وسیم اکرم بھی بھارت کو پیارے ہو گئے ۔۔۔ ایسی بات کہہ ڈالی کہ آپ بھی غصے میں آ جائیں گے

لاہور (ویب ڈیسک) پاکستان کرکٹ ٹیم کے مایہ ناز سابق کپتان وسیم اکرم نے کہا ہے کہ انڈین پریمیر لیگ (آئی پی ایل) میں موجودہ پیسہ ہی اسے دنیا میں سب سے بہترین بناتا ہے جبکہ اس سے حاصل ہونے والی رقم کو فرسٹ کلاس کرکٹ پر خرچ کرنے کی وجہ سے بھارت اعتماد سے بھرپور بہترین کرکٹرز پیدا کرنے میں کامیاب ہوا۔

تفصیلات کے مطابق وسیم اکرم نے پاکستان سپر لیگ (پی ایس ایل) اور آئی پی ایل سے متعلق گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ”اس وقت آئی پی ایل اور پی ایس ایل میں فرق ہے۔ گزشتہ پانچ سے چھ سال پہلے یہ فرق زیادہ تھا۔ انہوں نے آئی پی ایل میں بہت سرمایہ کاری کی ہے اور آئی پی ایل دنیا کا سب سے بڑا ٹورنامنٹ ہے۔“نہوں نے کہا کہ ”ایک ٹیم کے کھلاڑیوں کو خریدنے کا بجٹ ہی 60 سے 80 کروڑ بھارتی روپے ہے جو پاکستانی روپے کے مقابلے میں تقریباً دگنی ہے۔ تو اتنی بڑی رقم سے جو منافع حاصل ہوتا ہے بورڈ آف کنٹرول فار کرکٹ ان انڈیا (بی سی سی آئی) اسے فرسٹ کلاس کرکٹ پر خرچ کرتا ہے۔“وسیم اکرم نے مزید کہا کہ ”آئی پی ایل میں کھیلنے والے زیادہ تر کھلاڑیوں کے ذاتی کوچز ہیں، جیسا کہ پراوین امر۔ انہوں نے ایسے سابق کھلاڑیوں کا انتخاب کیا ہے جو بہترین کوچز بن گئے، ان کے بلے بازوں کو دیکھیں، وہ بہت ہی اعلیٰ اعتماد کیساتھ کھیلتے ہیں، ان کا سسٹم یکسر مختلف ہے۔“ بورڈ آف کنٹرول فار کرکٹ ان انڈیا (بی سی سی آئی) اسے فرسٹ کلاس کرکٹ پر خرچ کرتا ہے۔“وسیم اکرم نے مزید کہا کہ ”آئی پی ایل میں کھیلنے والے زیادہ تر کھلاڑیوں کے ذاتی کوچز ہیں، جیسا کہ پراوین امر۔ انہوں نے ایسے سابق کھلاڑیوں کا انتخاب کیا ہے جو بہترین کوچز بن گئے، ان کے بلے بازوں کو دیکھیں، وہ بہت ہی اعلیٰ اعتماد کیساتھ کھیلتے ہیں، ان کا سسٹم یکسر مختلف ہے۔“