’’ میرا شوہر جائیداد بیچنے ملتان پہنچا اور وہاں۔۔۔‘‘ دبئی میں مقیم جڑواں بچوں کی ماں کی حکام سے درمندانہ اپیل ، اپنے شوہر کے لیے بڑا قدم اُٹھا لیا

دبئی (نیوز ڈیسک ) میرے جڑواں بچوں کو پاکستان میں پھنسے اپنے باپ سے ملنے میں مدد کریں، دبئی میں مقیم والدہ نے التجا کر دی ہے۔ غیر ملکی خبر رساں ادرے سے بات کرتے ہوئے کینیا سے تعلق رکھنے والی خاتون سنجنا نے بتایا ہے کہ اس کی اپنے شوہر سے دبئی میں ملاقات

ہوئی تھی جس کے بعد انہوں نے 2017 میں شادی کر لی تھی۔ خاتون نے مزید بتایا ہے میرے شوہر 11 مارچ کو کچھ زمینیں بیچنے کے لئے ملتان گئے تھے جس کے بعد وہ وہاں پھنس گئے ہیں، میری دونوں حکومتوں سے گزارش ہے کہ ان کی آنے میں مدد کی جائے کیونکہ ہماری فیملی کے واحد کفیل ہیں۔خاتون نے بتایا ہے کہ اس کا پہلے ایک بیٹا تھا لیکن اب اس کے پاس 3 مہینے کے جڑواں بچے بھی ہیں جن کی کفالت کرنا اس کے لئے مشکل ہوتا جا رہا ہے۔خاتون نے خبر رساں ادارے سے بات کرتے ہوئے بتایا ہے کہ شوہر کے پاکستان میں ہونے کی وجہ سے انہیں شدید مالی مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ خاتون نے بتایا ہے کہ وہ مرتبہ اپنے خاوند کو پاکستان سے سفر کرنے کی اجازت لینے کی درخواست جمع کروا چکی ہیں لیکن پہلی مرتبہ ان کی درخواست کو خارج کر دیا گیا تھا لیکن بعد میں ابھی تک ان کی دوسری درخواست پر کوئی جواب نہیں دیا گیا ہے۔اس حوالے سے خواتین نے درخواست کی ہے کہ میری متعلقہ حکام سے اپیل ہے کہ میرے خاوند کو واپس بھیج دیا جائے کیونکہ اب تو فضائی آپریشن بحال ہوچکا ہے، میرے بچوں کو ان کے والد کی ضرورت ہے۔ خاتون نے اپنے شوہر کی نوکری کے حوالے سے بھی بتایا ہے کہ انہیں کمپنی کی جانب سے نوکری سے نکال دیئے جانے کے بھی خط موصول ہو چکے ہیں کیونکہ وہ کافی دیر سے پاکستان میں پھنسے ہوئے ہیں اور انہیں واپس نہیں آنے دیا جا رہا۔ہمیں خطرہ ہے کہ کہیں انہیں نوکری سے بھی ہاتھ نہ دھونا پڑ جائے۔ خیال رہے کہ چین کے شہر وہان سے شروع ہونے والی عالمی وبا اس وقت دنیا بھر میں اپنے قدم جما چکی ہے جس کے بعد ہر گزرتے دن کے ساتھ اس کی تباہی میں حیران کن اضافہ ہوتا جا رہا ہے، اسی تباہی کی وجہ سے بہت سے لوگ مختلف ممالک میں پھنس گئے ہیں جن کو اب مرحلہ وار اپنے ممالک میں بھیجا جا رہا ہے۔