ایک اور بیٹا دھرتی پر قربان! لیفٹیننٹ ناصر خالد وزیر ستان میں شہید کر دیئے گئے، جانتے ہیں انکے والد کون تھے؟

لاہور (نیوز ڈیسک ) لیفٹیننٹ ناصر خالد وزیرستان میں دہشت گردوں سے لڑتے لڑتے شہید ہوگئے۔تفصیلات کے مطابق پاک فوج کے جوان ہمارا کل محفوظ بنانے کے لیے اپنا آج قربان کر دیتے ہیں،اب تک کئی جوان ملک میں امن و امان قائم کرنے کے لیے اس راہ پر قربان ہو چکے ہیں

اور شہادت کا رتبہ حاصل کر چکے ہیں۔اور اب پاک فوج کے ایک اور جوان دہشتگردوں سے لڑتے ہوئے جام شہادت نوش فرما گئے۔لیفٹیننٹ ناصر خالد وزیرستان میں دہشت گردوں سے لڑتے لڑتے شہید ہو گئے۔پاک فوج کے جوان لیفٹیننٹ ناصر خالد شمالی وزیرستان میں ہونے والے دھماکے میں شہید ہوئے۔بتایا گیا ہے کہ وہ آسٹریلیائی دفاعی فورس اکیڈمی کے گریجویٹ تھے۔لیفٹیننٹ ناصر خالد کے والد محترم بھی شہادت کے رتبے پر فائض ہیں۔وہ پولیس کے محکمے میں ذمہ داریاں انجام دے رہے تھے کہ اس دوران شہید ہو گئے۔لیفٹیننٹ ناصر خالد اپنے والدین کے اکلوتے بیٹے تھے،ان کی کوئی بہن یا بھائی نہیں ہے۔ان کے خاندان میں صرف والدہ تھیں۔سوشل میڈیا پر لفٹیننٹ ناصر خالد کی اپنی والدہ کے ساتھ تصاویر وائرل ہو رہی ہیں۔جس پر صارفین دعا کر رہے ہیں کہ اللہ تعالیٰ لیفٹیننٹ ناصر خالد کی والدہ کو صبر عطا فرمائے،یقینا وہ ایک عظیم خاتون ہیں،پہلے ان کے شوہر ملک کے قربان ہو گئے اور اب ان کے اکلوتے بیٹے بھی شہادت کا مقام حاصل کر چکے ہیں۔