شاہد آفریدی نے بابراعظم کو کپتان بنانے کی مخالفت کر دی، لالا کیا چاہتے ہیں؟ تجویز بھی دے دی

کراچی (ویب ڈیسک) سابق قومی کھلاڑی اور کپتان شاہد آفریدی بابر اعظم کو ٹی ٹوئنٹی ٹیم کے کپتان بنانے جانے پر فافی ناخوش دکھائے دیئے۔ سابق کپتان شاہد آفریدی نے بابر اعظم کو کپتانے بنائے جانے کے فیصلے کی مخالفت کر دی، انہوں نے کہا کہ بابر ابھی نوجوان کھلاڑی ہے، کپتانی کوئی آسان کام نہیں۔

تفصیلات کے مطابق شاہد آفریدی نے بابر اعظم کی کپتانی کے حوالے سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ورلڈ کپ 2020 کو مدنظر رکھتے ہوئے اگر شعیب ملک کو کپتان بنایا جاتا تو وہ زیادہ بہتر فیصلہ ہوتا کیونکہ شعیب ملک تجربہ کار کھلاڑی ہیں اور دنیا بھر میں ٹی ٹوئنٹی لیگز کھیل چکے ہیں ۔ سابق کپتان شاہد آفریدی نے سرفراز احمد کی برطرفی کے فیصلے پر ردعمل دیتے ہوئے اسے خوش آئندہ قرار دیا ہے ۔ شاہد آفریدی ٹیسٹ ٹیم کے کپتان اظہر علی کیلئے نیک خواہشات کا اظہار کیا ہے، جبکہ ٹی ٹوئنٹی ٹیم کیلئے بابر اعظم کو کپتان بنانے کے فیصلے کی مخالفت کی ہے. شاہد آفریدی کہتے ہیں کہ ورلڈ کپ 2020 کو مدنظر رکھتے ہوئے اگر شعیب ملک کو کپتان بنایا جاتا تو وہ زیادہ بہتر فیصلہ ہوتا کیونکہ شعیب کا تجربہ کافی زیادہ ہے۔ بابر اعظم مستقل مزاجی سے کارکردگی دکھارہے ہیں اور وہ ٹیم میں ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتے ہیں تاہم اس وقت وہ کپتانی کیلئے تیار نہیں ہیں۔ واضح رہے کہ مایہ ناز کرکٹراظہر علی کو ٹیسٹ چمپئن شپ کے سیزن 20-2019 کے لیے قومی ٹیسٹ کرکٹ ٹیم جبکہ بابراعظم کو آسٹریلیا میں ہونے والے ٹی ٹونٹی ورلڈکپ 2020 تک قومی ٹی ٹونٹی کرکٹ ٹیم کا کپتان مقرر کیا گیا ہے، سرفراز احمد کو دونوں فارمیٹ میں ناقص کارکردگی کی بنیاد پر کپتانی سے ہٹایا گیا۔