آبادی میں اضافے کی بڑی وجہ غربت ہے: مولانا طارق جمیل

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک ) مولانا طارق جمیل نے اپنے گاؤں کا دلچسپ واقعہ سناتے ہوئے کہا ہے کہ میرے گاؤں میں ایک شخص کے گھر 10 بچے تھے میں نے اُسے کہا کہ اپنا آپریشن کروا دو، وہ کہتا تھا کہ میری بیوی نہیں مانتی۔تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ کی جانب

سے بڑھتی ہوئی آباد ی پر سیمینار کا انعقاد کیا گیا ہے ۔ جس میں وزیر اعظم عمران خان ، چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس ثاقب نثار سمیت کئی اہم شخصیات نے شرکت کی۔ سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے مولانا طارق جمیل کہنا تھا کہ میرے گاؤں میں ایک شخص کے گھر دس بچے ہو گئے، میں نے اسے کہا کہ اپنی بیوی کا آپریشن کروا دو ۔ اس شخص نے میری بات سن کر کہا کہ میری بیوی کہتی ہے کہ میں نہیں کروا سکتی ، تم ایسا کرو اپنا آپریشن کروا لو۔ مولانا طارق جمیل کی بات سنتے ہی پورا ہال قہقہوؤں سے گونج اُٹھا ۔
اس موقع پر مولانا طارق جمیل بیان دیا کہ اللہ تعالیٰ کے اتنے بڑے پراجیکٹ کو پیدا کرنے کا مقصد کیا ہے ؟ شادی کو اگر ایک سال پورا ہو جائے تو میاں بیوی پریشان ہو جاتے ہیں کہ بچہ پیدا نہیں ہورہا۔ اگر بچہ پیدا نہ ہو تو لڑکا حکیموں کے پاس چلا جاتا ہے جبکہ اللہ تعالیٰ کی جانب سے علم انسان کو آگاہی اور سوچنے سمجھنے کیلئے دیا گیا ہے ۔
مولانا طارق جمیل نے خطاب کے دوران کہا کہ گاؤں کے لوگ یہ سمجھتے ہیں کہ ان کے جتنے بچے ہونگے وہاں پر اتنے ہی ذریعہ معاش بڑھیں گے جبکہ آبادی میں اضافے کی بڑی وجہ غربت ہے ۔مولانا طارق جمیل کا کہنا تھا کہ اگر کوئی مدینہ جیسی ریاست قائم کرنا چاہتا ہے تو اس کے لیے حضرت ابراہیمّ کی دعا پر عمل کرنا ہوگا جس کے تین حصے ہیں۔