You are here
Home > پا کستا ن > گھر کا چوکیدار مالک کو یہ نہیں کہہ سکتا کہ اپنے سامان کی حفاظت خود کرو۔۔ ۔ آئی پنجاب انعام غنی بھی سی سی پی او کے خلاف میدان میں آ گئے ،بڑی کارروائی کی خبر

گھر کا چوکیدار مالک کو یہ نہیں کہہ سکتا کہ اپنے سامان کی حفاظت خود کرو۔۔ ۔ آئی پنجاب انعام غنی بھی سی سی پی او کے خلاف میدان میں آ گئے ،بڑی کارروائی کی خبر

لاہور (ویب ڈیسک) آئی جی پنجاب انعام غنی کی جانب سے بھی سی سی پی او لاہور عمر شیخ کے متنازعہ بیان کی مذمت، کہتے ہیں گھر کا چوکیدار مالک کو یہ نہیں کہہ سکتا کہ اپنے سامان کی حفاظت خود کرو۔ تفصیلات کے مطابق آئی جی پولیس پنجاب انعام غنی کی جانب سے سی سی پی او لاہور عمر شیخ کے لاہور زیادتی

کیس کی متاثرہ خاتون سے متعلق دیے گئے متنازعہ بیان پر ردعمل دیا گیا ہے۔پنجاب پولیس کے سربراہ کا کہنا ہے کہ سی سی پی او کے بیان کا دفاع نہیں کیا جاسکتا۔ گھر کا چوکی دار گھر کے مالک کو نہیں کہہ سکتا کہ تم اپنے سامان کی خود حفاظت کرو۔ رحیم یار خان سے لے کر اٹک تک عوام کے تحفظ کی ذمے داری پنجاب پولیس کی ہے۔ دوسری جانب وفاقی معاون خصوصی برائے احتساب و داخلہ شہزاد اکبر نے کہا ہے کہ موٹروے واقعے کی ہر لحاظ سے تحقیقات کی جارہی ہیں کہ کہیں کوئی انتظامی غفلت تو نہیں ہے؟ ڈی آئی جی آپریشن کی سربراہی میں کمیٹی بنا دی گئی ہے۔ملزمان کی تلاش کیلئے ڈی این اے کے نمونے اور جدید ٹیکنالوجی کا استعمال کیا جا رہا ہے۔ ایڈمنسٹریٹو ناکامی کو جانچنے کیلئے ایک کمیٹی بنائی گئی ہے۔ انکوائری کمیٹی تمام حقائق دیکھتے ہوئے ہی رپورٹ بنائے گی۔ شہزاد اکبر نے کہا کہ جب تک یہ ایریا موٹروے پولیس کی حدود میں نہیں آئے گا۔ تب تک وہاں پٹرولنگ جاری رہے گی۔ جس سڑک پر یہ واقعہ پیش آیا وہاں آئی جی پنجاب نے فورس تعینات کردی ہے۔انہوں نے کہا کہ سی سی پی او کا بیان نامناسب تھا، ان سے تحریری وضاحت طلب کی گئی ہے۔ آئی جی پنجاب نے سی سی پی او سے وضاحت طلب کی ہے۔ لاء آفیسرز کو میڈیا میں آکر بیان نہیں دینا چاہیے۔ سی سی پی او کو وارننگ بھی دے گئی ہے آئندہ اس قسم کے ریمارکس نہ دیں۔ تین دن کے اندر سی سی پی او کو رپورٹ کرنا ہوگی۔ سی سی پی او معافی بھی مانگ چکے ہیں۔ وزیراعلیٰ نے بھی سی سی پی او سے وضاحت طلب کی ہے۔سی سی پی او کو وارننگ بھی دی گئی ہے آیندہ اس قسم کے ریمارکس نہ دیں۔ دوسری جانب آئی جی پنجاب پولیس انعام غنی کا کہنا ہے کہ خاتون زیادتی کیس کی تفتیش کو سائنسی خطوط پر آگے بڑھایا جا رہا ہے۔ ملزمان کو بہت جلد گرفتار کرلیں گے۔ جائے وقوعہ سے انگوٹھی یا کوئی گھڑی نہیں ملی۔ انہوں نے کہا کہ سی سی پی او کا بیان غیرمناسب تھا۔


Top