You are here
Home > پا کستا ن > ’’ ہم آج بھی آپ کے وفادار ہیں۔۔‘‘ بیوروکریسی کے شریف خاندان سے رابطے، اہم پیغامات پہنچانا شروع کر دیئے، عمران خان کو ایک اور مشکل کا سامنا

’’ ہم آج بھی آپ کے وفادار ہیں۔۔‘‘ بیوروکریسی کے شریف خاندان سے رابطے، اہم پیغامات پہنچانا شروع کر دیئے، عمران خان کو ایک اور مشکل کا سامنا

اسلام آباد (نیوز ڈیسک) سینئر صحافی و اینکر پرسن عمران ریاض خان نے کہا کہ بیوروکریسی آج بھی شریف خاندان سے رابطے میں ہے۔

 انہوں نے کہا کہ بیوروکریسی سمجھتی تھی کہ ہماری موجیں ہیں، ہمارے جو پروٹوکولز ہیں، ہمارے گھروں میں جو چار چار گاڑیاں کھڑی ہیں، سب ایسے ہی رہے گا اور تبدیلی صرف پاکستان میں آئے گی لیکن عمران خان نے آ کر جب بیوروکریسی سے بات کی اور بیوروکریسی کے ساتھ اپنے خیالات کا تبادلہ کیا تو بیوروکریسی نے رد عمل دینا شروع کر دیا۔

صحافی نے بتایا کہ سرکاری افسران نے بھی اپنا رد عمل دیا اور نیب، ٹرانسفرز، اینٹی کرپشن کے بہانے کام کرنا چھوڑ دیا تھا ،بیوروکریسی نے اپنے طور پر عمران خان کو ناکام کرنے کی کوشش کی ہے اور جہاں کہیں بھی مافیاز پر ہاتھ ڈالنے کی کوشش کی گئی دوسری طرف جا کر انہوں نے روک دیا۔شروع میں بیوروکریسی کو لگتا تھا کہ اب عمران خان کی حکومت آ تو گئی ہے لیکن یہ زیادہ دیر چل نہیں سکتی ۔

انہوں نے کہا کہ میں بہت سارے ایسے بیوروکریٹس کو جانتا ہوں جو شریف خاندان کے پاس جاتے تھے اور جا کر اُن کو اس بات کی یقین دہانی کرواتے تھے کہ ہم آج بھی آپ کے وفادار ہیں۔ پنجاب کا ایک سابق ہوم سیکرٹری اُس وقت ہوم سیکرٹری کی حیثیت سے ہی نواز شریف کو جیل میں ملنے گیا ۔

 ان سے کہا کہ میاں صاحب کوئی خدمت ہو میرے لائق تو آپ نے مجھے بتانا ہے، میں آپ کی خدمت میں حاضر ہوں اور یہی نہیں اُس ہوم سیکرٹری کے حوالے سے سامنے آنے والی رپورٹ میں اس بات کا بھی انکشاف ہوا کہ اُس شخص نے کچھ لوگوں کے ذریعے اور پھر براہ راست بھی حسین نواز سے رابطہ کیا تھا اور حسین نواز کو اس حوالے سے یقین دہانی کروائی کہ آپ یہاں نہیں ہیں ، تو آپ یہی سمجھیں کہ میں یہاں ہوں ، کوئی بھی ضرورت ہوئی تو بتائیے گا۔

وہ بیوروکریٹ بیک وقت پنجاب میں ہوم سیکرٹری بھی تھا لیکن وہ شریف خاندان کو اپنی وفاداری کا یقین بھی دلا رہا تھا۔ بہت سارے بیوروکریٹس عثمان بزدار کے وزیراعلیٰ ہوتے ہوئے بھی شہباز شریف سے احکامات لے رہے تھے۔ کیونکہ بیوروکریسی کو یہی لگتا تھا کہ عمران خان اور بزدار چلے جائیں گے لہٰذا شریف خاندان سے بنا کر رکھیں۔ :


Top