مسجد وزیر خان میں گانے کی شوٹنگ کے واقعہ کا ڈراپ سین۔۔۔ کس کو ذمہ دار قرار دے دیا گیا؟ تازہ ترین خبر

لاہور (ویب ڈیسک) مسجد وزیرخان میں گانے کی عکسبندی کے معاملے پر انکوائری مکمل، مینجر اشتیاق احمد سمیت تین ملازمین کو نوکری سے فارغ کرنے کا فیصلہ کر لیا گیا۔ محکمہ اوقاف ومذہبی امور کے زیرانتظام مسجد وزیر خان میں گانے کی عکسبندی کرانے کا سارا ملبہ محکمہ اوقاف کے

افسران و ملازمین پر ڈال دیا گیا ہے۔ ذرائع کے مطابق محکمانہ کارروائی میں مینجر سمیت تین ملازمین کو نوکری سے فارغ کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے، جن میں معطل ہونیوالے مینجر مسجد وزیر خان اشتیاق احمد، سینئر کلرک محمد ریاض اور جونیئر کلرک عمران شامل ہیں۔ انکوائری آفیسر ایڈیشنل سیکرٹری اطہر مسعود نے سفارشات مرتب کی ہیں، جس میں تینوں ملازمین کی جبری ریٹائرمنٹ کرنے کی سفارش کی گئی ہے۔ واضح رہے کہ مسجد وزیرخان میں گانے کی عکسبندی کرانے پر وزیراعلیٰ پنجاب نے نوٹس لیا تھا، جس کے بعد انکوائری کے دوران مسجد کا تقدس پامال ہونے کی وجہ سے ملازمین کو نوکری سے نکالنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔