مشکل وقت میں اپنی قوم کی فِکر!عمران خان کامیاب ہوگئے، کورونا وائرس سے پاکستانیوں کی جان چھوٹنے لگی، عالمی طاقتیں بھی کپتان کی حکمتِ عملی کی معترف

اسلام آباد( مانیٹرنگ ڈیسک) سینئر صحافی و اینکر پرسن عمران یعقوب خان نے کہا ہے کہ اس وقت بُرا وقت چل رہا ہے لیکن عمران خان کے فیصلوں کی جتنی بھی تعریف کی جائے وہ کم ہے، عمران خان نے لاک ڈاؤن اور کرفیو جیسی ٹرمز کو مسترد کر دیا کیونکہ انکا یہی خیال

تھا کہ اس سے مزدور طبقہ بھوک سے مر جائے گا۔ تفصیلات کے مطابق نجی ٹی وی چینل پر اپنے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے عمران یعقوب کا کہنا تھا کہ عمران خان نے جو جو فیصلے اس صورتحال میں کیے انکی تعریف جتنی بھی کی جائے وہ کم ہے، جب کورونا وائرس پاکستان میں داخل ہوا ہماری معاشی حالت کیا تھی، جب مسلم لیگ ن کا دور تھا اس وقت ہماری گروتھ ریٹ پانچ اعشاریہ چھ فیصد تھا دو سالوں میں پاکستان کا گروتھ ریٹ مائنس میں چلا گیا، اس وقت جو سرکاری اعدادوشمار ہیں انکے مطابق پاکستان میں کورونا وائرس میں اکتالیس فیصد کمی آچکی ہے، اگر جون میں دیکھا جائے تو پاکستان میں کورونا وائرس کا پھیلاؤ دو اعشاریہ پچیس فیصد تھا جو کہ جولائی میں آ کر 1 فیصد رہ گیا ہے۔ عمران یعقوب کا مزید کہنا تھا کہ ڈبلیو ایچ او کی پاکستان سے ڈیمانڈ تھی کہ روزانہ کی بنیاد پر پچاس ہزار ٹیسٹ کیے جائیں اور ہم اس کے بالکل قریب پہنچ چکے ہیں، یہ سب عمران خان کے مشکل وقت میں کیے گئے فیصلوں کی وجہ سے ہی ممکن ہوسکا ورنہ پاکستان میں حالات بگڑ سکتے تھے ۔ خیال رہے کہ پاکستان میں اس وقت کورونا مریضوں کی تعداد اڑھائی لاکھ سے تجاوز کر چکی ہے جبکہ پاکستان میں اب تک کورونا وائرس کی وجہ سے پانچ ہزار دو سو چھبیس افراد لقمہ اجل بن چکے ہیں، گزشتہ چوبیس گھنٹوں میں ملک بھر میں بائیس ہزار کے لگ بھگ ٹیسٹ کیے گئے جن کے بعد ملک بھر میں دو ہزار چھ سو انہر نئے کیسز سامنے آئے۔