پاکستانی دعا کریں۔۔!! اسپتالوں میں جگہ ختم، سینئر اینکر پرسن اقرار الحسن کو بھی بیڈ نہ مل سکا، پاکستانیوں سے بڑی اپیل کر دی

لاہور (نیوز ڈیسک )پاکستان کے سینئر صحافی اور معروف اینکر پرسن اقرار الحسن نے کورونا وائرس کے باعث ملک کے ہسپتالوں میں جاری صورتحال کا ایک پریشان کن خاکہ سماجی رابطوں کی ویب سائٹ پر کھینچ دیاہے کہ انہیں کس طرح اپنی عزیزہ کیلئے ہسپتال میں بیڈ ڈھونڈنے کیلئے مارے مارے پھرنا پڑا۔

تفصیلات کے مطابق سینئر صحافی اقرار الحسن نے ٹویٹر پر ایک ہسپتال کے باہر کی تصویر جاری کی جہاں احاطے میں ٹینٹ لگا ئے گئے تھے اور ساتھ انہوں نے پیغام درج کیا کہ ” رات کے اس پہر ایک عزیزہ کے ساتھ شہر کے ہر ہسپتال میں چکر لگارہے ہیں، فون کر رہے ہیں، کسی ہسپتال میں بیڈز دستیاب نہیں اور ان کا آکسیجن سیچوریشن لیول مسلسل گر رہا ہے، سب سے دعا کی درخواست بھی، اگر کوئی راہنمائی کر سکے تو بھی اپیل کہ کیا کرنا چاہیے اور التجا کہ پلیز احتیاط کیجئے۔“

یاد رہے کہ گزشتہ چوبیس گھنٹوں میں ملک میں 20 ہزار 167 ٹیسٹ کیے گئے ہیں جن میں مزید 4688 افراد میں کورونا وائرس کی تشخیص ہوئی ہے جس کے بعد متاثرہ افراد کی تعداد 85 ہزار 264 ہو گئی ہے جبکہ گزشتہ چوبیس گھنٹوں میں مزید 82 افراد جان کی بازی ہار گئے ہیں اور اموات 1770 ہو گئیں ہیں تاہم 30 ہزار 128 افراد صحت یاب ہو کر گھروں کو لوٹ گئے ہیں ۔کورونا وائرس کے سب سے زیادہ مریض اس وقت سندھ میں ہیں جہاں تعداد 32 ہزار 910 ہو چکی ہے جبکہ اس کے بعد پنجاب میں 31 ہزار 104 افراد متاثرہ ہوئے ہیں ، بلوچستان میں 5 ہزار 224، خیبر پختون خواہ میں 11 ہزار 373 ،اسلام آباد میں 3544، آزاد کشمیر میں 285 اور گلگت بلتستان میں 824 کیسز سامنے آ چکے ہیں ۔