ کی اہمیت رکھتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ خواتین ان کی بڑی مداح ہیں اور وہ جب بھی ان کے ساتھ ملتی ہیں تو عقیدت میں ان کے ہاتھ چوم پر آنکھوں پر رکھ دیتی ہیں۔ خیال رہے کہ عید الفطر پر ان کی ریلیز ہونے والی فلم ’چکر‘ میں ان کے ہمراہ احسن خان، یاسر نواز، شمعون عباسی اور دیگر اداکار ایکشن میں دکھائی دیں گے۔ نیلم منیر کی یاسر نواز کے ہمراہ یہ دوسری فلم ہے اور ان کی فلم کا عید الفطر پر دیگر چار رومانٹک کامیڈی مصالحہ فلموں سے مقابلہ ہوگا۔

Categories
شوبز

وہ کونسی اداکارہ ہیں جو ہوٹل کے کمروں سے “جائے نماز”چرایا کرتی تھیں؟؟نام جان کر آپ بھی شدید حیران ہو نگے

لاہور(ویب ڈیسک) پاکستانی ڈرامہ انڈسٹری کی ابھرتی ہوئی اداکارہ در فشاں نے انکشاف کیا ہے کہ انہوں نے ایک مشہور ہوٹل سے جائے نماز چرائی تھی۔حال ہی میں درفشاں اور اداکار میکال ذوالفقار نے نجی ٹی وی چینل کے شو میں شرکت کی جس کی میزبان ندا یاسر تھیں۔

انٹرنیٹ پر ایک ویڈیو کلپ وائرل ہورہا ہے جس میں دوران شو درفشاں نے سوال و جواب کے ایک سیگمینٹ میں انکشاف کیا کہ انہوں نے ایک بار مشہور ہوٹل سے کافی نرم دکھنے والی جائے نماز چوری کی تھی۔دوسری جانب میکال نے ہنستے ہوئے درفشاں سے مخاطب ہوکر کہا کہ تمہیں جائے نماز چوری کرتے ہوئے شرم نہیں آئی، جس کا جواب دیتے ہوئے اداکارہ نے کہا کہ مجھے لگتا ہے کہ اللہ تعالیٰ شاید اس کا حساب بھی نہ لیں کیوں اس پر نماز ہی پڑھنی تھی۔میکال نے کہا کہ درفشاں دیکھنا یہ کلپ تمہارا انٹرنیٹ پر وائرل ہوجائے گا۔