You are here
Home > پا کستا ن > گزشتہ ساری رات سی سی پی او لاہور عمر شیخ کیا کرتے رہے؟

گزشتہ ساری رات سی سی پی او لاہور عمر شیخ کیا کرتے رہے؟

لاہور (نیوز ڈیسک ) سینئر صحافی عارف حمید بھٹی نے کہا ہے کہ پولیس کی طرف سے پروٹوکول کا خیال نہیں رکھا گیا، اب بھی صرف میڈیا خیال رکھ رہا ہے ، اگر خدانخواستہ اس تصویر میں موجود از خود پیش ہونیوالا شخص ملزم بھی نکل آتا تو بھی اسے سزا نہیں ہوسکتی تھی کیونکہ شناخت پریڈ ہونا تھی اور شناخت پریڈ کے بغیرملزم کو سزا سے

بری ہونے میں کوئی پریشانی نہیں ہوتی، گزشتہ رات بھی سی سی سی پی او لاہور سانحہ گجر پورامقدمے کی فائلیں دیکھنے کی بجائے مریم نواز کے کیس کی مثل پڑھتے رہے ۔وہ نجی ٹی وی چینل جی این این کے پروگرام میں گفتگو کررہے تھے ۔دوران پروگرام سوال “اگر وقار بے گناہ ہوا تو اس کا کیا قصور ہے کہ اس کی تصویر اس طرح سے سوشل میڈیا پر یا میڈیا پر چلتی رہیں اور جس طرح پروٹوکول کا خیال اب رکھا جارہا ہے پولیس والوں کی طرف سے اگر پہلے رکھ لیا جاتا تو ایک بے گناہ شخص کے ساتھ زیادتی نہ ہوتی؟ اس پر عارف حمید بھٹی نے کہا کہ اب بھی پولیس نہیں رکھ رہی، اب صرف میڈیا رکھ رہا ہے۔ اگر وقار خدانخواستہ ملزم بھی نکل آتا، اگر وہ موقع واردات پر بھی ہوتا تو آئی جی صاحب نے جیسے تصویر بانٹی ہے دنیا کی ہر عدالت نے اس کو بے گناہ کردینا تھا کہ شناخت پریڈ کے بغیر آپ نے کس بنیاد پر اس کی تصویر بانٹی؟ کوئی عدالت اس کو سزا نہ دیتی ۔ عارف حمید بھٹی کا کہنا تھاکہ آج میں نے دو ریٹائرڈ جج صاحبان سے بات کی ہےتو انہوں نے کہا یہ کیس کسی کے پاس بھی جاتا جس طرح انہوں نے شناخت پریڈ کے بغیر ملزم کی شناخت ظاہر کردی تو اس میں بری ہونے میں قانوناً کوئی رکاوٹ باقی نہیں ، انہوں نے کہا کہ پولیس کے خلاف کارروائی ہونی چاہیے تھی کہ انہوں نے کیسے وزیراعلیٰ کی موجودگی میں پریس کانفرنس میں تصویریں دکھادیں”۔اینکر کا کہناتھاکہ افسوس کے ساتھ وزیراعظم عمران خان نعرہ تو لگاتے رہے کہ پولیس میں اصلاحات کی جائیں گی ،ہوا کچھ بھی نہیں ہے، کارروائی کوئی نہیں ہوتی، جس کا جو دل کرتا ہے وہ کرتا جاتا ہے۔اس پر عارف حمید بھٹی کا کہناتھاکہ” ایک درندگی کا واقعہ ہے اور سی سی پی او مریم نواز کے کیس میں مثل پڑھ رہے ہیں کہ کس کو کیسے پکڑوا جائے ، ایک ذمہ دار ذرائع نے بتایا کہ مریم نواز کی نیب پیشی کے موقع پر پتھرائو کے کیس کو وہ دو تین دن سے سٹڈی کررہے ہیں”۔ عارف حمید بھٹی کا مزید کیا کہنا تھا؟ ویڈیو آپ بھی دیکھیں :


Top