بریکنگ نیوز: پنجاب حکومت کا شاندار اقدام ، حضرت داتا گنج بخش کے دربار میں توسیع کرنے کا فیصلہ

لاہور (ویب ڈیسک) محکمہ اوقاف پنجاب نے حضرت داتا گنج بخش علی ہجویری کے دربار میں توسیع کرنے کا فیصلہ کیا ہے اور اس سلسلے میں ایل ڈی اے اور بلدیہ عظمی لاہور کو داتا دربار کے توسیع منصوبے کے لئے اراضی خریدنے کی ہدایات جاری کر دی گئیں ہیں۔ یہ بھی بتایا گیا ہے کہ

محکمہ اوقاف پنجاب نے اس سلسلے میں ایک سمری وزیراعلیٰ پنجاب کو بھی ارسال کردی ہے۔سمری کی منظوری کے بعد ایل ڈی اے اور بلدیہ عظمی لاہور اراضی کی خریداری کے لئے این او سی طلب کریں گے۔ محکمہ اوقاف کے ذرائع کے مطابق اس توسیع کی منصوبے کے حوالے سے ذرائع کا کہنا ہے کہ مذکورہ صوبہ 35کینال اراضی پر مشتمل ہے۔ جبکہ اس حوالے سے محکمہ اثارے قدیمہ کی کمیٹی کا کہنا ہے کہ داتا دربار میں واقع لدا اکروش کی ازسر نو تعمیر کی بجائے دربار کے اس حصے پر درخت لگا کر خوبصورتی میں اضافہ کیا جاسکتا ہے۔ داتا دربار کے توسیع منصوبے کا باقاعدہ نقشہ تیار کرلیا گیا ہے جبکہ کمیٹی نے ایک اور بھی تجویز پیش کی ہے کہ دربار کے توسیع منصوبے کو صوفی ازم کو پروموٹ کرنے کے لئے تیار کیا گیا۔جبکہ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق پنجاب حکومت اور شوگر مافیا کے درمیان چینی کی قیمتوں پر جاری تنازعہ کے نتیجہ میں بالآخر پنجاب حکومت نے ہتھیار پھینک دیئے اور شوگر مافیا نے اپنی من مانی کرتے ہوئے چینی کے 50 کلو کے تھیلے کی قیمت میں 300 روپے کا اضافہ کر دیا ہے، اس اضافے کے باعث اکبری منڈی میں 50 کلو تھیلے کی قیمت 4300 روپے ہو گئی ہے جبکہ عام بازاروں میں چینی کی قیمت 85 روپے سے بڑھ کر 90 روپے کی سطح پر پہنچ گئی ہے جبکہ سرکار نے چینی کی قیمت 70 روپے مقرر کر رکھی ہے، اکبریمنڈی کے تاجروں کا کہنا ہے کہ جب انہیں شوگر ملوں سے 50 کلو چینی کا تھیلا 4 ہزار میں دستیاب ہو تو وہ 300 روپے مزید اضافے کے بعد 70 روپے کلو میں کیسے فروخت کر سکتے ہیں جبکہ لاہور ہائی کورٹ نے بھی چینی 70 روپے فی کلو فروخت کرنے کا حکم جاری کر رکھا ہے۔