ٹک ٹاک پر پابندی کے بعد پاکستان بھی چین مخالف ممالک کی صف میں کھڑا ہوگیا ، بڑ ا دعویٰ کر دیا گیا

لاہور(ویب ڈیسک) سینیئر صحافی نجم سیٹھی نے کہا ہے کہ ٹک ٹاک بین کرنے کے بعد پاکستان چین مخالف ممالک کی صف میں کھڑا ہو گیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق پی ٹی اے کی جانب سے معروف سوشل میڈیا ایپلیکیشن ٹک ٹاک پر پابندی عائد کرنے کے بعد ملک بھر میں اس فیصلے پر عوامی

ردعمل سامنے آ رہا ہے۔ عام افراد کے علاوہ مختلف صحافیوں نے بھی اس پر بات کی ہے۔سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر شیئر ایک پیغام میں سینیئر صحافی نجم سیٹھی نے لکھا کہ ” پی ٹی اے نے ٹک ٹاک کو اس لیے بند نہیں کیا کہ اس پر غیر اخلاقی مواد تھا، بلکہ یہ پابندی اس لیے کی گئی ہے کہ ٹک ٹاکرز ایک عظیم لیڈر کا مذاق اڑا رہے تھے۔ اب پاکستان اینٹی چائنہ ٹک ٹاک لیگ میں امریکہ اور بھارت کی صف میں کھڑا ہوگیا ہے۔نئے پاکستان میں خوش آمدید!”۔نجم سیٹھی نے پی ٹی اے پر الزام عائد کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ فیصلہ صرف اس لیے کیا گیا ہے کہ ٹک ٹاکرز وزیراعظم عمران خان کے خلاف ٹک ٹاک بنا رہے تھے، انہوں نے کہا کہ نئے پاکستان کا یہ اقدام پاکستان کو چین کے مخالف گروپ میں لے آیا ہے۔ اب پاکستان چین مخالف ٹک ٹاک ممالک کی صف میں بھارت اور امریکہ کے ساتھ کھڑا ہے۔یاد رہے کہ ٹک ٹاک کی بندش پر سینیئر صحافی حامد میر بھی کہہ چکے ہیں کہ اس فیصلے سے ڈونلڈ ٹرمپ کو خوشی ہوگی۔ واضح رہے کہ پی ٹی اے نے ملک بھر میں ٹک ٹاک اپلیکیشن بلاک کردی۔ اس حوالے سے پی ٹی اے حکام کا کہنا ہے کہ انتظامیہ کو متعدد بار خط لکھ کر قابل اعتراض اور نامناسب مواد ہٹانے گیا ہے لیکن اس پر عمل درآمد نہیں کیا گیا۔ جس کے بعد پاکستان میں ایپ پر پابندی کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ترجمان پی ٹی اے کے مطابق ٹک ٹاک انتظامیہ کو جواب جمع کرانے کی مہلت دی تھی۔ شکایات کا ازالہ نہ کرنے پر ٹک ٹاک پرپابندی لگائی گئی۔پی ٹی اے کی جانب سے ایک اعلامیہ جاری کیا جائے گا جس میں ایپ کو بند کرنے کے بارے میں تحریر کیا ہوگا۔ واضح رہے کہ پی ٹی اے نے کئی موبائل اور سوشل میڈیا ایپس پر غیر اخلاقی مواد پھیلائے جانے کی شکایات کے بعد ایکشن لیا تھا۔