فٹ بال میدان کی بڑی شخصیت بھی کورونا وائرس کا شکار۔۔۔ ٹیسٹ مثبت آتے ہی انتطامیہ کی دوریں لگ گئیں

لندن (ویب ڈیسک) معروف انگلش فٹ بال کلب لیور پول کے سابق منیجر کینی ڈلگیش بھی کورونا وائرس کا شکار ہو گئے ہیں جنہیں ہسپتال داخل کر کے اینٹی بائیوٹکس دینے کا سلسلہ شروع کر دیا گیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق فٹ بال کے سابق کھلاڑی کینی ڈلگلش میں کورونا ٹیسٹ مثبت آیا ہے

لیکن ابھی تک ان میں اس کی علامات ظاہر نہیں ہوئی تھیں۔ ٹیسٹ مثبت آنے کے بعد انہیں ہسپتال داخل کر کے اینٹی بائیوٹکس دینا شروع کر دی گئی ہیں جبکہ ہسپتال ذرائع کے مطابق ان کی حالت خطرے سے باہر ہے۔کینی ڈلگش نے ایک بیان میں کہا کہ وہ اس موقع پر این ایچ ایس کے شاندار عملے کا شکریہ ادا کنا چاہتے ہیں جن کی لگن، بہادری اور قربانی اس غیر معمولی وقت پر قوم پر مرکوز ہے، یہ بہت ہی مشکل وقت ہے ، اس سارے عرصے میں میرے خاندان کی پرائیویسی کا بھی خیال رکھا جائے۔واضح رہے کہ ڈلگلش نے سلیکٹک میں بطور کھلاڑی مجموعی طور پرانگلش لیگ کے چھ ٹائٹل اور تین یورپی کپ جیتے ہیں۔ وہ بہت سے متعدد ایوارڈز بھی حاصل کر چکے ہیں جن میں بیلن ڈی آر سلور ایوارڈ ، پی ایف اے پلیئرز آف دی ایئر اور ایف ڈبلیو اے فٹ بالر آف دی ایئر شامل ہیں۔دوسری جانب ایک خبر کے مطابق عالمی وبا کورونا وائرس کے باعث دوسری جنگ عظیم کے بعد پہلی مرتبہ رارجرز کپ کو منسوخ کردیا گیا۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق کینیڈین ٹینس حکام نے اس سال کے راجرز کپ کو منسوخ کرنے کا اعلان کردیا،راجرز کپ دوسری جنگ عظیم کے بعد پہلی مرتبہ منسوخ کیا گیا ہے۔ راجرز کپ7سے16 اگست تک مونٹیریال میں کھیلا جانا تھا، ایونٹ میں رافیل نڈال اور بیانکا اینڈ ریسکوکو اعزاز کا دفاع کرنا تھا، راجرزکپ ومبلڈن کے بعد دنیا کا دوسرا قدیم ترین ٹینس ٹورنامنٹ ہے۔واضح رہے کہ اے ٹی پی نے12جولائی تک تمام مقابلے پہلے ہی معطل کرنےکا اعلان کیاتھا۔