You are here
Home > پا کستا ن > کیا انسانی روح جسم سے نکل کر سفر کرسکتی ہے؟ سی آئی اے کی 1983ءکی رپورٹ سامنے آگئی، انٹرنیٹ پر طوفان آگیا

کیا انسانی روح جسم سے نکل کر سفر کرسکتی ہے؟ سی آئی اے کی 1983ءکی رپورٹ سامنے آگئی، انٹرنیٹ پر طوفان آگیا

نیویارک(ویب  ڈیسک) امریکی انٹیلی جنس ایجنسی سی آئی اے نے 1983ءمیں ایک حیران کن تحقیق کروائی تھی جس میں انسان کے وقت اور خلاءمیں سفر کے امکانات کا جائزہ لیا گیا تھا اور اس تحقیق کے نتائج مخفی رکھے گئے تھے۔ 2003ءمیں یہ نتائج افشاءکر دیئے گئے لیکن اب تک لوگوں نے ان کا نوٹس نہیں لیا تاہم اب ٹک ٹاک صارف نے اس پر ویڈیوز بنانی شروع کر دی ہیں اور رپورٹ کے ایسے حصے سامنے لا رہے ہیں کہ سن کر حیرت گم ہو جائے۔ میل آن لائن کے مطابق اس تحقیقاتی رپورٹ سے ظاہر ہوتا ہے کہ سی آئی اے اس بات پر یقین رکھتی ہے کہ انسان کا وقت اور خلاءمیں سفر ممکن ہے، تاہم اس کے لیے اسے اپنے اس مادی جسم سے نکلنا پڑتا ہے۔ موت کے بعد کا سفر اس کی ایک مثال ہے۔ تحقیق میں بتایا گیا ہے کہ اس زندگی میں انسان یہ سفر ’گیٹ وے ایکسپیرئینس‘ (Gateway Experience)نامی تکنیک کے ذریعے ممکن ہے۔ یہ رپورٹ 1983ءمیں امریکی لیفٹیننٹ کرنل وائنی ایم مک ڈونیل نے لکھی تھی۔

اس تکنیک میں ساﺅنڈ ٹیپس کے ذریعے دماغ کی لہروں پر حاوی آیا جاتا ہے اور شعور کی ایک تبدیل شدہ حالت پیدا کی جاتی ہے۔ اس تبدیل شدہ شعور کے ساتھ انسان وقت اور خلاءمیں سفر کر سکتا ہے۔ تاہم صرف اس کا شعور ہی وقت اور خلاءمیں سفر کرے گا، اس کا جسم یہیں رہ جائے گا۔ ایبی نامی ایک ٹک ٹاکر لڑکی نے اپنی ویڈیوز میں اس رپورٹ کے متعلق بتایا ہے کہ اس میں کئی ایسے سوالات کے جوابات دیئے گئے ہیں جن کے متعلق کسی کو کچھ معلوم نہیں۔ اس میں بتایا گیا ہے کہ مرنے کے بعد ہم کہاں جاتے ہیں؟ شعور دراصل کیا چیز ہے؟ اور ہماری یہ کائنات درحقیقت ایک ہولوگرام ہے۔ واضح رہے کہ سی آئی اے کی یہ رپورٹ 28صفحات پر مبنی ہے جو 2003ءکے بعد سے کسی بھی شخص کے لیے دستیاب ہے اور کوئی بھی اسے حاصل کرکے پڑھ سکتا ہے۔


Top