گاڑی میں پتھر لے جانے کا الزام۔!! (ن) لیگی رہنما نے اپنے ہی کارکن کیخلاف پارٹی کو شکایت لگا دی،تحقیقاتی عمل جاری

لاہور (ویب ڈیسک) گاڑی میں پتھرلے کر نیب آفس جانے کا الزام لگانے پر ایم پی اے مرزا جاوید نے ن لیگی کارکن ایوب بھٹہ کیخلاف پارٹی کو شکایت کردی ۔مسلم لیگ ن لاہور کے جنرل سیکرٹری خواجہ عمران نذیر نے کہا زبانی شکایت موصول ہوئی تحریری درخواست کا انتظار ہے ،

تحریری درخواست موصول ہونے کے بعد انضباطی کمیٹی معاملات دیکھے گی، خواجہ عمران نذیر نے کہا مرزا جاوید کے مطابق ایوب بھٹہ کا کردار مشکوک ہے تاہم اس بات کا بھی پتا لگایاجائے گا کہ کہیں حکومت کی جانب سے اسے کوئی لالچ یا دھمکیاں تو نہیں دی گئیں،کمیٹی مکمل تحقیقات کے بعد فیصلہ پارٹی قیادت کو بھیجے گی۔ دوسری جانب پنجاب حکومت نے کہا ہے کہ پیر کی رات جاتی امرا ء میں نیب دفتر پر اٹیک کرنے کی گھنائونی سازش کے دوران کارکنان میں دس لاکھ روپیہ تقسیم کیا گیا جس میں سے پتھر مارنے والوں کو فی کس 25 ہزار اور مریم نواز کی گاڑی پر پتھر مار کر شیشہ توڑنے والوں کو ایک ،ایک لاکھ روپیہ دیا گیا،نیب کے دفتر کے باہر امن و عامہ کی صورتحال خراب کرنے کی کوشش کی گئی اور نیب کے 20 سالہ دور میںاس طرح کی غنڈہ گردی کا مظاہرہ کبھی دیکھنے میں ملا ہو جس کا (ن)لیگ کی جانب سے مظاہرہ کیا گیا ،یہ حقیقت بھی کھل کر سامنے آئی کہ مسلم لیگ (ن)نے سپریم کورٹ پر حملے کی تاریخ دہرائی ہے۔صوبائی وزیر اطلاعات فیاض الحسن چوہان نے وزیر قانون راجہ بشارت اور دیگر کے ہمراہ 90شاہراہ قائد اعظم پر ہنگامی پریس کانفرنس کی ۔ انہوںنے کہا کہ بیگم صفدر اعوان نے آل شریف کی جانب سے آئینی و قانونی اداروں پر اٹیک کرنے کی اعلی روایت کو زندہ کرتے ہوئے نیب دفتر پراٹیک کیا اور اس بدنامی کے داغ کو اپنے ماتھے پر سجا لیا۔