بریکنگ نیوز: منی لانڈرنگ کیس۔!! میاں شہباز شریف کی قسمت کا فیصلہ سُنا دیا گیا، پاکستانی قوم دنگ رہ گئی

لاہور (ویب ڈیسک) لاہور ہائیکورٹ نے شہباز شریف کی عبوری ضمانت میں ایک دن توسیع کر دی۔ منی لانڈرنگ کیس میں عبوری ضمانت میں توسیع کیلئے شہباز شریف لاہور ہائیکورٹ میں پیش ہوئے۔ اس موقع پر سکیورٹی کے سخت انتظامات کئے گئے۔ داخلی راستے پر لیگی کارکنوں کی پولیس سے تلخ کلامی ہوئی۔

جسٹس سردار احمد نعیم کی سربراہی میں دو رکنی بینچ شہباز شریف کی عبوری درخواست ضمانت پر سماعت کر رہا ہے۔ نیب نے شہباز شریف کی درخواست ضمانت مسترد کرنے کی استدعا کی اور کہا شہباز شریف کیخلاف سٹیٹ بینک سے شکایت موصول ہونے پر انکوائری کی۔ نیب نے کہا شہباز شریف نے 2008 سے 2018 تک 9 کاروباری یونٹس قائم کیے، 1990 میں شہباز شریف کے اثاثوں کی مالیت 21 لاکھ تھی، 1998 میں اثاثوں کی مالیت ایک کروڑ 8 لاکھ ہوگئی، 2018 میں شہباز شریف کے اثاثوں کی مالیت 6 ارب کے قریب پہنچ گئی، شہباز شریف اور اہلخانہ نے کرپشن کر کے 7 ارب کے اثاثے بنائے۔ قومی احتساب بیورو لاہور نے کہا لاہور ہائیکورٹ حمزہ شہباز کی درخواست ضمانت مسترد کرچکی، شہباز شریف تحقیقات پر اثرانداز ہونے کی کوشش کر رہے ہیں، منی لانڈرنگ کیس میں سلمان شہباز اشتہاری قرار دیئے جا چکے۔ منی لانڈرنگ کیس میں عبوری ضمانت میں توسیع کیلئے شہباز شریف لاہور ہائیکورٹ پہنچ گئے۔ اس موقع پر سکیورٹی کے سخت انتظامات کئے گئے۔ لاہور ہائی کورٹ میں شہباز شریف کی عبوری ضمانت کی درخواست پر سماعت کچھ دیر بعد ہوگی، دو رکنی بنچ مقدمہ سنے گا۔ خیال رہے گزشتہ سماعت پر لاہور ہائیکورٹ نے قائد حزب اختلاف شہباز شریف کی عبوری ضمانت میں توسیع کی تھی۔