You are here
Home > اسپشیل اسٹوریز > اسلامی واقعات > پاک فوج کے افسر اور باقی ممالک کے افسروں میں فرق

پاک فوج کے افسر اور باقی ممالک کے افسروں میں فرق

کسی بھی فوج میں آفیسرز کی تعداد سپاہیوں کے مقابلے میں بہت کم ہوتی ہے … کیوں کہ سالار ہمیشہ کم اور سپاہی بہت زیادہ ہوتے ہیں اور سالار یا آفیسر کا کام بس انہیں لڑوانا ہوتا ہے .. لڑنا نہیں ۔لیکن جناب پاک فوج دنیا کی وہ واحد فوج ہے ۔

جس کے لفٹین سے لے کر جرنیل تک کے آفیسرز اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کر چکے ہیںاگر ہم عام سپاہیوں کی کثیر تعداد اور انکی شہادتوں اور اسی طرف آفیسرز کی قلیل تعداد اور انکی شہادتوں کا جائزہ لیں تو ایک حیرت ناک حقیقت سامنے آتی ہے شہادتیں پیش کرنے میں سب تقریبا برابر ہی ہیں بلکہ شاید آفیسرز کی تعداد زیادہ ہے … اسکی وجہ ہماری فوج اور اسلامی لشکروں کا طرہ امتیاز ہے کہ جس میں سالار پیچھے رہ کر نہیں بلکہ ہمیشہ سب کے آگے رہ کر اپنے دستے کو لیڈ کرتا ہ ایک آفیسر کا کام صرف حکمت عملی , منصوبہ بندی اور لڑائی کے پینترے بنانا اور ان پہ عمل کروانا ہوتا ہے , یعنی سادہ الفاظ میں بس لڑوانا ہوتا ہےمگر الحمداللہ ہم اپنے تاریخی کردار و شجاعت کی وجہ سے سینکڑوں ہزاروں قیمتی سپاہی, لفٹین , کپتان , میجر , برگیڈئیر اور لفٹیننٹ جنرل تک کی شہادتیں پیش کر چکے ہیں کیوں کہ پاک فوج وہ فوج ہے جس میں ایک جنریل بھی خود کو سپاہی ہی سمجھتا ہےسب کچھ جاننے کے باوجود بغض میں یہ کہنا کہ سپاہی ہی لڑتا ہے باقی افسر آرام کرتے ہیں اس بات کی کھلی نشانی ہے کہ آپ دماغی اور منہ کی بدترین بواسیر کا شکار ہیں اور اس کا کوئی علاج نہیں ….


Top