بریکنگ نیوز: لاک ڈاؤن میں سختی کر دی گئی!!! اہم شاہراہوں پر ٹریفک بند

لاہور (ویب ڈیسک)شہرمیں کورونا وائرس کےباعث لگنے والےجزوی لاک ڈاؤن میں سختی کردی گئی،پولیس نےاہم شاہراہیں ناکہ بندی کرکےٹریفک کے لیےبند کردیں۔ ایس ایس پی آپریشنزفیصل شہزاد کےمطابق شہربھرمیں جزوی لاک ڈاؤن میں سختی کردی گئی ہے،ناکوں پرغیرضروری سفرکرنے والوں کو واپس بھجوایا جا رہا ہے،ٹریفک پولیس کی ڈبل سواری اورکار میں دو سے زائد سوار ہونے

پرکارروائیاں بھی جاری ہیں،ایس ایس پی آپریشنز کا کہناتھا کہ شہریوں کی بڑی تعداد چھٹی کےروز گھروں سے باہر نکل آئی تھی،سختی کرنے کا مقصد شہریوں کی نقل وحرکت کو محدود کرنا ہے،ایس ایس پی آپریشنز کا مزید کہنا تھا کہ کورونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کے لئےسماجی فاصلوں پر عمل کرنا ہوگا۔ قبل ازیں کورونا وائرس کے خوف کے باوجود زندگی کا پہیہ رواں دواں ہونے کی وجہ سےپنجاب حکومت نے لاک ڈاون میں سختی کرنے کا فیصلہ کیا تھا۔ کورونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کے لئے شہر میں لگائے گئے جزوی لاک ڈاون میں معمول کے مطابق ٹریفک کی روانی معمول کے مطابق جاری تھی۔ناکوں پر تعینات پولیس اہلکاروں کی جانب سےسختی کی جارہی ہے،غیر ضروری باہر نکلنے والوں کے خلاف پولیس کی جانب سے کارروائیاں بھی جاری ہیں۔ڈبل سواروں کے خلاف بھی کاروائیاں مزید سخت کردیں گئیں ہیں۔ ڈبل سواروں کو جرمانے کیے جارہے ہیں ، پولیس کی جانب سے غیر ضروری باہر نکلنے والوں کو وارننگ اور چلان کیے جارہے ہیں، سرکاری و نجی اداروں نے کم سے کم افراد کے ساتھ کام بھی جاری رکھے ہوئے ہیں، ذرائع کا کہنا تھا کہ حکومت نے شہر میں کورونا وائرس کے بڑھتے ہوئے کیسز کے پیش نظرجزوی لاک ڈاؤن میں توسیع کے ساتھ مزیدسختی کردی ہے۔ واضح رہےکہ 15 مارچ کو لاہور میں کورونا کا پہلا کیس سامنے آیا تھا جس کے بعد پنجاب حکومت نے اس کے پھیلاؤ کو روکنے کیلئے24 مارچ کو لاہور سمیت پنجاب بھر میں 14 روز کے لئے لاک ڈاؤن نافذ کردیا تھا۔ بعدازاں 6 اپریل کو کورونا وائرس کیسز میں اضافے کو دیکھتے ہوئے پنجاب حکومت نے لاک ڈاؤن میں14 اپریل تک توسیع کردی تھی،اور اب پنجاب حکومت نے لاک ڈاؤن میں مزید 15 دن توسیع کا فیصلہ کر لیا ہے۔وزیراعلیٰ پنجاب نے صوبے بھر میں لاک ڈاؤن کو 9 مئی تک توسیع دینے کا فیصلہ کرتے ہوئے ہدایات جاری کی گئیں کہ دودھ، دہی کی دکانوں، کریانہ سٹوروں، تندوروں اور بیکریوں کو سحری کے اوقات میں صبح 2 بجے سے صبح4 بجے تک کھولنے کی اجازت دے دی گئی ہے۔