ورلڈکپ 2011ءکا فائنل فکس ہونے کا معاملہ:سابق سری لنکن کپتان کمار اسنگاکارا سے کتنے گھنٹے تفتیش کی گئی؟ جان کر آپ بھی حیران رہ جائیں

کولمبو (ویب ڈیسک ) 2011 ورلڈ کپ فائنل کی تحقیقات کے دوران اس وقت کے کپتان کمارا سنگاکارا آج آئی سی سی ٹربیونل کے سامنے پیش ہوئے جن سے مختلف نوعیت کے سوال پوچھے گئے یہ ثابت کرنے کے لیے کہ فائنل فکس تھا شفاف کھیل کھیلا گیا اس کام کے لیے انٹرنیشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی) کی ٹیم کی جانب سے


سابق سری لنکن کپتان کمار سنگاکارا سے 10گھنٹے تک تفتیش کئے جانے کا انکشاف ہوا ہے۔تفصیلات کے مطابق آئی سی سی ورلڈکپ 2011ءکے فائنل میں سری لنکا کی قیادت کرنے والے 42 سالہ سنگاکارا کو پولیس کے سپیشل انویسٹی گیشن یونٹ کو تفتیش کیلئے طلب کیا گیا جہاں ممبئی کے وانکھڑے سٹیڈیم میں سری لنکا کو بھارت کے ہاتھوں شکست ہوئی تھی۔خبر رساں ایجنسی ’اے ایف پی‘ کے مطابق کمار سنگاکارا سے 10 گھنٹے تک تفتیش کی گئی جس دوران ان سے مختلف سوالات کئے گئے اور پولیس کے مطابق انہوں نے تمام سوالات کے تسلی بخش جواب دیا جبکہ پولیس پہلے تحقیقات کو مطمئن قرار دیتے ہوئے اپنا فیصلہ سنا چکی ہے کہ میچ فکسنگ کے کوئی شواہد نہیں ملے۔