You are here
Home > پا کستا ن > یہ چیز میرے عزیز۔۔۔!!!لاہور انتظامیہ کی قبضہ مافیا کیخلاف کارووائیاں جاری ، کتنی کروڑروپے سے زائد مالیت کی زمین واگزار کروا لی؟ تازہ ترین خبر

یہ چیز میرے عزیز۔۔۔!!!لاہور انتظامیہ کی قبضہ مافیا کیخلاف کارووائیاں جاری ، کتنی کروڑروپے سے زائد مالیت کی زمین واگزار کروا لی؟ تازہ ترین خبر

لاہور (ویب  ڈیسک) لاہور انتظامیہ کی قبضہ مافیا کیخلاف کارروائیاں جاری ہیں، انتظامیہ نے آج کارروائی کرتے ہوئے کروڑوں روپے کی زمین واگزار کروا لی ہے ۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق لاہور کی ضلعی انتظامیہ نے اسکیم موڑ موضع ڈھلنوال ملتان روڈ پر قبضہ مافیا اور غیر قانونی تعمیرات کیخلاف کارروائی کرتے ہوئے زمین واگزار کروا لی ۔

اسسٹنٹ کمشنر لاہور کے مطابق کارووائی کے دوران 10 مرلہ کمرشل زمین واگزار کروا لی گئی ہے ۔ واگزار کروائی گئی زمین کی مالیت 4 کروڑ 10 لاکھ روپے ہے ۔ خیال رہے کہ پنجاب انتظامیہ کی جانب سے قبضہ مافیا کیخلاف مکمل کریک ڈاؤن جاری ہے، اس حوالے سے کارروائی کرتے ہوئے گزشتہ دنوں لاہور پولیس نے بڑی کارروائی کرتے ہوئے کاہنہ میں اربوں روپے مالیت کی سرکاری زمین واگزار کروا لی ۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق پولیس نے اتوار کے روز کارروائی کرتے ہوئے 200 کنال سے زائد اربوں روپے کی سرکاری اراضی سے قبضہ چھڑایا ہے ۔ بتایا گیا ہے کہ قبضہ کرنے والوں کو رانا مبشر اور سیف الرحمان کھوکھر کی پشت پناہی تھی۔ رانا مبشر اور سیف الرحمان کا تعلق ن لیگ سے ہے ۔ پولیس کا کہنا ہے کہ کاہنہ میں سرکاری زمینیں ہتھیانے والے قبضہ مافیا کیخلاف آپریشن کیا گیا ۔

ایس پی ماڈل ٹاؤن کا کہنا ہے کہ200 کنال سے زائد سرکاری زمین واگزار کروا لی گئی ۔ آپریشن کے دوران ملزم بوٹا فرار ہوگیا۔ زمین کے قبضے میں رانا مبشر اور سیف الرحمان کھوکھر کی پشت پناہی تھی ۔ ملزم بوٹا ، رانا مبشر اور سیف الرحمان کھوکھر کا کارندہ تھا۔ واضح رہے کہ اس سے قبل پنجاب حکومت نے مظفرگڑھ میں کروڑوں روپے مالیت کی کمرشل اور زرعی سرکاری اراضی واگزار کرا لی ہے۔

اس کے علاوہ جنوبی پنجاب کے علاقے لودھراں میں بھی سرکاری زمین پر زیر تعمیر غیر قانونی گھر مسمار کر دیا گیا، کارروائی چک 37 میں کی گئی ہے۔ اس حوالے سے حکام کا کہنا ہے کہ قابضین سے 102 کنال اراضی واگزار کروا کر فصلوں پر ہل چلا دیے گئے ہیں۔ بتایا گیا ہے کہ مظفر گڑھ میں واگزار کروائی گئی کمرشل اور زرعی سرکاری اراضی کی مالیت کروڑوں روپے بنتی ہے۔

حکومت پنجاب کی جانب سے قبضہ مافیا کیخلاف کارروائیاں تیزی سے جاری ہیں، گزشتہ ماہ لاہور انتظامیہ نے لیگی رہنما سیف الملوک کھوکھر سے 38 کنال اراضی واگزار کروا لی تھی ۔ اس حوالے سے بتایا گیا تھا کہ ایل ڈی اے کی جانب سے قبضہ کی گئی سرکاری زمین واگزار کروانے کے لیے اتوار کے روز ایک گرینڈ آپریشن کیا گیا ۔ اس موقع پر پولیس کی بھاری نفری بھی کھوکھر پیلس کے اطراف موجود تھی ۔

کھوکھر برادران سے 38 کنال زمین واگزار کروا کر پنجاب حکومت کے حوالے کردی گئی ہے ۔ واگزار کروائی گئی زمین کی مالیت سو ارب روپے ہے۔ کھوکھر برادران نے جعلسازی سے زمین پر قبضہ کیا تھا ۔انتظامیہ نے کارروائی کرتے ہوئے کھوکھر پیلس سے ملحقہ سیف مارکیٹ بھی مسمار کردیا جبکہ سیف الملوک کھوکھر کے برادر نسبتی کا گھر بھی گرا دیا گیا ہے جبکہ سیف الملوک کھوکھر کے بھانجے طاہر جاویدکے گھر کو بھی مسمار کردیا گیا ہے۔ لاہور انتظامیہ کی جانب سے آپریشن ن لیگی رہنما سیف الملوک کھوکھر کے گھر کے اطراف کیا گیا ۔


Top