نواز شریف کی رپورٹس جعلی ہونے کا شبہ : ایک اور حیران کن انکشاف

لاہور (ویب ڈیسک) سابق وزیراعظم نواز شریف کے ذاتی معالج ڈاکٹر عدنان نے کہا ہے کہ نواز شریف کی باقاعدہ تصدیق شدہ میڈیکل رپورٹس اور سمریاں جمع کرائی گئی تھیں۔ایک بیان میں ڈاکٹر عدنان کا کہنا تھا کہ لاہور ہائی کورٹ کے حکم پر میڈیکل رپورٹس پنجاب حکومت کو جمع کرائی گئیں۔

انہوں نے کہا کہ میڈیکل رپورٹس 4 اور 21 دسمبر 2019، 13اور 30 جنوری، 12 فروری، 18 مارچ، 28 اپریل اور 26 جون دوہزار بیس کو بھی جمع کروائیں۔دوسری جانب ایک اور خبر کے مطابق 2020کی پانچ سو بااثر مسلم شخصیات پر کتاب جاری کردی گئی ہے، وزیر اعظم پاکستان عمران خان کو ’مین آف دی ایئر‘ اور امریکی کانگریس کی راشدہ تلیب کو ’وومن آف دی ایئر‘ قرار دیا گیا ہے۔ کتاب میں سے پہلی 50 شخصیات کا تعلق مذہبی اسکالرز اور سربراہان مملکت سے ہے جبکہ 450 دیگر کا تعلق سیاسی، سماجی اور میڈیا سمیت 13 کیٹیگریز سے ہے۔کتاب میں وضاحت کی گئی ہے کہ اثرورسوخ سے مراد کسی بھی شخص کے پاس (خواہ وہ ثقافتی، نظریاتی، مالیاتی، سیاسی یا دیگر) کو بدلنے کی طاقت ہو جس کا مسلم دنیا پر خاص اثر پڑے گا۔ کتاب میں کہا گیا ہے کہ یہ اثر مثبت بھی ہوسکتا ہے اور منفی بھی جس کا انحصار کسی کے نقطہ نظر پر ہے۔کتاب میں مزید وضاحت کی گئی ہے کہ اس اشاعت کیلئے لوگوں کا انتخاب کا مطلب یہ نہیں کہ ہم ان کے خیالات کی توثیق کرتے ہیں بلکہ ہم صرف ان کے اثرو رسوخ کی پیمائش کرنے کی سادہ سی کوشش کر رہے ہیں۔یہ اثرورسوخ کسی مذہبی اسکالر کا ہوسکتا ہے جو براہ راست مسلمانوں کو مخاطب کرے اور ان کے عقائد اور نظریات کو متاثر کرے یا یہ ایک سماجی و معاشی عوامل کو تشکیل دینے والا حکمران ہوسکتا ہے جس میں لوگ اپنی زندگی بسر کرتے ہیں۔کتاب کی پانچ سو با اثر مسلم شخصیات میں پاکستان کے وزیر اعظم عمران خان کو ’مین آف دی ایئر‘ اور امریکی کانگریس کی خاتون مسلم رہنماء راشدہ تلیب کو ’وومن آف دی ایئر‘ قرار دیا گیا ہے۔