سعودی عرب سے بہتر تعلقات۔! وزیراعظم کا عمرہ پر جانے کا امکان، اہم ملاقاتیں بھی متوقع

اسلام آباد (ویب ڈیسک) سعودی عرب کے ساتھ تعلقات میں بہتری کیلئے وزیراعظم عمران خان کا عمرہ پر جانے کا امکان ہے، اس دوران وزیراعظم کی سعودی حکمرانوں سے ملاقاتیں بھی متوقع ہیں۔نجیروزنامہ کے مطابق ملاقات کی صورت میں وزیر اعظم سعودی حکمرانوں کو چین، ایران اور ترکی کے ساتھ تعلقات بارے اعتماد میں لیں گے۔

دوسری طرف سعودی عرب نے بھی اپنے سفیر نواف سعید المالکی کو متحرک کر دیا ہے، جنہوں نے سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر، وفاقی وزیر مذہبی امور نورالحق قادری سمیت دیگر اہم حکومتی ذمہ داروں کے ساتھ ملاقاتیں کی ہیں۔ کورونا وبا کی صورتحال مزید بہتر ہونے پر وزیراعظم اہلیہ بشریٰ بیگم اور اہم وزرا کے ہمراہ عمرہ کی ادائیگی کیلئے سعودی عرب جائیں گے۔ اس حوالے سے وزیراعظم عمران خان نے وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی اور عسکری قیادت کے ساتھ مشاورت بھی کی ہے۔اس حوالے سے وزیراعظم عمران خان نے عسکری قیادت اور وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کے ساتھ مشاورت بھی کی ہے۔واضح رہے کہ کچھ روز قبل آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے بھی سعودی عرب کا دورہ کیا تھا۔ دنیا کی قدیم ترین دفاعی تھینک ٹینک رائل یونائیٹڈ سروسز انسٹی ٹیوٹ نے پاکستان اور سعودی عرب کے درمیان حالیہ تنازع کو ٹھنڈا کرنے کا کریڈٹ جنرل قمر جاوید باجوہ کو دیا ہے۔تجزے میں کہا گیا کہ جنرل باجوہ گذشتہ ہفتے دورہ سعودی عرب میں سعودی حکام کو یقین دہانی کرائی گئی کہ دونوں ملکوں کے درمیان دفاعی تعلقات قائم رہیں گے۔جنرل باجوہ اور سعودی ولی عہد شہزاد محمد بن سلمان نے تعلقات کو حقیقت پسندانہ بنایا ہے جس میں دونوں ملک تاریخ اور نعروں سے آگے بڑھ کر ایک دوسرے کا ساتھ دے رہے ہیں۔ تجزیے میں کہا گیا ہے کہ جنرل باجوہ دنوں ملکوں کے درمیان تعلقات کو ذاتیات اور ون مین شو سے ہٹا دیا ہے جب کہ شہزادہ محمد بن سلمان نے بھی ایسا ہی کیا ہے۔