عمران خان نے اشارہ دے دیا۔۔!! عثمان بُزدار کو ہٹانے کی تیاریاں شروع

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) لیگی رہنماء احسن اقبال کا کہنا ہے کہ اطلاعات کہتی ہیں کہ خان کی آشیرباد سے عثمان بزدار کو ہٹانے کے آپریشن کا بذریعہ نیب آغاز کر دیا گیا ہے کیونکہ نیب ان کے اشارے بنا حرکت نہیں کرتا۔ تفصیلات کے مطابق وزیر اعلیٰ پنجاب کے خلاف نیب پوری طرح

متحرک ہوچکا ہے، آج نیب میں وزیر اعلیٰ پنجاب کی دوسری مرتبہ پیشی ہوئی، نیب کی جانب سے وزیر اعلیٰ پنجاب کو سوالنامہ بھی ارسال کر دیا گیا ہے۔ تاہم اب اس ساری صورتحال پر لیگی رہنماء احسن اقبال بھی میدان میں آگئے اور ناقابلِ یقین انکشاف کر ڈالا، سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے پیغام میں احسن اقبال کا کہنا ہے کہ ’’ کہ اطلاعات کہتی ہیں کہ خان کی آشیرباد سے عثمان بزدار کو ہٹانے کے آپریشن کا بذریعہ نیب آغاز کر دیا گیا ہے کیونکہ نیب ان کے اشارے بنا حرکت نہیں کرتا ‘‘۔

دوسری جانب حامد میر کا کہنا تھا کہ ’’ وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کے خلاف شراب کا لائسنس جاری کرنے کے کیس میں دو سرکاری افسران وعدہ معاف گواہ بننے پر تیار ،ایک کا تعلق محکمہ ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن سے ہے دوسرے کا تعلق وزیراعلیٰ کے سٹاف سے ہے دونوں کا نیب سے رابطہ ہو چکا ہے وزیراعلیٰ کے خلاف نئی شکائتیں بھی آ گئیں ‘‘۔

تاہم آج ہونے والی پیشی پر رد عمل دیتے ہوئے عثمان مغل نامی صارف کا کہنا تھا کہ ’’ نیب نے آج وزیراعلی پنجاب عثمان بزدار کو صرف کل کے واقعے کو برابر کرنے کے لئے بلایا کہ تاثر جائے کہ نیب آزاد ادارہ ہے۔ ذرائع کے مطابق بزدار صاحب صرف چائے پینے آئے ہیں۔ عوام کو بےوقوف بنانا چھوڑو۔ عوام سب جانتی ہے‘‘۔

دوسری جانب آج وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان بُزدار ذاتی حیثیت سے بنا پروٹوکول ہی نیب میں پیش ہوئے۔ نیب میں پیشی کے بعد وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار کا بیان سامنے آیا۔ نیب پیشی کے حوالے سے وزیر اعلیٰ پنجاب کا کہنا ہے کہ قانونی تقاضے پورے کرتے ہوئے ذاتی حیثیت سے نیب کے سامنے پیش ہوا،صرف ایک گاڑی میں بغیر پروٹوکول نیب کے دفتر گیا،نیب کے سامنے اپنا موقف پیش کیا اور لائسنس کے معاملے پر حقائق سے آگاہ کیا،لائسنس کے معاملے پر ابہام دور کرنے کیلئے حقائق نیب کے سامنے رکھے،الحمداللہ ہمارا دامن صاف ہے،جب بھی بلایا جائے گا، اپنا موقف ضرور دوں گا،ہم آئینی اداروں کے احترام پر یقین رکھتے ہیں،نئے پاکستان میں کوئی قانون سے بالاتر نہیں۔وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بُزدار کا مزید کہنا ہے کہ نیب میں پیش ہوکر قانون کی بالادستی کو تسلیم کرنے کی روایت قائم کی،عدالت اور خصوصی کمیشن میں بھی جا کر موقف پیش کر چکا ہوں،گزشتہ روز نیب کے دفتر کے باہر ہنگامہ آرائی اور قانون شکنی کا مظاہرہ کیا گیا،قوم نے کل قانون شکنی اور آج قانون پسندی کا مظاہرہ دیکھا،قانون شکن عناصر نے خود کو ایکسپوز کیا،قانون کی پاسداری ہر شہری کا فرض ہے،غلط کام نہ کیا ہے نہ کرنے دیں گے،پنجاب میں قانونی ضوابط کے مطابق امور حکومت چلا رہے ہیں۔

عثمان بُزدار کی نیب میں پیشی کے لیے بنا پروٹوکول روانہ ہونے کی ویڈیو :