نیب اچھے اچھوں کو ہِلا دیتا ہے! پیشی کل مگر احسن اقبال آج ہی احتساب عدالت جا پہنچے، پھر وہاں پر کیا واقعہ پیش آیا؟ دلچسپ صورتحال پیدا

اسلام آباد (نیوز ڈیسک)مسلم لیگ (ن )کے رہنما احسن اقبال غلطی سے احتساب عدالت میں ایک روز پہلے ہی پہنچ گئے ،غلطی کا احساس ہونے پر واپس چلے گئے ۔منگل کو لیگی رہنما احسن اقبال نارووال سپورٹس سٹی ریفرنس میں پیشی کیلئے پہنچے جس پر عملے نے بتایاکہ آپ غلطی سے احتساب عدالت آ گئے ہیں،

سماعت بدھ ہوگی ،غلطی کا احساس ہونے پر احسن اقبال واپس چلے گئے۔نارووال سپورٹس سٹی کیس میں احتساب عدالت میں سماعت کی تاریخ 26اگست ہے۔خیال رہے کہ نیب نے نارووال سپورٹس سٹی کیس میں لیگی رہنما احسن اقبال کیخلاف تحقیقات مکمل کرلیں ہیں، رپورٹ نیب ہیڈکوارٹرز ارسال کر دی ، تفتیشی ٹیم نے جمع شدہ شواہد کی روشنی میں ریفرنس دائر کرنے کی سفارش کردی ، احتساب عدالت نے نیب کو ریفرنس دائر کرنے کیلئے 26 اگست تک کی مہلت دی تھی۔ نیب کی جانب سے نارووال سپورٹس سٹی کیس میں پیشرفت رپورٹ عدالت میں پیش کی گئی ۔نیب کی رپورٹ میں بتایا گیا کہ سابق وفاقی وزیر کے کرپشن میں ملوث ہونے کے ٹھوس شواہد موجود ہیں، احسن اقبال نے بطور وزیر منصوبہ بندی تمام قوانین کو جان بوجھ کر توڑا ، چیئرمین نیب کی منظوری کے بعد ریفرنس احتساب عدالت میں دائر کیا جائیگا، سماعت احتساب عدالت کے جج محمد بشیر نے کی ، نیب تفتیشی افسر نے بتایا کہ ریفرنس پراسس میں ہے ، کچھ وقت دیا جائے ۔عدالت نے نیب کی استدعا منظور کرتے ہوئے سماعت 26 اگست تک ملتوی کر دی۔کراچی کی احتساب عدالت نے سپیکر سندھ اسمبلی آغا سراج درانی و دیگر کے خلاف آمدن سے زائد اثاثے بنانے کے ریفرنس کی سماعت 11اگست تک ملتوی کردی ، سماعت پر آغا سراج درانی اور دیگر ملزم پیش ہوئے ۔ اسلام آباد کی احتساب عدالت کے جج محمد بشیرکی عدالت میں زیر سماعت لوک ورثہ کرپشن کیس کی سماعت نیب پراسیکیوٹر سہیل عارف کی عدم موجودگی کے باعث بغیرکارروائی 24اگست تک ملتوی کردی گئی۔ سینیٹر روبینہ خالد سمیت دیگر ملزمان کیخلاف لوک ورثہ کے فنڈز سے قومی خزانے سے 30 ملین روپے کی کرپشن کا الزام ہے ۔