مسلم لیگ (ن) کی جانب سے تصدیق کر دی گئی

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) آج لاہور میں سارا دن مسلم لیگ کے کارکنان، رہنماء ،ورکر اور پولیس اہلکار گتھم گتھا رہے، مریم نواز نے نیب میں پیش ہونے کا فیصلہ کیا تو مسلم لیگیوں نے بھی تیاری شروع کر دی، مریم نواز نیب کے آفس کے باہر پہنچے اس سے قبل بڑی تعداد میں سینکڑوں کی تعداد میں

رہنماء ورکروں کو لے کر اپنی محبوب لیڈر کے استقبال کے لیے موجود تھے تاہم صورتحال اس وقت خراب ہوئی جب مریم نواز کی بلٹ پروف گاڑی کی ونڈ سکرین ٹوٹی ، مریم نواز کو نیب کی جانب سے پیغام بھیجا گیا کہ وہ واپس چلی جائیں وہ تھوڑی دیر کے لیے کہیں گئی لیکن پھر واپس آگئیں کہ اب وہ واپس نہیں جائیں گی، اس ساری صورتحال میں یہ سوال پیدا ہوا کہ مریم نواز کی گاڑی جو کہ بلٹ پروف تھی اس کی ونڈ سکرین کس طرح ٹوٹ گئی، اس حوالے سے سسینئر صحافی ارشد وحید چوہدری نے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے ایک پیغام میں دعویٰ کیا کہ ’’ بلٹ پروف گاڑی کا شیشہ پتھر لگنے سے نہیں ٹوٹ سکتا، اس لئے مسلم لیگ ن کے رہنماؤں کا خدشہ ہے کہ مریم نواز کی گاڑی پہ فائرنگ کی گئی ہے جس سے بلٹ پروف شیشہ ٹوٹا اور مریم نواز کو اس کے بعد وہاں سے محفوظ جگہ کی طرف اسی لئے لیجایا گیا تھا کہ کہیں انہیں کوئی نقصان نہ پہنچ جائے‘‘۔

ارشد وحید چوہدری کے ٹویٹ کو ری ٹویٹ کرتے ہوئے مریم نواز نے کہا کہ ’’سب کا یہی کہنا ہے کہ پتھر سے بلٹ پروف کا شیشہ نہیں ٹوٹ سکتا۔ یہ واضح طور پر مجھے سخت نقصان پہنچانے کی کوشش تھی‘‘۔

مریم نواز کی جانب سے اپنی گاڑی کی ٹوٹی ہوئی ونڈ سکرین کی تصویر بھی شیئر کی گئی :