You are here
Home > اسپشیل اسٹوریز > تاریخی وا قعات > اللہ پاک نے حضرت عزیز علیہ السلام پر 100 سال تک نیند طاری رکھی،جب وہ بیدار ہوکر گھر آئے تو پھر کیا ہوا ؟ پڑھیے ایک حیران کن واقعہ

اللہ پاک نے حضرت عزیز علیہ السلام پر 100 سال تک نیند طاری رکھی،جب وہ بیدار ہوکر گھر آئے تو پھر کیا ہوا ؟ پڑھیے ایک حیران کن واقعہ

حضرت عزیز ؑ کو اللہ پاک نے سو سال تک گہری نیند میں رکھا لیکن جب وہ اپنے گھر واپس گئے تو ایک بزرگ عورت ایک کونے میں بیٹھی ہوئی تھی اور گھر کی حالت بالکل بدل چکی تھی ۔اس بوڑھی عورت کی عمر 120سال تھی اورجب حضرت عزیز ؑگھر سے نکلے تھے

تو یہ بزرگ عورت20سال کی اور گھر کی ملازمہ تھی۔حضرت عزیز ؑ نےاس عورت کو پکارا اور دریافت کیا کہ یہ عزیزکاہی گھر ہےتو اس بوڑھی عورت نے کہا کہ ہاں پر ایک عرصہ ہو گیا کہ عزیز ؑ کا کسی نے نام نہیں لیااورلوگ تو اسے بھول چکے ہیں ۔حضرت عزیز ؑ نے کہا میں عزیزؑ ہوں۔اللہ تعالیٰ نے سوسال تک مجھ پر موت طاری رکھی اور پھر مجھے دوبارہ زندگی عطا کی تو وہ بوڑھی عورت بولی سبحان اللہ!عزیز ؑکوتوگئےسو سال ہوچکے ہیں۔اس بوڑھی عورت نے کہا کہ اگر تم کہ اگر تم عزیز ؑ ہو تو میرے لئے دعا کروکیونکہ عزیز ؑ کی دعا قبول ہوتی تھی اور بیماریوں کو شفائ مل جاتی تھی۔دعا کرو کہ میری بینائی واپس آجائےتاکہ میں تمہیں دیکھ کے پہچان سکوں۔حضرت عزیز ؑ نے اللہ تعالیٰ کی بارگاہ میں دعاکی اوراس کی آنکھوں پر ہاتھ پھیرا جس کےبعد بوڑھی عورت کی بینائ واپس لوٹ آئی۔اس عورت نے جب دیکھا تو پکار اٹھی واقعی آپ عزیز ؑ ہی ہیں۔ (حضرت عزیز ؑ کو اللہ پاک نے سو سال تک گہری نیند میں رکھا لیکن جب وہ اپنے گھر واپس گئے تو ایک بزرگ عورت ایک کونے میں بیٹھی ہوئی تھی اور گھر کی حالت بالکل بدل چکی تھی ۔اس بوڑھی عورت کی عمر 120سال تھی اور جب حضرت عزیز ؑگھر سے نکلے تھے)


Top