وفاق راضی ہوگیا تو بڑے شہروں میں لاک ڈاؤن برقرار رکھیں گے۔۔۔وزیرطلاعات پنجاب فیاض الحسن کا اعلان

لاہور (ویب ڈیسک) وزیرطلاعات ونشریات پنجاب فیاض الحسن چوہان نے کہا ہے کہ وفاق رضامند ہوگیا تو بڑے شہروں میں لاک ڈاون برقرار رکھیں گے، پنجاب کے بڑے شہروں میں وائرس کا پھیلاؤ بڑھ رہا ہے اور کیسز میں اضافہ ہو رہا ہے، وفاق سے بڑے شہروں میں لاک ڈاون میں نرمی نہ کرنے کی سفارش کی ہے۔

انہوں نے لاہور میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پنجاب حکومت امتحانات سمیت وفاق کے تمام ایس اوپیز پر مکمل عمل کرے گی۔ 9 مئی سے لاک ڈاؤن میں 6 نکات پر نرمی کریں گے۔ 8 سے 10 کاروبار کو کھولنے کی اجازت دی جا رہی ہے۔ چھوٹی مارکیٹیں اوردکانیں فجر سے شام 5 بجے تک کھلیں گی۔ چھوٹی مارکیٹس ہفتے اور اتوار کو مکمل بند رہیں گی۔ اوپی ڈیز کھولنے کا فیصلہ 9 مئی کو کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب حکومت نے لاک ڈاؤن کے حوالے سے وفاقی حکومت کوسفارشات دی ہیں۔ پنجاب کے بڑے شہروں میں کورونا وائرس متاثرین میں اضافہ ہو رہا ہے۔ بڑے شہروں میں لاک ڈاون میں نرمی نہ کرنے کی سفارش کی ہے۔ وفاق رضامند ہوگیا تو بڑے شہروں میں لاک ڈاون برقراررکھیں گے۔ فیاض الحسن چوہان نے کہا کہ کورونا وائرس نے ماضی کے حکمرانوں کی پرفارمنس کو بےنقاب کردیا ہے۔ مسلم لیگ ن اور پیپلزپارٹی کی حکومتوں نے40 سالہ دور میں کچھ نہیں کیا۔ پی ٹی آئی نے میٹرو اور اورنج لائن منصوبے شروع کرنے پر تعلیم اور صحت پر توجہ دینے کا کہا۔ توآل شریف اور ان کے حواریوں نے اس وقت ہمیں شٹ اپ کال دی تھی۔ ہسپتالوں سے متعلق سوال آج اسمبلی میں پوچھا جائےگا۔ پنجاب کا 80 فیصد بجٹ 3 ڈویژن میں لگتا رہا ہے۔ موجودہ حکومت نے 35 فیصد بجٹ جنوبی پنجاب میں لگایا جا رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم کہتے ہیں 18ویں ترمیم کے مثبت پہلو بھی ہیں۔ ماضی کے حکمرانوں کی ناقص پالیسیوں نے18ویں ترمیم کی قلعی بھی کھول دی۔ بلاول زرداری صاحب کو18ویں ترمیم کی روح کا نہیں صرف مال بنانے کا پتا ہے۔ وقت آ گیا ہے کہ 18ویں ترمیم کی منفی باتوں پر نظر ثانی کی جائے۔