پھر نہ کہنا خبر نہ ہوئی، مجھے اگلے دو دنوں کے اندر اندر یہ رپورٹ چاہیے۔۔۔۔۔ عبدالعلیم خان نے وزیر خوراک بنتے ہی بڑے بڑوں کو نتھ ڈالنے کا فیصلہ کر لیا

لاہور (ویب ڈیسک ) صوبائی وزیر علیم خان نے کہا ہے کہ کسی کو پنجاب سے گندم سمگل کرنے کی اجازت نہیں دیں گے۔تفصیلات کے مطابق صوبائی وزیر خوراک علیم خان نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ خیبر پختونخواہ سمیت دیگر صوبوں کو گندم کی خریداری کے لئے پالیسی واضح کر دی گئی ہے۔ بھاولپور، پنجاب کا باڈر مکمل سیل ہے۔ بہاولپور ڈویڑن میں ہدف سے

زیادہ گندم کی پیداور ہوئی ہے۔علیم خان نے مزید کہا کہ تمام فلور ملوں کو انکے کوٹہ کی گندم دے رہے ہیں۔ بہاولپور کے کاشت کار اپنی گندم پر اضافی وزن ہرگز نہ دیں اور جو سرکاری اہلکار اضافی وزن گندم میں لیتا پکڑا گیا وہ نوکری سے جائے گا۔جبکہ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق وفاقی حکومت نے جواد رفیق ملک کو صوبے کا نیا چیف سیکرٹری مقرر کرتے ہوئے نوٹی فیکشن جاری کر دیا ہے، اس قبل عہدے پر موجود چیف سیکرٹری پنجاب اعظم سلیمان نے آٹا چینی رپورٹ سے متعلق اہم ثبوت تحقیقاتی ٹیم کے حوالے کئے، یہی وجہ ان کی تبدیلی کا باعث بنی۔ دنیا نیوز کے مطابق ذرائع کے مطابق سابق چیف سیکرٹری پنجاب میجر ریٹائرڈ اعظم سلیمان کا تبادلہ کرتے ہوئے ان کو سٹیبلشمنٹ ڈویژن رپورٹ کرنے کی ہدایت جاری کر دی گئی ہیں۔ادھر ذرائع نے بتایا کہ جہانگیر ترین سمیت متعدد افراد سے متعلق اہم ثبوت بھی انہوں نے فراہم کئے، یہ الزام بھی عائد کیا جا رہا ہے کہ پنجاب حکومت کی اعلیٰ شخصیت کے علم میں لائے بغیر اپنی مرضی سے تعیناتی کرنے کے معاملات بھی سامنے آتے رہے ہیں۔گزشتہ تین دن سے یہ معاملات چل رہے تھے کہ اعظم سلیمان کو تبدیل کیا جائے، گزشتہ روز ہونیوالی وزیراعظم عمران خان اور وزیراعلٰی پنجاب عثمان بزدا رکی میٹنگ میں یہ طے پایا کہ جواد رفیق ملک کو چیف سیکرٹری پنجاب تعینات کر دیا جائے۔دوسری جانب نئے چیف سیکرٹری پنجاب کی تعیناتی کے بعد انتظامی عہدوں پر پھر ایک بار تبدیلیاں آئیں گی، جواد رفیق ملک ماضی میں کمشنر لاہور، سیکرٹری صحت پنجاب بھی تعینات رہے، جواد رفیق ملک ن لیگ کے انتہائی قریبی افسروں میں سے سمجھے جاتے ہیں۔ ذرائع کے مطابق اعظم سلیمان کوایک ہفتہ قبل یہ آگاہ کیا گیا تھا کہ وزیراعلیٰ سے معاملات درست کر لیں، لیکن ایسا نہ ہوسکا۔