اب جو بھی ہوگا اسکے ذمہ دار عوام ہونگے۔۔!! کورونا پاکستان میں تیزی سے پھیلنے لگا، حکومت کی جانب سے پاکستانیوں کے نام خصوصی پیغام جاری کر دیا گیا

اسلام آباد(نیوز ڈیسک ) سماجی فاصلہ کا خیال نہیں رکھیں گے تو صورتحال خراب ہو سکتی ہے۔ موجود کورونا کی صورتحال پر میڈیا بریفنگ دیتے ہوئے وزیراعظم عمران خان کے معاون خصوصی ڈاکٹر ظفر مرزا کا کہنا تھا کہ اگر ہم نے سماجی فاصلے کا خیال نہ رکھا تو صورتحال خراب ہو سکتی

ہے۔ بات کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ اس کےنتائج جوبھی ہونگےذمےدارآپ خود ہونگے،کسی کوذمےدارنہیں ٹھہراسکتے۔ڈاکٹر ظفر مزا نے بریفنگ دیتے ہوئے لوگوں کو احتیاط کرنے کی تلقین کی ہے۔ بات کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ مارکیٹوں،دکانوں میں لوگوں کاجم غفیردیکھاجارہاہے اور ان میں سے اکثر نے ماسک نہیں پہنا ہوا۔ ماسک ہمارے پاس آپشن نہیں ہے، وہ ہماری ضرورت ہے اور اس کا استعمال ہر حال میں کرنا ہو گا۔عید کی نماز کے حوالے سے بات کرتے ہوئے ڈاکٹر ظفر مزا کا کہنا تھا کہ عید کی نمازگھروں پراداکریں تواس سےاچھی کوئی بات نہیں، جمعتہ الوداع پربھی احتیاطی تدابیرپرعمل کیاجائے۔اس کے علاوہ باہر جانے والے افراد اور مساجد میں عید کی نماز پڑھنے والوں کو ڈاکٹر ظفر مزا نے ماسک کا استعمال ہر صورت کرنے کا مشورہ دیا ہے۔ اس کے علاوہ ملک کے اعدادوشمار کے بارے میں بات کرتے ہوئے ڈاکٹر ظفر مرزا کا کہنا تھا کہ ملک میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران سب سے زیادہ 50 اموات ہوئیں جبکہ 2630 افراد میں کورونا کی تشخیص ہوئی۔ خیال رہے کہ پوری دنیا کی طرح اس وقت پاکستان کو بھی کورونا وائرس کے حوالے سے مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔نیشنل کمانڈ اینڈ کنٹرول سنٹر کے مطابق پاکستان میں کورونا کیسز کی تعداد 50 ہزار سے بھی متجاوز ہو گئی ہے۔ اعداد وشمار کےمطابق پنجاب میں 18 ہزار 445 ، سندھ میں 19 ہزار 924، خیبرپختونخوا میں 7 ہزار 155، بلوچستان میں 3 ہزار 74، اسلام آباد میں ایک ہزار 326 کورونا کیسز سامنے آچکے ہیں۔ گلگت بلتستان میں 602، کشمیر می 158 افرااد کورونا وائر س سے متاثر ہوئے دوسری جانب مریضوں کی بڑی تعداد صحتیاب بھی ہو چکی ہے۔ اعداد وشمار کے مطابق اب تک 15 ہزار سے زائد افراد نے کورونا کو شکست دے دی ہے۔