You are here
Home > پا کستا ن > پنجاب میں سب سے بڑی گرفتاری ، ہلچل مچ گئی

پنجاب میں سب سے بڑی گرفتاری ، ہلچل مچ گئی

لاہور(نیوز ڈیسک) قومی احتساب بیورو (نیب) کی ٹیم نے شراب لائسنس کیس میں سابق ڈی جی ایکسائز اکرام اشرف گوندل کو گرفتار کر لیا ہے۔خیال رہے کہ گزشتہ ماہ سابق ڈی جی ایکسائز اکرم اشرف گوندل نے وزیراعلیٰ کے خلاف اہم گواہ بننے کے لیے نیب میں درخواست داخل کی تھی۔شراب لائسنس اجرا کیس میں سابق ڈی جی

ایکسائز اکرام اشرف گوندل کی گرفتاری کے بادل گزشتہ ماہ سے ہی ان پر منڈلا رہے تھے۔نیب کے مطابق تمام دستاویزی ثبوتوں میں لائسنس اجرا کی اجازت پر اکرام اشرف گوندل کے دستخط موجود ہیں جبکہ وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار اور سابق پرنسپل سیکرٖٹری ڈاکٹر راحیل صدیقی کے دستخط کسی بھی سرکاری دستاویز پر موجود نہیں ہیں۔نیب ذرائع کے مطابق اکرام اشرف گوندل نے وعدہ ،معاف گواہ بننے کی درخواست میں تحریر کیا تھا کہ ڈاکٹر راحیل سے اس بات کی تحقیقات کی جا رہی ہیں کہ مبینہ طور پر سات کروڑ روپے کی رشوت وصولی کس کے کہنے پر ہوئی؟ادھر نیب کے سوالنامے پر جمع کرائے گئے جواب میں وزیراعلیٰ پنجاب نے موقف اپنایا تھا کہ میرا، صوبائی چیف سیکریٹری یا ان کے پرنسپل سیکرٹری کا شراب لائسنس کی منظوری میں کوئی کردار نہیں ہے۔دوسری جانب نیب لاہور نے پنجاب کے سینئر پی ٹی آئی رہنما عبدالعلیم خان کے خلاف آمدن سے زائد اثاثہ جات کیس میں ریفرنس منظوری کے لئے ہیڈ کوارٹر ارسال کر دیا ہے، نیب ذرائع کے مطابق نیب لاہور کی مشترکہ تحقیقاتی ٹیم نے گزشتہ روز ہونے والی بریفنگ میں چیئرمین نیب سے زبانی منظوری حاصل کرلی تھی۔نیب ذرائع کا کہنا ہے کہ علیم خان کے خلاف ان کی ثابت شدہ آمدن سے 1 ارب 40 کروڑ مالیت کے زائد اثاثہ جات کا ریفرنس تیار کیا گیا ہے، ریفرنس میں علیم خان کے نام اندرون و بیرون ملک متعدد قیمتی اثاثہ جات کی نشاندہی کی گئی ہے جن کے اب تک ذرائع نامعلوم ہیں۔نیب ذرائع کے مطابق علیم خان کے خلاف تحقیقات میں ان کے دو مبینہ فرنٹ مین عمر فاروق اور عمیر کے ذریعے پارک ویو سوسائٹی میں ہیر پھیر کے شواہد حاصل کئے گئے ہیں، 400 سے 500 متاثرین کے پلاٹوں کو معروف ہائوسنگ سوسائٹی میں منتقلی کرتے ہوئے مذکورہ فرنٹ مین نے علیم خان کو کروڑوں روپے کا غیرقانونی انداز میں فائدہ پہنچایا، نیب قانون کے مطابق آمدن سے زائد اثاثہ جات کیس میں ملزم کو قید کی سزا کے علاوہ ناصرف ملزم کی تمام غیرقانونی جائیداد ضبط ہوتی ہے بلکہ ملزم کو اتنا ہی جرمانہ بھی کیا جا سکتا ہے۔


Top