بریکنگ نیوز: وہی ہوا جس کا اندیشہ تھا۔۔!! اسلام آباد ہائی کورٹ نے وفاقی وزیر فیصل واوڈا پر بجلیاں گرا دیں، حکومتی صفوں میں ہلچل

اسلام آباد(ویب ڈیسک) اسلام آباد ہائیکورٹ نے فیصل واوڈا کے خلاف نا اہلی کیس سماعت کیلئے مقرر کر دیا، توہین عدالت درخواست بھی سماعت کیلئے مقرر ۔ دونوں کیسوں کی سماعت بیس ا گست کو ہوگی۔ تفصیلات کے مطابق اسلام آباد ہائیکورٹ نے تحریک انصاف کے رہنما اور وفاقی وزیر فیصل واوڈا

نا اہلی کیس سماعت کیلئے مقرر کردیا۔ عدالت نے فیصل واوڈا کیخلاف توہین عدالت درخواست بھی سماعت کیلئے مقرر کر دی ۔ جسٹس عامر فاروق 20 اگست کو دونوں درخواستوں پر سماعت کریں گے۔ رجسٹرار ہائیکورٹ نے فیصل واوڈا نا اہلی کیس کی کازلسٹ جاری کر دی عدالت نے فیصل واوڈا، الیکشن کمیشن اور فریقین سے جواب طلب کر رکھا ہے۔ فیصل واوڈا نے عام انتخابات میں این اے 249 سے الیکشن میں کامیابی حاصل کی تھی۔ رواں سال جنوری میں جنگ اور دی نیوز کے صحافی فخر درانی نے اپنی رپورٹ میں انکشاف کیا تھا کہ فیصل واوڈا نے کا عام انتخابات میں کاغذات نامزدگی جمع کراتے وقت دہری شہریت کو چھپایا تھا۔ رپورٹ کے مطابق جس وقت وفاقی وزیر برائے آبی وسائل فیصل واوڈا نے 2018ء کے عام انتخابات میں کاغذات نامزدگی جمع کرائے تھے اس وقت وہ امریکی شہری تھے اور یہ کہ ان کی جانب سے الیکشن کمیشن آف پاکستان میں جمع کرایا جانے والا حلف نامہ جعلی تھا کہ ان کے پاس غیر ملکی شہریت نہیں ہے۔ 11؍ جون 2018ء کو کاغذات نامزدگی جمع کراتے وقت وہ امریکی شہری تھے۔ کاغذات کی اسکروٹنی کے وقت بھی ان کی امریکی شہریت برقرار تھی۔ اس سے قبل الیکشن کمیشن نے فیصل واوڈا اور درخواست گزاروں کو بھی 20 جولائی کو طلب کیاتھا۔ رواں سال جنوری میں جنگ اور دی نیوز کے صحافی فخر درانی نے اپنی رپورٹ میں انکشاف کیا تھا کہ فیصل واوڈا نے کا عام انتخابات میں کاغذات نامزدگی جمع کراتے وقت دہری شہریت کو چھپایا تھا۔