10 سال بعد انٹرنیشنل میچ میں رکاوٹ ۔۔۔۔ ابھی تک میچ شروع کیوں نہیں ہو سکا؟ شائقین کے دل توڑدینے والی خبر

کر اچی ( ویب ڈیسک )پاکستان نے سری لنکا کے خلاف تین روزہ ون ڈے انٹرنیشنل کی سیریز کے پہلے میچ کا ٹاس بارش کی وجہ سے مؤخر کردیا گیا ہے۔ملک میں تقریباً 10 سال بعد انٹرنیشنل کرکٹ کی بحالی کا آغاز کراچی کے نیشنل اسٹیڈیم سے ہونے جارہا ہے جہاں مہمان ٹیم سری لنکا

اور پاکستان کی ٹیمیں ایک دوسرے کے مدمقابل ہیں۔میچ سے قبل کراچی میں محکمہ موسمیات کی جانب سے بارش کی پیش گوئی درست ثابت ہوئی ہے جس کی وجہ سے پہلے ون ڈے کا ٹاس مؤخر کر دیا گیا ہے۔گراؤنڈ اسٹاف کی جانب سے پچ کو کورز سے ڈھانپ دیا گیا ہے اور گراونڈ میں تیز بارش کا سلسلہ جاری ہے۔ذرائع کے مطابق پاکستان اور سری لنکا کی ٹیمیں بارش سے قبل گراؤنڈ پہنچ گئی تھیں اور ابھی ڈریسنگ روم میں موجود ہیں۔اس سے قبل سری لنکن ٹیم کے کپتان تھريما نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے پاکستان میں سری لنکن ٹیم کے لیے کیے گئے سيکيورٹی انتظامات کی تعریف کی اور خوش نظر آئے۔دوسری جانب پہلے ون ڈے میچ کے لیے کمنٹری پینل وسیم اکرم، رميز راجا اور بازید خان کے ساتھ ایلکن ولکنز اور روشان ابے سنگھے بھی اسٹیڈیم میں موجود ہوں گے اور ميچ پر تبصرہ کریں گے۔ويسٹ انڈیز سے تعلق رکھنے والے کرکٹ لیجنڈ مائیکل ہولڈنگ بھی سيريز کے دوران کراچی آئیں گے۔قومی ٹیم کے پليئرز بھی ہوم گراؤنڈ پر ہوم کراؤڈ کے سامنے پرفارم کرنے کے لیے تیار ہیں ۔ د وسری جانب ایک اورخبر کے مطابقسری لنکا ون ڈے کرکٹ ٹیم کے کپتان لاہیرو تھریمانے کا کہنا ہے کہ پاکستان میں انہیں فرسٹ کلاس سیکیورٹی ملی ہے، جو کھلاڑی نہیں آئے و ہ ان کا ذاتی فیصلہ تھا اور ہم سب کو اس کا احترام کرنا چاہیے۔کراچی میں پاکستان کیخلاف ون ڈے سیریز سے قبل پریس کانفرنس میں سری لنکن قائد لاہیرو تھریمانے کا کہنا تھا کہ کھلاڑی یہاں بھرپور انداز میں انجوائے کررہے ہیں ، ہوٹل سے باہر جانے کی اجازت نہ ہونے کی وجہ سے ابتدائی دنوں میں انڈور گیمز کو انجوائے کیا۔تھریمانے کا کہنا تھا کہ پاکستان میں سیکیورٹی کے بہترین انتظامات ہیں اور اب تک ان کا تجربہ بہت اچھا رہا ہے۔ انہیں جب سیکیورٹی پلان بتایا گیا تھا تو اس وقت ہی وہ مطمئن ہوگئے تھے۔