اچھا تو اس لیے بھاگ بھاگ کر ڈیوٹی پر جاتی تھی ۔۔۔۔ ایک خاتون پولیس کانسٹیبل کی رنگ رلیوں کی خاطر دلجمعی سے ڈیوٹی کرنے کے پیچھے چھپی اصل کہانی سامنے آ گئی

نئی دہلی (ویب ڈیسک) کہتے ہیں چوری کبھی نہ کبھی ضرور پکڑی جاتی ہے ، کچھ ایسا ہی ایک پولیس کانسٹیبل کے ساتھ ہوا جسکی بیوی بھی بدقسمتی سے پولیس والی تھی ، بھارت سے آنیوالی ایک دلچسپ اور سبق آموز خبر کے مطابق ریاست اتر پردیش میں نوچندی میلے کے دوران ایک خاتون کانسٹیبل نے

اپنے سپاہی شوہر کو اپنی معشوقہ لیڈی کانسٹیبل کے ساتھ پکڑ لیا جس کے بعد ہنگامہ برپا ہوگیا۔ دونوں خواتین سپاہی ایک دوسرے سے گتھم گتھا ہوگئیں اور لاٹھیوں کا بھرپور استعمال کیا لیکن جس کی وجہ سے یہ ہنگامہ ہوا تھا وہ سپاہی موقع دیکھتے ہی وہاں سے بھاگ نکلا۔ پولیس کے مطابق نوئیڈا میں تعینات سپاہی کا اسی تھانے میں تعینات ایک خاتون سپاہی کے ساتھ معاشقہ چل رہا تھا۔ سپاہی شادی شدہ ہے اور اس کی بیوی بھی سپاہی ہے جو بادل پور میں تعینات ہے۔ سپاہی نے اپنی اور معشوقہ لیڈی کانسٹیبل کی ڈیوٹی میرٹھ کے نوچندی میلے میں لگوا لی۔ دونوں سپاہی نوچندی میلے میں ڈیوٹی پر تھے۔ جمعرات کو سپاہی کی بیوی کو اس کی خبر ہوگئی اور وہ بھی نوچندی میلے میں پہنچ گئی۔ نوچندی میلے میں مرد سپاہی اپنی معشوقہ کو لے کر بیٹھا ہوا تھا کہ اس کی بیوی اوپر سے آگئی اور مار پیٹ شروع کردی۔ دونوں خواتین کانسٹیبلز کے ہاتھ میں ڈنڈے تھے اور انہوں نے تقریباً 20 منٹ تک ایک دوسرے کی ٹھکائی کی جبکہ اس دوران موقع کا فائدہ اٹھاتے ہوئے مرد سپاہی وہاں سے فرار ہونے میں کامیاب ہوگیا۔ معشوقہ کانسٹیبل نے نوچندی تھانے میں مقدمے کی درخواست دی تو پولیس نے اندراج مقد مہ سے انکار کردیا جس پر اس نے ایس پی کو فون کرکے خودکشی کی دھمکی دی تو بیوی کانسٹیبل کے خلاف مقدمہ درج کرلیا گیا۔ دوسری جانب بیوی کانسٹیبل بھی ایس ایس پی کے دفتر پہنچ گئی اور معشوقہ کانسٹیبل کے خلاف مقدمہ درج کرادیا۔ بیوی نے معشوقہ پر الزام عائد کیا کہ وہ جان بوجھ کر اس کے شوہر کے ساتھ ڈیوٹی لگواتی ہے، اس نے ہماری زندگی برباد کردی ہے۔