جنرل قمر جاوید باجوہ سے کس کی خواہش پر ملاقات کی تھی۔۔۔؟ شاہد خاقان عباسی نے اعتراف کرتے ہوئے ناقابل یقین انکشاف کر دیا

اسلام آباد(ویب ڈیسک)ن لیگ کے سینئر رہنما اورسابق وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی نے آرمی چیف سے خفیہ ملاقات کا اعتراف کرلیا، نجی ٹی وی پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے کہاانہوں نے کہا کہ میری آرمی چیف سے کئی ملاقاتیں ہوئی ہیں ، یہ ذاتی نہیں تھیں ملکی مسائل پر ملاقاتیں ہوئیں، انہوں نے کہا کہ 2018کے

بعد ان کی جنرل قمر جاوید باجوہ سے صرف ایک بار ملاقات ہوئی ، وہ بھی ان کی خواہش پر،یہ ملاقات الیکشن کے بعد ہوئی تاکہ ملکی مسائل پر بات چیت کی جا سکے ۔ میں اکیلا نہیں تھا ہم تین لوگ تھے ،اس ملاقات میں مفتاح اسماعیل اور خواجہ آصف بھی موجود تھے اور بڑی اچھی با ت چیت ہوئی ، اس وقت تک عمران خان اقتدار میں آچکے تھے ، ہم نے انہیں بتایا کہ یہ خرابیاں پیدا ہو رہی ہیں ، یہ میٹنگ 2،3گھنٹے پر مشتمل تھی ، ہم نے اس ملاقات کی پہلے نوازشریف سے اجازت لی تھی ، لیکن اس ملاقات کا کوئی فیڈ بیک نہیں ملا ۔ جبکہ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق پنجاب میں میدان سجانے کی تیاریاں، مریم نواز نے مسلم لیگ نے کے گڑھ میں جلسہ عام کا اعلان کر دیا، نواز شریف کی صاحبزادی نے پارٹی رہنماوں اور کارکنوں کو گوجرانوالہ میں 16 اکتوبر کو جلسے کے انعقاد کی تیاریاں کرنے کی ہدایت کر دی۔ تفصیلات کے مطابق سابق وزیراعظم اور مسلم لیگ ن کے قائد نواز شریف کی صاحبزادی مریم نواز نے پنجاب میں جلسے شروع کرنے کا اعلان کیا ہے۔اس سلسلے میں مریم نواز کی جانب سے پہلا جلسہ مسلم لیگ ن کے گڑھ گوجرانوالہ میں کیا جائے گا۔ مریم نواز نے پارٹی رہنماوں اور کارکنوں کو ہدایت کی ہے کہ 16 اکتوبر کو گوجرانوالہ میں جلسہ عام کے انعقاد کی تیاریاں کی جائیں۔ دوسری جانب ن لیگ کے اجلاس کے دوران اظہار خیال کرتے ہوئے مریم نواز کا کہنا تھا کہ ووٹ کسی اور کے نام ڈالا جاتا ہے، نکلتا کسی اور کے نام سے ہے۔شہبازشریف نے مشکلات کے باوجود پیغام دیا قائد نوازشریف ہیں۔ نوازشریف کی تقریر سےعدلیہ، میڈیا، ن لیگ، عوام کے موقف کو تقویت ملی۔ نوازشریف کی تقریر کے بعد آزادی اظہار ملنے کا کریڈٹ نوازشریف کو جاتا ہے۔ مریم نواز کی جانب سے مزید کہا گیا ہے کہ حکومت مخالف تحریک کیلئے منصوبہ بندی کی جا رہی ہے۔ مشاورت سے حکمت عملی طے کی جائے گی۔ حکومت کیخلاف تحریک کیلئے کئی پلان ترتیب دیے جائیں گے۔