You are here
Home > پا کستا ن > پنجاب پولیس میں بڑے پیمانے پر تقرر و تبادلے کر دیئے گئے

پنجاب پولیس میں بڑے پیمانے پر تقرر و تبادلے کر دیئے گئے

لاہور( نیوز ڈیسک) پنجاب پولیس میں بڑے پیمانے پر تقرر و تبادلے کر دیئے گئے ہیں۔ تفصیلات کے مطابق ایڈیشنل آئی جی طارق یاسین مسعود کے انکار کے بعد شاہدحنیف کو ایڈیشنل آئی جی فنانس پنجاب کا اضافی چارج دے دیا گیا ہے،وزارت داخلہ نے پنجاب سے ایس ایس پی عمران کشور کی

خدمات مانگ لیں جن کو ایف آئی اے میں تعینات کیا جائے گا، وفاق سےڈی آئی جی محمد عابد خان کا ٹرانسفر پنجاب میں کر دیا گیا ہے، ایس پی میاں محمد ممتاز مانیکا کا ٹرانسفر پنجاب سے اسٹیبلشمنٹ ڈویژن اسلام آباد کر دیا گیا ہے، پنجاب میں تعینات ایس ایس پی رانا تنویر احمد طاہر کا ٹرانسفر سندھ میں منسوخ کر دیا گیا ہے، تقرری کے منتظر آصف خان کو ایس ایس پی پولیس سکول آف انٹیلیجنس لاہور تعینات کر دیا گیا ہے۔ خیال رہے کہ پنجاب میں حیرت انگیز صورتحال اس وقت پیدا ہوئی جب پانچویں آئی جی پنجاب شعیب دستگیر کو تبدیل کر دیا گیا اور انکی جگہ نئے آئی جی پنجاب انعام غنی کو تعینات کیا گیا، اس وقت ایڈیشنل آئی جی طارق مسعود یاسین نے نئے تعینات ہونے والے آئی جی انعام غنی کیساتھ کام کرتے ہوئے اعلیٰ حکام کو خط لکھا تھا اور انعام غنی کے ساتھ کام کرنے سے انکار کر دیا تھا، ایڈیشنل آئی جی طارق مسعود یاسین کی جانب سے حکام کو لکھے گئے خط میں کہا گیا تھا کہ نومنتخب انسپکٹر جنرل آف پولیس انعام غنی مجھ سے جونئیر ہیں، ان کے ماتحت کام نہیں کر سکتا۔دوسری جانب انعام غنی کے آئی جی بننے کے بعد جنوبی پنجاب میں ایڈیشنل آئی جی کا عہدہ خالی ہو گیا ہے۔ وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے انعام غنی سے چارج سنبھالنے کے بعد تین افسران کا پینل بھیجنے کا حکم دیا تھا.


Top