“یہ بندی صرف توجہ چاہتی ہے۔۔۔۔” حمزہ علی عباسی نے ریحام خان کی داڑھی والی تصویر پر ایسی تاریخی چھترول کر دی کہ وہ کہیں منہ دکھانے کے لائق نہ رہیں

اسلام آباد (ویب ڈیسک)دو روز قبل پی ٹی آئی چئیرمین عمران خان کی دوسری سابقہ اہلیہ ریحام خان نے مائیکروبلاگنگ ویب سائٹ ٹویٹر پر اپنے پیغام میں ایک تصویر پوسٹ کی ۔ اس تصویر میں ریحام خانکے چہرے پر داڑھی بھی بنی ہوئی تھی ۔ ریحام خان نے کہا کہ کچھ

دیر قبل مجھے ایک جماعت میں شرکت کرنے کی پیشکش کی گئی، میں نے ان سے کہا کہ میں نقاب تو نہیں کر سکتی لیکن ہاں میں داڑھی ضرور رکھ سکتی ہوں۔اور یہ داڑھی مجھ پر اچھی بھی لگ رہی ہے۔ٹویٹر پر جاری کیے گئے دوسرے پیغام میں ریحام خان نے پی ٹی آئی والوں کو مخاطب کیا اور کہا کہ میں اپنی کتاب کا سرورق ایڈٹ کروانے کے لیے کسی کی تلاش میں ہوں، کیا آپ لوگ میری مدد کرنا چاہتے ہیں؟اس تصویر کو دیکھ کر عالمی شہرت یافتہ اسلامی اسکالر مفتی اسماعیل مینک نے ریحام خان کو اپنے ٹویٹر پیغام میں جواب دیا کہ نہ کبھی پاکستان گیا نہ پاکستانی سیاست میں کوئی دلچسپی ہے، تاہم یہ ضرور جانتا ہوں کہ کیپ ٹاون میں موجود ایک لیزر کلینک شاید آپ کا مسئلہ حل کر دے۔مفتی مینک نے اپنے ایک اور پیغام میں کہا کہ میری توجہ اس ”میڈیکل مزاح” کی جانب اس لیے مبذول ہوئی کیونکہ بہن نے میری تصویر کے اُوپر ہی اپنا چہرہ لگایا ہے۔مجھے کچھ گھنٹے پہلے تک ان سے متعلق کچھ نہیں پتہ تھا، اسی لیے میں نے بھی اسی مزاح کے انداز میں رد عمل دے دیا۔مفتی مینک کے اس جواب پر پاکستانی اداکار

حمزہ علی عباسی نے اپنے ٹویٹر پیغام میں ریحام خان کو کرارا جواب دیا ، انہوں نے ریحام خان کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ آپ کو تھوڑی سی توجہ مل گئی ہے، اب آپ خوش ہیں؟ ٹویٹر پیغام میں حمزہ علی عباسی نے مفتی اسماعیل مینک سے معذرت کرتے ہوئے کہا کہ ہم پاکستانی معافی چاہتے ہیں کہ آپ کو لوگوں کی توجہ اپنی جانب مبذول کروانے کی شوقین خاتون کی وجہ سے شرمندگی ہوئی، انہوں نے کہا کہ اس خاتون کا تذکرہ کبھی کبھی میڈیا پر صرف اس لیے ہو جاتا ہے کیونکہ یہ خاتون عمران خان کی سابقہ اہلیہ ہے۔یاد رہے کہ ٹویٹر پیغام پر ریحام خان کی فرضی داڑھی والی تصویر دیکھ کر ٹویٹر صارفین نے نہ بخشا اور سوشل میڈیا پر ریحام خان کا مذاق اُڑانا شروع کر دیا۔ ایک صارف نے سانپ کی تصویر لگائی اور لکھا کہ اپنی کتاب کا سرورق یہ رکھ لیں۔ایک صارف نے ریحام خان کے ماضی کی ایک تصویر شئیر کی جس میں وہ مغربی لباس زیب تن کیے ہوئے ہیں اور کہا کہ اس تصویر پر حجاب لگا کر کتاب کا سرورق بنا لیں,یہ سرووق آپ کی شخصیت کی بہترین انداز میں عکاسی کرے گا۔ایک اور صارف

نے کسی عمر رسیدہ عورت کی تصویر کو فوٹو شاپ کیا اور کہا کہ کتاب کا سرورق یہ ہونا چاہئیے۔ایک اور صارف نے تو ریحام خان کی تاریخی بے عزتی کی اور کہا کہ اپنا کور پیج تبدیل کرنے سے پہلے یہ ہے کہ آپ اپنا اندر تبدیل کریں۔ کیونکہ اندر کی گندگی نہ داڑھی سے چھپتی ہے اور نہ پردے سے۔یاد رہے کہ ریحام خان اپنے ٹویٹر اکاؤنٹ پر تمسخرانہ پوسٹ کرتی رہتی ہیں ، قبل ازیں پی ٹی آئی چئیرمین عمران خان کی دوسری سابقہ اہلیہ ریحام خان کی نظر سے حمزہ علی عباسی پر بنی مزاحیہ تصویر گزری تو وہ اس پر تبصرہ کیے بغیر نہیں رہ سکی تھیں۔اپنے ٹویٹر پیغام میں ریحام خان نے مضحکہ خیز انداز میں حمزہ علی عباسی کو خوشخبری بھی سنا دی۔ ریحام خان نے اپنے ٹویٹر پیغام میں کہا کہ اگر پی ٹی آئی نے کوئی نیا چہرہ ڈھونڈ لیا ہے تو کوئی بات نہیں، میں نے اپنی نئی فلم میں حمزہ علی عباسی کے لیے ایک نیا کردار لکھا ہے۔ ساتھ ہی انہوں نے ہیش ٹیگ میں ”میں ہوں نا” بھی تحریر کیا۔ریحام خان کے اس مزاحیہ تبصرے سے صارفین بھی خوب محظوظ ہوئے اور ریحام خان کی حس مزاح کی خوب تعریف کی۔(ذ،ک)