Categories
پا کستا ن

ثاقب نثار آڈیو لیک ،وہی ہو گیا جس کا ڈر تھا

اسلام آباد(ویب ڈیسک) اسلام آباد ہائیکورٹ میں سابق چیف جسٹس ثاقب نثار کی آڈیو ٹیپ اور عدلیہ پر دیگر الزامات کی تحقیقات کے لیے کمیشن بنانے کی درخواست دائر کردی گئی،جس میں سیکرٹری قانون اور چاروں محکمہ داخلہ کے سیکرٹریز کو فریق بنایا گیاہے۔ درخواست سندھ ہائیکورٹ بار کے صدر صلاح الدین احمد

اور ممبر جوڈیشل کمیشن سید حیدر امام رضوی نے دائر کی، درخواست میں مؤقف اختیار کیا گیا ہےکہ سابق چیف جسٹس سےمنسوب آڈیو ٹیپ منظر عام پر آئی ہے جس سےتاثر ملتا ہے کہ عدلیہ بیرونی قوتوں کے دباؤ میں ہے،اور ادارہ انہی کے دباؤ میں فیصلہ کرتا ہے ، عدلیہ کی آزادی کے تحفظ کے لیے آڈیوجعلی ہے یااصلی، تعین کرنا ضروری ہے۔درخواست میں کہا گیا ہےکہ آڈیو ٹیپ نے عدلیہ کے وقار کو نقصان پہنچایا ہے اور اس نے عدلیہ کی آزادی پر اہم نوعیت کے سوالات اٹھائے ہیں، آئینی عدالت ہونے کے ناطے عوام کا آزاد، غیر جانبدار عدلیہ پر اعتماد بحال کرنا ضروری ہے