مقبول ترانے’’ دل دل پاکستان‘‘ کا تخلیق کار اس وقت کہاں اور کس حال میں ہے؟ جان کر آپ کو بھی دکھ ہو گا

لاہور (ویب ڈیسک)دل دل پاکستان وہ مقبول ملی نغمہ ہے جو دنیا بھر میں پسند کیا گیا۔ جنید جمشید کو اس نغمے نے شہرت کی بلندیوں تک پہنچایا مگر اس نغمے کے تخلیق کار و شاعر آج بھی غربت کے باعث کسمپرسی کی زندگی گزار رہے ہیں۔رپورٹ کے مطابق دل دل

پاکستان کا شمار پاکستان کے مقبول ترین نغمے کے طور پر ہوتا ہے اس کے گلوکار کا نام تو بچے بچے کو معلوم ہے مگر یہ خوبصورت بول کس کی تخلیق تھے،بہت کم لوگ جانتے ہیں۔ راولپنڈی کے علاقے ڈھوک رتہ میں علالت کے دن گزارتے نثار ناسکاس سدا بہار نغمے کے خالق ہیں۔نثار ناسک کی بینائی کیساتھ ساتھ یادداشت بھی جاتی رہی مگر یہ نغمہ انہیں آج بھی یاد ہے۔ انہیں پی ٹی وی کی جانب سے ایوارڈ تو کئی ملے لیکن شاید ہی کوئی ایوارڈ ان کی ادبی خدمات کا حق ادا کرسکے۔ نثارناسک کو پل بنا کرکئی لوگ مقبولیت کی منزل تک پہنچ گئے مگر انہیں انکا جائز مقام نہیں ملا جو ہمارے معاشرے کیلئے لمحہ فکریہ ہے۔دوسری جانب شہنشاہ قوال اور موسیقی کے بے تاج بادشاہ استاد نصرت فتح علی خان کو مداحوں سے بچھڑے 21 برس بیت گئے لیکن ان کی خوبصورت آواز کا جادو آج بھی دلوں پر راج کرتا ہے۔نصرت فتح علی خان نے 16 سال کی عمر میں صوفی قوالی کا رنگ اپنایا اور قوالی کے ساتھ غزلیں،کلاسیکل اور صوفی گیت بھی گائے۔ وہ ہارمونیم، طبلہ اور دیگر آلات بجانے کے فن سے بھی خوب آشنا تھے۔پاکستان، بھارت، برطانیہ سمیت دنیا کے مختلف

ممالک میں اپنے منفرد صوفی انداز سے سب کو اپنا گرویدہ بنانے والے استاد نصرت فتح علی خان نے اردو، پنجابی اور فارسی زبان میں قوالیاں اور غزلیں گائیں جنہیں بے حد سراہا گیا۔انہوں نے قوالیوں اور غزلوں سمیت ملی نغمے بھی گائے جن میں ’میرا پیغام پاکستان‘ سب سے زیادہ مقبول ہے۔شہنشاہ قوال نصرت فتح علی خان جگر اور گردے کی تکلیف کے باعث 16 اگست 1997 کو دنیائے فانی سے کوچ کرگئے لیکن ان کے گائے گئے گیت امر ہوگئے۔نصرت فتح علی خان نے متعدد قومی اور بین الاقوامی ایوارڈز حاصل کیے۔ اقوام متحدہ کی جانب سے انہیں میوزک پرائس بھی دیا گیا۔انہوں نے متعدد بھارتی فلموں کے گانوں میں بھی اپنی آواز کا جادو جگایا، خاص کر بالی وڈ کی مشہور فلم دھڑکن کا گانا ‘دولہے کا سہرا سہانا لگتا ہے’ کو تو بے حد پزیرائی ملی۔ان کی کئی قوالیوں اور گیتوں کو پاکستان و بھارت کے گلوکاروں نے اپنے اپنے انداز میں گایا ہے۔ویسے تو ان کی ہر قوالی، غزل اور گیت بے حد مقبول ہے لیکن ذیل میں ان کی چند مشہور قوالیوں اور گیتوں کے ساتھ انہیں خراج عقیدت پیش کیا جارہا ہے۔مزید نیشنل اور انٹرنیشنل خبروں کے لیے ہماری ویب سائٹ وزٹ کر سکتے ہیں۔(ذ،ک)