مہیش بھٹ کی اصلیت منظر عام پر :

ممبئی (ویب ڈیسک)بولی وڈ اداکار سشانت سنگھ راجپوت کی موت کا معمہ تاحال حل نہیں ہوسکا جس میں ہر روز نئے انکشافات سامنے آرہے ہیں اور اب 2013 میں موت کو سینے سے لگانے والی بولی وڈ اداکارہ جیا خان کی والدہ نے فلم ساز مہیش بھٹ پر بڑے الزامات عائد کردیئے ہیں۔بھارتی چینل کو خصوصی انٹرویو

میں رابعہ خان نے فلم ساز مہیش بھٹ پر کئی سنگین الزامات عائد کردیے۔اداکارہ کی والدہ نے کہا کہ جیا کی آخری رسومات کے موقع پر مہیش بھٹ نے مجھے خاموش رہنے کے لیے کہا تھا، انہوں نے مزید کہا کہ فلم ساز نے کہا تھا کہ چپ رہو ورنہ تمہیں بھی ۔۔۔۔۔۔۔۔ ۔۔جیا خان کے ڈپریشن کا شکار ہونے سے متعلق رابعہ خان نے کہا کہ مہیش بھٹ کے علاوہ کس نے ایسا کہا؟ وہ میری بیٹی کے آخری رسومات پر آئے تھے اور کہا تھا کہ جیا ڈپریسڈ تھی۔انہوں نے مزید کہا کہ میں نے بتایا تھا کہ وہ کبھی ڈپریسڈ نہیں تھی جس پر مہیش بھٹ نے مجھے کہا تھا کہ تم چپ ہوجاؤ ورنہ تمہیں بھی زندگی سے محروم کر دیں گے ۔مہیش بھٹ سے متعلق انہوں نے مزید کہا کہ وہ بولی وڈ کا ماؤتھ پیس ہیں، وہ کچھ نہیں جانتے۔اس سے قبل رابعہ خان نے سوشل میڈیا پر ایک پوسٹ شیئر کی تھی جس میں انہوں نے سشانت سنگھ راجپوت کے کیس کی تفتیش سی بی آئی سے کرانے کا مطالبہ کیا تھا۔اپنی پوسٹ میں انہوں نے سشانت سنگھ راجپوت اور جیا خان کی موت کے درمیان پائی جانے والی مماثلت کو بھی بیان کیا تھا۔رابعہ خان نے کہا کہ سشانت سنگھ اور جیا دونوں کے ساتھیوں نے انہیں پیار کے جال میں پھنسایا، شادی کا وعدہ کیا، ان کا پیسہ لیا اپنے پیاروں سے دور رکھا اور جب ان کا کنٹرول کم ہونا شروع ہوا تو جان چھڑانے کے لیے انتہائی قدم اٹھا لیا ۔خیال رہے کہ جیا خان نے 2013 میں خود موت کو سینے سے لگا لیا تھا اور اپنے آخری خط میں سورج پنچولی پر زندگی خراب کرنے کا الزام عائد کیا تھا۔