تم جیسی خوبصورت عورت میں مجھے کوئی دلچسپی نہیں ۔۔۔۔ 400 نکاح کرنے والے ایک صحابی نے اپنی سب سے خوبصورت بیوی کو یہ بات کیوں کہی ؟ ایک ایمان افروز واقعہ

(اللہ والوں کے قصے ۔۔۔۔۔۔ نصیر الدین حید ر) ۔۔۔۔ حضرت عبداللہ خفیفؒ نے وقتاً فوقتاً دو دو تین تین نکاح کرکے چار سو نکاح کیے۔ کیونکہ عورتیں بکثرت آپ سے نکاح کرنے کی متمنی رہا کرتی تھیں لیکن ایک بیوی جو کسی وزیر کی بیٹی تھی مکمل چالیس سال تک آپ کے نکاح میں رہی

اور جب وہ تمام عورتیں جو آپ کے نکاح میں رہ چکی تھیں، ایک دن اکٹھی ہوئیں تو ایک نے دوسری سے پوچھا ’’کیا شیخ خلوت میں کبھی تمہارے ساتھ ہم بستر ہوئے۔‘‘سب نے متفقہ طور پر جواب دیا ’’کبھی نہیں۔‘‘جب وزیر زادی سے معلوم کیا گیا تو اس نے بتایا کہ جس دن شیخ میرے ہاں تشریف لاتے ہیں تو پہلے ہی سے مطلع کردیتے ہیں اور مَیں نفیس قسم کے کھانے تیار کرکے لباس و زیور سے آراستہ ہوجاتی ہوں۔ چنانچہ جب آپ پہلی مرتبہ میرے یہاں آئے اور مَیں نے جب کھانا آپ کے سامنے پیش کیا تو پہلے تو آپ کچھ دیر تک مجھے دیکھتے رہے پھر میرا ہاتھ اپنی بغل میں لے کر پیٹ اور سینے پر پھیرا۔اس وقت مَیں نے دیکھا کہ آپ کے شکم مبارک پر اٹھارہ گر ہیں پڑی ہوئی ہیں اور آپ نے فرمایا ’’یہ سب گر ہیں صبر کی ہیں کیونکہ تیری جیسی حسین صورت اور اس قدر نفیس کھانوں سے مجھے کوئی دلچسپی نہیں۔‘‘یہ فرماکر آپ تشریف لے گئے اور اس کے بعد مجھ میں کبھی یہ ہمت نہیں ہوئی کہ آپ سے کوئی سوال کرسکوں۔‘‘