You are here
Home > اسپشیل اسٹوریز > تاریخی وا قعات > جعلی خبروں کا آغاز کب اور کیسے ہوا؟ پڑھیے ایک تاریخی اور معلوماتی واقعہ

جعلی خبروں کا آغاز کب اور کیسے ہوا؟ پڑھیے ایک تاریخی اور معلوماتی واقعہ

لاہور(ویب ڈیسک)ذرائع ابلاغ جہاں ہمارے لیے نت نئی معلومات کا ذریعہ ہیں و ہیں یہ ذرائع ابلا غ یعنی اخبار، ریڈیو اور سو شل میڈیا بہت سی جعلی معلو مات کا ذریعہ بنتے ہیں۔سیا ست سے لے کر کھیل، شوبز ،معاشیات کو ئی بھی شعبہ جعلی خبرکا شکار ہو سکتا ہے۔ جعلی خبر کسی

یہ بھی پڑھیں:بڑا انکشاف : اس معروف ٹھیکیدار کے کارناموں کا تذکرہ جو شہباز شریف کی گڈگورننس کو چونا لگانے کے بعد اس وقت انصافیوں کی تبدیلی کو ٹیکا لگانے کے چکروں میں خیبر پختونخوا میں ڈیرے لگائے ہوئے ہے

بھی چیز کے بارے میں جھوٹ اور پراپیگنڈہ پر مبنی خبر کو کہتے ہیں جو اخبار، ریڈیو ،ٹیلی ویژ ن اور آ ج کل سو شل میڈیا کے ذر یعے پھیلائی جاتی ہیں۔جعلی خبر کوئی نئی چیز نہیں بلکہ صد یو ں سے مو جو د ہے اور ہمیں تا ریخ میں اس کی بہت سی مثا لیں ملتی ہیں۔ما ہرآثا ر قد یمہ کے مطابق جعلی خبر کا وجو د 3ہزار سال پہلے بھی تھا۔ ریمسس دی گریٹ جو مصر کے19ویںشاہی خاندان کا تیسرا بادشاہ تھا اسے ریمسس دی گریٹ اس لیے کہا جاتا ہے کہ تاریخ دانوں کے مطابق اس نے اپنے دور میں بہت سی فوجی مہمات میں حصہ لیا۔لیکن آثار قدیمہ کی نئی تحقیقات کے مطا بق ریمسس ایک عظیم فا تح کی بجائے جعلی خبروں کا ماہر تھاجو کہ میگز ین اینٹی کوٹی میں پبلش کی گئی ہیں۔نیکی نیلسن جو کہ یو نیو رسٹی آف ما نچسٹر میں ما ہر آثار قدیمہ ہیں کی نئی دریافت کے مطا بق

لیٹ برونز ایج میں زاویت او مل رخم جو کہ مصر کا قصبہ ہے اس میں رہنے والے قدیم مصر ی لوگ اپنے پڑوسی ملک لیبیا کے ساتھ پرامن زندگی گزارتے تھے ۔یہ دریا فت اس چیز کی تر دید کرتی ہے کہ ریمسس ایک عظیم جنگجو تھا ۔ قدیم شواہد کے مطا بق زاویت او مل رخم میں رہنے والوں کا نہ صرف تجارت بلکہ کھیتی باڑی کے طور طریقے سیکھنے کے لیے بھی اپنے پڑوسیوں یعنی لیبینز پر انحصار تھا۔ماہر آثار قدیمہ کے مطا بق ریمسس کی بہادری کا دعویٰ کرتے مشہور یا دگاری مجسمے کچھ بھی نہیں بلکہ پر اپیگنڈہ ہیں۔ ریمسس کے سپا ہی لیبیا کے لوگوں کے ساتھ پر امن ز ندگی گزار رہے تھے۔ اینٹی کوٹی میں پبلش سٹڈی کے مطا بق مصر یوں کے قدیم طا قتور دشمن ہٹیٹیز نے جنگ میں ریمسس کے ساتھ چال چلی جس کے نتیجے میں اس کی فوج تقسیم ہو گئی اس کے بعد نہ صرف اس نے مشکل سے اپنی جان بچائی بلکہ جدید دور کے شام کا کچھ حصہ بھی گنوا دیا جہاں اس کی حکو مت تھی۔

یہ بھی پڑھیں:کل لاہور کی ایک سیشن عدالت میں سابق وزیر اور نامور سیاستدان کی دو بیویوں نے کیا ہنگامہ کھڑا کیے رکھا اور ایک دوسرے کو گالیاں کیوں دیتی رہیں ؟ خبر آ گئی


Top