You are here
Home > پا کستا ن > حکومت مہنگائی پر قابو پانے میں ناکام، منہگائی کی شرح کتنے فیصد بڑھ گئی ؟ عوام کی چیخیں نکال دینے والی تفصیلات

حکومت مہنگائی پر قابو پانے میں ناکام، منہگائی کی شرح کتنے فیصد بڑھ گئی ؟ عوام کی چیخیں نکال دینے والی تفصیلات

اسلام آباد (ویب ڈیسک) ملک میں منہگائی کی شرح بڑھ کر 14.95 فیصد ہوگئی، ادارہ شماریات کا کہنا ہے کہ حالیہ ہفتے منہگائی0.61 فیصد مزید اضافہ ہوا ہے، چینی، گوشت، دالیں، دودھ، دہی، انڈوں، صابن، چاول سمیت 22 اشیاء منہگی ہوگئیں، 5 اشیاء سستی اور 24 اشیاء کی قیمتوں میں استحکام رہا۔ تفصیلات کے مطابق ملک میں منہگائی بڑھ کر 14.95 فیصد ہوگئی۔

حالیہ ہفتہ منہگائی0.61 فیصد مزید بڑھ گئی ہے، ملک میں ساتویں ہفتے بھی منہگائی میں اضافے کا سلسلہ جاری ہے، اشیائے خوردونوش کی قیمتوں میں اضافہ منہگائی کا سبب بنا۔ ایک ہفتہ میں 22 اشیائے ضروریہ منہگی ہوئیں۔ جس کے تحت چکن 13 روپے 30 پیسے فی کلو منہگا ہونے سے اوسط فی کلو قیمت 263 روپے 58 پیسے ہوگئی۔ چینی 2 روپے 64 پیسے فی کلو مزید منہگی ہوئی جس کے بعد چینی کی اوسط فی کلو قیمت 96 روپے 68 پیسے ہوگئی ہے، مٹن کی اوسط قیمت 1001.57 اور بیف کی قیمت 477 روپے فی کلو ہوگئی ہے، بیف 92 پیسے اور مٹن 35 پیسے فی کلو منہگا ہوا۔

پیاز81 پیسے اور آلو ایک روپے 40 پیسے فی کلو، دال مونگ 37 پیسے اور دال چنا 34 پیسے فی کلو، دال ماش 3 روپے 64 پیسے، دال مسور ایک روپے37 پیسے فی کلومنہگی ہوئی، تازہ دودھ، دہی، انڈے، صابن، چاول کی قیمتیں بھی بڑھ گئی ہیں۔ ادارہ شماریات کی رپورٹ میں کہا گیا کہ ایک ہفتہ کے دوران ملک میں 5 اشیاء سستی ہوئیں۔ گڑ، ٹماٹر، آگ جلانے والی لکڑی کی قیمتوں میں بھی کمی رکارڈ کی گئی، لہسن 17 روپے 29 پیسے فی کلو سستا ہوا، حالیہ ہفتے میں آٹے کا 20 کلو کا تھیلا 8 روپے 4 پیسے سستا ہوا۔ اسی طرح ادارہ شماریات کی رپورٹ میں کہا گیا کہ حالیہ ہفتہ 24 اشیاء کی قیمتوں میں استحکام رہا۔ دوسری جانب مہنگائی کے باعث عوام شدید پریشانی میں مبتلا ہیں عوام کی قوت خرید بھی ختم ہوتی جارہی ہے۔


Top