پاکستان ایک اور بڑے سانحے سے بال بال بچ گیا۔۔۔ مکی آرتھر کی خودکشی کے حوالے سے آنے والی خبر نے پاکستانیوں کو جھنجھوڑ کر رکھ دیا

لندن (نیوز ڈیسک ) پاکستان کرکٹ ٹیم کے ہیڈ کوچ مکی آرتھر نے کہا ہے کہ میں پچھلی اتوار کو خودکشی کرنا چاہتا تھا، صرف ایک کارکردگی آپ کو زیرو بنا دیتی ہے اور ایک کارکردگی ہی آپ کو ہیرو بھی بنا دیتی ہے۔تفصیلات کے مطابق پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے مکی آرتھر

نے کہا کہ ورلڈکپ میں سب کچھ بہت جلدی ہوا، آپ ایک میچ ہارے اور پھر دوسرا میچ ہارے، یہ ورلڈکپ ہے، میڈیا سکروٹنی کے ساتھ لوگوں کی توقعات بھی ہوتی ہیں اور پھر ٹورنامنٹ میں آپ اچانک تقریباً دفاعی پوزیشن پر چلے جائیں، میں تو پچھلی اتوار کو خودکشی کرنا چاہتا تھا۔انہوں نے کہا کہ ہم سب ایک دوسرے سے یہی کہہ رہے تھے کہ صرف ایک اچھی کارکردگی ہمارے حوصلے بڑھا سکتی ہے اور جنوبی افریقہ کیخلاف میچ میں جس طرح فخر زمان اور امام الحق نے آغاز فراہم کیا اور پھر حارث سہیل نے بیٹنگ کی، باﺅلرز نے بھی اچھی کارکردگی دکھائی اور ہم جیت گئے۔انہوں نے کہا کہ صرف ایک کارکردگی آپ کو ہیروز سے زیرو بنا دیتی ہے اور صرف ایک کارکردگی ہی آپ کو پھر ہیرو بنا دیتی ہے اور لوگ آپ کی شکست کو بھول جاتے ہیں۔میچ میں کامیابی کے بعد کوچ مکی آرتھر نے پریس کانفرنس بھی کی، جس دورا ن ایک صحافی نے حارث سہیل کی اننگ سے متعلق سوال کرتے ہوئے کہا کہ ” حارث سہیل 30 ویں اوور میں آئے اور وہ 60 سے 70 منٹ وکٹ پر گزارنے کے بعد تھکے ہوئے نظر آئے اور آخری تین اوورز میں تین وکٹیں باقی ہونے کے باوجود صرف 20 رنز ہی بن پائے ؟“۔مکی آرتھر نے صحافی کا سوال سننے کے بعد شدید حیرت کا اظہار کیا اور کہا کہ ” آپ حارث کے بارے میں بات کر رہے ہیں ؟ اس نے آج 59 گیندوں پر 89 رنز کی اننگ کھیلی ، پلیئرز کے بارے میں منفی بات کیوں کرتے ہیں ، آج میں نے اب تک کی سب سے بہترین اننگ دیکھی ہے ، برائے مہربانی مثبت رویہ اختیار کریں۔“اس کے علاوہ کوچ مکی آرتھر نے حارث سہیل کی اننگ کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ اس نے بہت اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کیا ، میں سمجھتاہوں کہ وہ ہمارے ٹاپ تھری بلے بازوں میں سے ایک ہیں۔ حارث نے اس کے علاوہ اپنی فٹنس اور فیلڈنگ پر بہت زیادہ توجہ دی ہے اور بہتری لائے ہیں اور آج انہیں اس کا صلہ بھی مل گیا ہے۔