سری لنکا میں موجود پاکستانی باؤلر سہیل تنویر کے حوالے سے تشویشناک اطلاعات موصول

کوالالامپور(ویب ڈیسک) پاکستان کے تجربہ کار فاسٹ باؤلر سہیل تنویر کورونا وائرس کا شکار ہو گئے ہیں جس کے بعد ان کی لنکا پریمیئر لیگ میں شرکت مشکوک ہو گئی ہے۔سہیل تنویر لنکا پریمیئر لیگ میں شرکت کے لیے سری لنکا میں موجود ہیں اور لیگ میں شرکت کے لیے سری لنکا پہنچنے کے بعد وائرس کا شکار ہونے والے دوسرے کھلاڑی ہیں۔

سہیل تنویر سے قبل کینیڈا کے بلے باز رویندرپال سنگھ بھی کورونا کا شکار ہو گئے تھے جنہیں کولمبو کنگز کی فرنچائز نے اپنے اسکواڈ کا حصہ بنایا تھا۔کینڈی ٹسکرز کی جانب سے منتخب کیے گئے سہیل تنویر کو لیگ کے بقیہ کھلاڑیوں اور آفیشلز سے علیحدہ ہوٹل میں آئسولیشن میں رہنے کی ہدایت کردی گئی ہے۔یہ مانا جا رہا ہے کہ سہیل تنویر کا ابھی تک کینڈی ٹسکرز کے کسی کھلاڑی یا آفیشل سے رابطہ نہیں ہوا اس لیے ٹیم شیڈول کے مطابق اپنی تیاریاں جاری رکھے گے۔سہیل تنویر کو وہاب ریاض اور لیام پلنکٹ کی جگہ اسکواڈ میں شامل کیا گیا تھا جہاں اوورسیز کھلاڑیوں کے طور پر منتخب یہ دونوں کھلاڑی ٹورنامنٹ سے دستبردار ہو گئے تھے۔ابھی تک سہیل تنویر لیگ سے باہر نہیں ہوئے اور ان کی لیگ میں شرکت کا انحصار وائرس سے صحتیابی کے ساتھ ساتھ لیگ انتظامیہ کے حتمی فیصلے پر ہے۔واضح رہے کہ لنکا پریمیئر لیگ کو غیرملکی اور معروف کھلاڑیوں کی دستیابی کے سلسلے میں شدید دشواریوں کا سامنا ہے کیونکہ ہر گزرتے دن کے ساتھ عالمی شہرت یافتہ کھلاڑی مختلف وجوہات کے سبب لیگ سے دستبردار ہو رہے ہیں۔پہلے وہاب ریاض اور لیام پلنکٹ نے لیگ میں شرکت سے معذرت کر لی جس کے بعد گزشتہ روز کرس گیل اور سری لنکن فاسٹ باؤلر لاستھ ملنگا نے بھی ایونٹ میں شرکت سے معذوری ظاہر کردی تھی۔لنکا پریمیئر لیگ کا انعقاد 26 نومبر سے ہو گا اور منتظمین کا کہنا ہے کہ چاہے کچھ بھی ہو جائے وہ شیڈول کے مطابق لیگ کا انعقاد ضرور کریں گے